pakistan and uno

دہشتگردی کیخلاف جنگ میں انتخاب عالمی امن کیلئے نقصان دہ، پاکستان

Spread peace & love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

نیویارک(جے ٹی این آن لائن پاکستان نیوز) دہشتگردی کیخلاف جنگ پاکستان

پاکستان نے عالمی برادی کو یقین دہانی کروائی ہے کہ وہ دہشتگردی کی ہر قسم

سے لڑنے کیلئے پر عزم ہے کیونکہ وہ اس بات پر یقین رکھتا ہے کہ ایک منتخب

نقطہ نظر کام نہیں کریگا۔

===-: یہ بھی پڑھیں، دہشتگردی کیخلاف جنگ بہادرجونیئر قیادت نے جیتی،باجوہ
—————————————————————————————-

تفصیلات کے مطابق عالمی دہشتگردی کو ختم کرنے کے اقدامات پر ہونیوالے

اقوامِ متحدہ کے اجلاس میں پاکستان کے مستقل مندوب منیر اکرم نے کہا امریکا،

طالبان معاہدہ بھی دہشتگردی کو ختم کرنے میں مدد کرسکتا ہے۔ پاکستان نے رواں

برس فروری میں امریکا، طالبان معاہدے کو حتمی بنانے کیلئے انتہائی اہم کردار

ادا کیا تھا اور وہ افغان امن عمل کی حمایت کرتا ہے۔ اب اسلام آباد امریکا کی

جانب سے افغانستان میں 19 سال سے جاری جنگ اور تباہ کے خاتمے کی امید پر

بین الافغان مذاکرات کو آگے بڑھانے کی کوششوں کا بھی حامی ہے۔

===-: امریکا طالبان معاہدہ دہشتگردی خاتمے میں مدد دیگا، منیر اکرم

منیر اکرم نے کہا کہ امریکا، طالبان معاہدہ اور حال ہی میں شروع ہونیوالے بین

الافغان مذاکرات سے امید ہے کہ سیاسی حل برآمد ہوگا۔ افغانستان میں امن ہمارے

خطے سے دہشتگردی کے خاتمے کیلئے سازگار حالات پیدا کرے گا۔ دہشتگردی

کو شکست دینے کے پاکستانی عزم کو اجاگر کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ دہشت

گردی کو اس کے ہر پہلو کیساتھ ہر جگہ جامع طور پر شکست دینی ہوگی، اس

سے منتخب طور پر نہیں نمٹا جا سکتا۔ اقوامِ متحدہ میں پاکستان نے اسلامی تعاون

تنظیم ( او آئی سی ) کے اراکین کی جانب سے سعودی عرب اور غیر جانبدار تنظیم

کی جانب سے ایران کے دیے گئے بیان سے اپنے اپ کو منسلک کیا، دونوں نے

بلا امتیاز دہشت گردی کی ہر قسم کو شکست دینے کی ضرورت پر زور دیا تھا۔

===-: القاعدہ ، داعش کو شکست تو دیدی مگر وابستہ لوگ پھیل رہے ہیں

عالمی تنظیم کو اس ضمن میں مزید بتایا کہ عالمی تعاون نے کامیابی نے بڑی

دہشتگرد تنظیموں مثلا القاعدہ اور داعش کی بنیاد کو شکست دیدی ہے تاہم ان کے

رفقاء اور بچے ہوئے وابستہ افراد پوری دنیا میں پھیل چکے ہیں۔ پاکستانی مندوب

نے خبردار کیا کہ دہشتگردی خود کو متعدد نئی اور مختلف اشکال میں ڈھال رہی

ہیں جن پر موثر انداز میں توجہ نہیں دی جارہی۔ منیر اکرم نے پاکستان میں ہونے

والے دہشت گرد حملوں کہ جن کے نتیجے میں تقریبا 70 ہزار انسانی جانوں اور

ایک کھرب 20 ارب ڈالر کا معاشی نقصان ہوا کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ہمیں

دہائیوں سے سرحد پار دہشت گردی کا سامنا ہے۔

===-: بھارت کشمیریوں کی جدوجہد کو دہشتگردی سے دبا نہیں سکتا

انہوں نے مزید کہا کہ اس بات کا جائزہ لینا انتہائی اہم ہے کہ عالمی حکمت

عملیوں، میکانزم اور مداخلتوں کے باوجود دہشتگردی کے واقعات میں کیوں اضافہ

ہوا۔ بھارت مختلف بہانوں سے کشمیریوں کی حق خود ارادیت کی جدوجہد کو

دبانے کی کوششیں کررہا ہے، بھارت کی جانب سے کشمیریوں کی جدوجہد کو

دہشت گردی کے مساوی قرار دے کر اسے دبایا نہیں جا سکتا۔

== قارئین =-: ہماری کاوش پسند آئی ہو گی،اپ ڈیٹ رہنے کیلئے ہمیں فالوکریں

دہشتگردی کیخلاف جنگ پاکستان

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Leave a Reply