رضوان کا ایک اور ریکارڈ، پاکستان کی T-20 میں ویسٹ انڈیز کیخلاف فتح

رضوان کا ایک اور ریکارڈ، پاکستان کی T-20 میں ویسٹ انڈیز کیخلاف فتح

Spread the love

گیانا( جے ٹی این آن لائن سپورٹس نیوز) رضوان ایک اور ریکارڈ

قومی کرکٹ ٹیم نے دوسرے ٹی ٹونٹی میچ میں ویسٹ انڈیز کو 7 رنز سے شکست

دے کر سیریز میں 1-0 کی برتری حاصل کر لی جبکہ وکٹ کیپر بیٹسمین محمد

رضوان نے اسی میچ میں ایک اور عالمی ریکارڈ اپنے نام کر لیا اور ایک سال میں

سب سے زیادہ ٹی ٹونٹی انٹرنیشنل رنز بنا کر عالمی ریکارڈ ہولڈر نم گئے۔

=–= کھیل اور کھلاڑی سے متعلق ایسی ہی مزید خبریں ( =–= پڑھیں =–= )

تفصیلات کے مطابق ویسٹ انڈیز کیخلاف گیانا میں دوسرے ٹی ٹونٹی میچ کے

دوران محمد رضوان نے 46 رنز کی اننگز کھیلی۔ اس اننگز کا 43 واں رن لے کر

محمد رضوان نے ایک سال میں سب سے زیادہ ٹی ٹونٹی انٹرنیشنل رنز بنانے کا

ریکارڈ اپنے نام کیا۔ اس سے قبل یہ ریکارڈ آئرلینڈ کے پال اسٹرلنگ کے پاس تھا۔

انہوں نے 2019ء میں بیس اننگز میں بیٹنگ کر کے 748 رنز بنائے تھے۔ محمد

رضوان نے سال 2021 میں 14 اننگز میں 752 رنز بنا لیے جو ایک نیا ریکارڈ

ہے۔ پاکستانی وکٹ کیپر بیٹسمین اس سال مجموعی طور پر سب سے زیادہ ٹی

ٹونٹی رنز کا ریکارڈ بھی اپنے پاس رکھتے ہیں، ساتھ ساتھ انہوں نے اس سال اب

تک انٹرنیشنل کرکٹ کے تینوں فارمیٹ میں مجموعی طور پر 1189 رنز بنائے

ہیں، جو رواں برس کسی بھی کرکٹر کے سب سے زیادہ رنز ہیں۔

=-= دوسرے ٹی ٹونٹی میں ویسٹ انڈیز کو شکست، سیریز میں 1-0 کی برتری

قومی کرکٹ ٹیم نے دوسرے ٹی ٹونٹی میچ میں ویسٹ انڈیز کو 7 رنز سے شکست

دے کر سیریز میں 1-0 کی برتری حاصل کرلی، گیانا میں کھیلے جانے دوسرے

ٹی ٹونٹی میچ میں پاکستان نے پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے 158 رنز کا ہدف دیا جس

