UK Journal The-Economist-Logo 192

بھارتی عدلیہ نے بھی مقبوضہ وادی میں مظالم پر آنکھیں موند لیں، دی اکانومسٹ

Spread the love

لندن (جے ٹی این آن لائن مانیٹرنگ ڈیسک ) دی اکانومسٹ

معروف ہفت روزہ برطانوی جریدے دی اکانومسٹ نے کہا ہے بھارتی عدلیہ بھی

مقبوضہ کشمیر میں مودی حکومت کے مظالم نظراندازکررہی ہے۔ اخبار نے اپنے

مضمون میں لکھا کہ مقبوضہ کشمیر کے 70 لاکھ سے زائد عوام چاہتے ہیں کہ

عدلیہ کشمیرمیں حکومتی غیر آئینی، غیر قانونی اور انسانیت سوز اقدامات کے

خلاف دائر کردہ درخواستوں پر فوری فیصلے کرے کیونکہ انہیں 5 اگست سے

مشکلات کا سامنا ہے اور وہ مسلسل محاصرے میں ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: بھارتی فوج کی پیلٹ گن فائرنگ سے زخمی کشمیری نوجوان گرفتاری
کے خوف سے ہسپتال نہیں جاتے، نیویارک ٹائمز

برطانوی جریدے دی اکانو مسٹ نے اپنے مضمون میں مزید لکھا کہ بی جے پی

کی سربراہی میں حکومت نے مقبوضہ جموں و کشمیر کو ایک کھلے حراستی

مرکز میں تبدیل کررکھا ہے۔ اکانومسٹ کے مطابق بھارتی حکومت نے انسداد

دہشت گردی کے کالے قوانین کا استعمال کرتے ہوئے سیاست دانوں، تاجروں،

کارکنوں اور صحافیوں سمیت ہزاروں کشمیریوں کو بغیر کسی الزام کے حراست

میں لینے سمیت نامعلوم مقامات پر قید کر رکھا ہے تاکہ انہیں احتجاج سے روکا

جا سکے-

یاد رہے بھارت کی مودی سرکار نے مقبوضہ کشمیر کو ملکی آئین میں حاصل

خصوصی حیثیت ختم کر کے گزشتہ دو ماہ سے زائد عرصہ سے وادی میں

کرفیو‌ اور پابندیاں نافذ کر رکھی ہیں جس کی وجہ سے ستر لاکھ سے زائد عوام

اپنے ہی گھروں میں محصور ہیں اور کسی بھی وقت انسانی المیہ رونما ہونے کا

خطرہ سنگین سے سنگین تر ہوتا جا رہا ہے جبکہ عالمی برادری کی جانب سے

مطالبے کے باوجود مودی سرکار ٹس سے مس تک نہیں ہو رہی جو ایک اور

انسانی المیہ اور لمحہ فکریہ ہے-

Leave a Reply