روزِعید میلاد البنیْ کو اسلام آباد میں31، صوبوں میں 21،21 توپوں کی سلامی

روزِعید میلاد البنیْ کو اسلام آباد میں31، صوبوں میں 21،21 توپوں کی سلامی

Spread peace & love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

اسلام آباد(جے ٹی این آن لائن پاکستان نیوز) روزِعید میلاد البنیْ

نبی آخرالزماں حضرت محمدْ کا جشن ظہور آج بروز جمعۃ المبارک بمطابق 12

ربیع الاول عقیدت و احترام کیساتھ منایا جارہا ہے، دن کا آغاز وفاقی دارالحکومت

میں 31 اور صوبائی دارالحکومتوں میں 21،21 توپوں کی سلامی کیساتھ کیا گیا،

نماز فجر کے بعد اسلام کے فروغ، ملک اور امت مسلمہ کے اتحاد، یکجہتی، ترقی

اور فلاح و بہبود کیلئے خصوصی دعائیں مانگی گئیں۔ عظیم دن کی مناسبت سے

ملک بھر میں درود و سلام، نعت خوانی کی محافل، سیمینارز اور کانفرنسز کا

انعقاد جاری ہے جس میں نبی کریم حضرت محمدْ کی سیرت اقدس، اسلام اور

انسانیت کی سر بلندی کیلئے کی جانیوالی عظیم کوششیں موضوع خطابات ہیں۔

=—= یہ بھی پڑھیں، 12 تا 17 ربیع الاول ہفتہ عشقِ رسول اللہ منانے کا فیصلہ
—————————————————————————————

جشن عید میلاد النبیْ کے سلسلہ میں گزشتہ رات ملک بھر کے گلی، محلوں اور

بازاروں کو خوبصورت روشنیوں، برقی قمقموں سے سجا کر استقبال آمد محمد

مصظفیٰ ْ کیا گیا جبکہ خیر مقدمی بینرز، سبز جھنڈیوں بھی ملک کا کونہ کونہ سجا

ہوا ہے، سرکاری و نجی عمارتوں پر بھی چراغاں کیا گیا۔ ملک بھر میں شہر شہر

قریہ قریہ میلاد النبی کے جلوس اور ریلیاں نکلی ہوئی ہیں جن میں سرکار دو عالمْ

پر ورد دورد پاک اور نعت خوانی جاری ہے۔ بچے، جوان، مرد، خواتین، بوڑھے

سب بارگاہ رسالتْ میں ان آمد کے روز کی خوشی کے اظہار اور سرکار دو عالم ْ

سے اپنی مودت و عقیدت کا ہد یہ پیش کر رہے ہیں-

=—= ملک بھر میں عاشقان سرکار دو عالم کی جانب سے نیاز کا بھی اہتمام

روزِ آمد سرکار دو عالمْ کی مناسبت سے ملک بھر میں نیاز تقسیم کرنے کا بھی

اہتمام کیا گیا۔ امسال ملک بھرمیں جشن عید میلاد النبیْ اس عہد کی تجدید کے ساتھ

منائی جاریا ہے کہ تحفظ ناموس رسالت و ختم نبوت کیلئے کسی بھی قربانی سے

دریغ نہیں کیا جائیگا۔ قانون نافذ کرنیوالے اداروں کی جانب سے 12 ربیع الاول کی

مناسبت سے فول پروف سکیورٹی انتظامات کئے گئے ہیں۔

=–= قارئین =-: ہماری کاوش پسند آئی ہو گی،اپ ڈیٹ رہنے کیلئے ہمیں فالوکریں

روزِعید میلاد البنیْ

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Leave a Reply