کے تعاقب میں ویسٹ انڈیز کی ٹیم 4 وکٹوں کے نقصان پر 150 رنز بنا سکی،

پاکستان کی جانب سے بابر اعظم نے اپنی نصف سنچری مکمل کی جبکہ ویسٹ

انڈیز کی جانب سے جیسن ہولڈر نے 4 وکٹیں حاصل کیں۔ مہمان ٹیم کے 158رنز

کے ہدف کے تعاقب میں ویسٹ انڈیز کے آندرے فلیچر اور ایون لوئس میدان میں

اترے، آل راﺅنڈر محمد حفیظ نے پہلے ہی اوور کی دوسری گیند پر فلیچر کو صفر

پر پویلین بھیج دیا۔ کرس گیل ایک مرتبہ پھر بڑی اننگز کھیلنے میں ناکام رہے اور

20 گیندوں پر 16 رنز بنا کر حسن علی کی گیند پر بولڈ ہو گئے۔ شیمرون ہیٹمائر

کی اننگز کا خاتمہ محمد وسیم نے کیا، بیٹسمین نے 17 سکور کی باری کھیلی۔ ایون

لوئس 35 رنز بنا کر ریٹائرڈ ہرٹ ہوئے۔ پولارڈ 13 سکور بنا کر پویلین لوٹے ان

کی وکٹ شاہین شاہ نے حاصل کی۔ نکولس پوران نے مزاحمتی 62 رنز کی اننگز

کھیلی جو رائیگاں گئی۔ ویسٹ انڈیز کی ٹیم مقررہ اوورز میں 150 رنز بنا سکی۔

حسن علی، شاہین شاہ آفریدی، محمد حفیظ اور محمد وسیم جونیئر نے ایک ،ایک

وکٹ حاصل کی۔

=-= قارئین کاوش پسند آئے تو اپ ڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

قبل ازیں گیانا میں کھیلے گئے سیریز کے دوسرے ٹونٹی میچ میں ویسٹ انڈیز کے

کپتان کیرن پولارڈ نے ٹاس جیت کر پاکستان کو بیٹنگ کی دعوت دی۔ پاکستان کی

طرف سے اننگز کا آغاز شرجیل خان اور محمد رضوان نے کیا، دونوں نے ابتدائی

میں جارحانہ انداز اپنایا اور وکٹ کے چاروں اطراف شارٹس کھیلے، طویل

عرصے بعد پاکستان کی اوپننگ جوڑی کو تبدیل کیا گیا۔ 5 ویں اوورز میں شرجیل

خان 16 گیندوں پر 20 رنز بنائے تھے کہ ہولڈر کا نشانہ بن گئے، اس دوران کپتان

بابر اعظم اور محمد رضوان نے شاندار اننگز کھیلتے ہوئے سکور کو آگے بڑھایا۔

دونوں کھلاڑیوں کے درمیان 58 گیندوں پر 67 رنز کی پارٹنرشپ بنی۔ 113 کے

مجموعی سکور پر محمد رضوان رن آﺅٹ ہو گئے۔ انہوں نے 46 رنز بنائے۔ بابر

اعظم جیسن ہولڈر کو وکٹ دے بیٹھے، انہوں نے اپنے کیریئر کی 20 ویں ففٹی

بنائی اور 51 رنز پر آﺅٹ ہوئے۔ دیگر بیٹسمینوں میں محمد حفیظ 6 ، فخر زمان

15، حسن علی0، صہیب مقصود 5، شاداب 5 رنز بنا کر آﺅٹ ہوئے۔ قومی ٹیم نے

مقررہ اوور میں 157 رنز بنائے۔ ہولڈر نے 4 شکار کیے، براوو کے حصے میں 2

وکٹیں آئیں۔ ایک مرحلے پر میچ میں بارش نے مداخلت کر دی اور میچ کو کچھ دیر

کے لیے روکنا پڑا جسکے بعد قومی ٹیم رنز بنانے کا تسلسل برقرار نہ رکھ سکی

اور یکے بعد دیگرے وکٹیں گرتی رہیں۔ پاکستان نے مقررہ اوورز میں 8 وکٹوں

کے نقصان پر 157رنز بنائے، ویسٹ انڈیز کی جانب سے جیسن ہولڈر نے 4 اور

ڈیوائن براوو نے 2 وکٹیں حاصل کیں۔ محمد حفیظ کو 4 اوورز میں صرف 6 رنز

دینے اور ایک وکٹ حاصل کرنے پر میچ کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا۔ اس سے

قبل پاکستان نے میچ کے لیے ٹیم میں ایک تبدیلی کی ہے اور انجری کا شکار اعظم

خان کی جگہ صہیب مقصود کو فائنل الیون میں شامل کیا گیا۔ یاد رہے کہ سیریز کا

پہلا ٹی ٹونٹی میچ بارش کی وجہ سے بے نتیجہ ختم ہو گیا تھا۔

رضوان ایک اور ریکارڈ ، رضوان ایک اور ریکارڈ ، رضوان ایک اور ریکارڈ

Leave a Reply