زکر برگ کو 6 ارب ڈالر کا نقصان، سابق عہدیدار کا الزام، یورپی یونین کا انتباہ

زکر برگ کو 6 ارب ڈالر کا نقصان، سابق عہدیدار کا الزام، یورپی یونین کا انتباہ

Spread the love

نیویارک، برسلز( جے ٹی این ٹیکنالوجی نیوز) زکر برگ نقصان

سوشل میڈیا ایپلی کیشنز کی چند گھنٹوں کی بندش کے بعد فیس بک کے چیف

ایگزیکٹو مارک زکر برگ کی ذاتی ملکیت میں 6 بلین ڈالرز سے زیادہ کی کمی آ

گئی۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق چند گھنٹوں کے دوران اثاثوں میں 6 بلین ڈالرز

کی کمی کے بعد مارک زکر برگ دنیا کے امیر ترین افراد کی فہرست میں ایک

درجہ نیچے آ گئے۔ رپورٹ کے مطابق گزشتہ روز سٹاک سلائیڈ پر مارک زکر

برگ کے اثاثوں کی مالیت 121.6 سے کم دیکھنے میں آئی، جس کے پیش نظر

مارک زکر برگ بلوم برگ بلینرز انڈیکس میں مائیکر و سوفٹ کے شریک بانی

بل گیٹس سے نچلے درجے 5 پر آ گئے۔ خیال رہے کہ گزشتہ روز دنیا بھر میں

مذکورہ سوشل میڈیا ایپلی کیشنز کی سروس پاکستانی وقت کے مطابق تقریبا رات

ساڑھے 8 بجے متاثر ہوئی تھیں اور محض ٹوئٹر سماجی رابطوں کی بڑی ویب

سائٹ تھی، جو بحال رہی، لہٰذا صارفین ٹوئٹر پر ہی اپنی مایوسی کا اظہار کرتے

رہے۔

=-،-= فیس بک پر الزام لگانیوالی سابق عہدیدار سینیٹ کمیٹی میں پیش

فیس بک کی سابقہ عہدیدار فرانسس ہاوگن امریکی سینیٹ کی خصوصی کمیٹی

کے سامنے پیش ہو گئیں، فیس بک کی ایک سابقہ ملازم فرانسس ہاگن نے الزام

عائد کیا ہے کہ یہ ادارہ ان معاشرتی نقصانات سے بخوبی آگاہ ہے، جو اس کی

وجہ سے پیدا ہوئے ہیں۔ میڈیا پورٹس کے مطابق ہاگن نے اپنے خیالات کا اظہار

ایک ٹیلی وژن انٹرویو میں کیا۔ انہوں نے اپنے انٹرویو میں انکشاف کیا کہ تمام

دستاویزات کی روشنی میں مرتب کی جانے والی ریسرچ سے معلوم ہوا کہ فیس

بک سوشل نیٹ ورکنگ ویب سائٹ کے معاشرتی نقصانات سے بخوبی آگہی

رکھنے کے باوجود مالی منفعت کو ترجیح و فوقیت دینے کا سلسلہ جاری رکھے

ہوئے ہے۔ سماجی رابطے کے نیٹ ورک فیس بک کی سابقہ ڈیٹا سائنٹسٹ

فرانسس ہاگن کا انٹرویو ایک ٹی وی پروگرام ‘ 60 منٹ میں نشر کیا گیا۔

=–= سوشل میڈیا سے متعلق ایسی مزید خبریں ( =–= پڑھیں =–= )

قبل ازیں ان کے اس تناظر میں مضامین مشہور امریکی جریدے وال اسٹریٹ

جرنل میں بھی شائع ہوتے رہے ہیں۔ ہاگن کے انٹرویو میں شامل انکشافات کو

سماجی اور صحافتی حلقوں نے دھماکا خیز قرار دیا ہے۔ ان حلقوں کا کہنا ہے کہ

انٹرویو نے فیس بک کے بارے میں حقیقت سے پردہ اٹھایا ہے اور وہ ایک وسل

بلور ہیں۔ انہوں نے فیس بک کو کئی دوسری سوشل نیٹ ورکنگ پلیٹ فارمز سے

بدتر قرار دیا ہے۔ فرانسس ہاگن نے اپنے انٹرویو میں بیان کیا کہ ان کا سابقہ ادارہ

اس تحقیق سے آگاہ ہے کہ ان کے ذیلی ادارے انسٹا گرام کے مواد نے ٹین ایجر

گرلز کو ان کے جسمانی خد و خال کے حوالے سے شدید ذہنی و جسمانی نقصان

پہنچایا۔

=-،-= فیس بک قابل بھروسہ نہیں، متبادل ناگزیر، یورپی یونین

فیس بک، انسٹاگرام اور واٹس ایپ سروسز گھنٹوں معطلی کے بعد دنیا بھر میں

لاکھوں سوشل میڈیا صارفین کو مشکل کا سامنا کرنا پڑا ہے۔ اس الجھن کے بعد

یورپی یونین نے کہا ہے کہ جو مسئلہ پیش آیا اس نے مزید متبادل کمپنیوں کی

ضرورت ظاہر کی ہے۔ میڈیارپورٹس کے مطابق انہوں نے زور دیتے ہوئے کہا

کہ فیس بک پر اب مزید بھروسہ نہیں کیا جا سکتا۔ چاہے یہ کمپنی کتنی بڑی ہی

کیوں نہیں مگر اب اس کے متبادل کی ضرورت ہے۔ یورپی یونین کے مسابقتی

کمشنر مارگریٹ ویسٹیگر نے کہا کہ بندش نے چند بڑی کمپنیوں پر انحصار

کرنے کے نتائج ظاہر کر دیے ہیں۔ اب ان کمپنیوں کے متبادل اور مقابلے کی

ضرورت ہے۔

=-= قارئین= کاوش پسند آئے تو اپ ڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

انہوں نے اپنے ٹویٹر اکاﺅنٹ پر ایک ٹویٹ میں مزید کہا کہ ہم ٹیکنالوجی مارکیٹ

میں متبادل اور آپشن چاہتے ہیں اور ہمیں چند بڑے کھلاڑیوں پر بھروسہ نہیں

کرنا چاہیے وہ جو بھی ہوں۔ یہ ڈیجیٹل مارکیٹس ایکٹ کا ہدف ہے۔ ویسٹیگر نے

پچھلے سال ڈیجیٹل مارکیٹس ایکٹ کے نام سے مسودے کی تجویز پیش کی تھی

جس میں ایمیزون، ایپل، فیس بک اور گوگل کے ممنوعہ اور مجوزہ امور کی

فہرست مرتب کی گئی تھی، تاکہ وہ اپنے بنیادی کاروباری ماڈل کو تبدیل کر

سکیں اور مزید مقابلے کی اجازت دی جا سکے۔ قابل ذکر یہ ہے کہ گزشتہ روز

فیس بک پر آنے والی بندش نے کمپنی کے 3.5 بلین صارفین کو اس کی سوشل

نیٹ ورکنگ اور میسجنگ سروسز جیسے واٹس ایپ، انسٹاگرام اور میسنجر تک

رسائی سے محروم کر دیا تھا۔

=-،-= ٹیلی گرام پر ایک ہی روز 7 کروڑ صارفین کا اضافہ

فیس بک کی چند گھنٹے کی خرابی کے باعث میسیجنگ ایپ ٹیلی گرام پر ایک

روز میں 7 کروڑ صارفین کا اضافہ ہو گیا۔ میڈیارپورٹس کے مطابق بانی ٹیلی

گرام پاول دروف نے دیگر پلیٹ فارمز سے آنیوالے 7 کروڑ صارفین کو خوش

آمدید کرتے ہوئے کہا امریکہ میں ٹیلی گرام ڈاون لوڈنگ کے 56 ویں نمبر سے

پانچویں نمبر پر آ گیا۔ فیس بک نے گزشتہ روز اپنی سروس میں خرابی کی وجہ

سے بیک بون راوٹرز پر کنفیگریشن تبدیلوں کو قرار دیا اور کہا کہ نیٹ ورک

ٹریفک میں رکاوٹ نے ڈیٹا سینٹرز کے رابطے کو متاثر کیا، جس سے خدمات

رک گئیں۔ نائب صدر فیس بک کا کہنا تھا کہ نیٹ ورک ٹریفک میں رکاوٹ نے

ڈیٹا سینٹرز کے رابطے کو متاثر کیا اور سروسز کی معطلی ہیکنگ نہیں، اپنی

غلطی کی وجہ سے ہوئی ہے۔

زکر برگ نقصان ، زکر برگ نقصان ، زکر برگ نقصان ، زکر برگ نقصان

زکر برگ نقصان ، زکر برگ نقصان ، زکر برگ نقصان ، زکر برگ نقصان

Leave a Reply