Corona Viruse

ملک میں کرونا وباء کے 50 روز مکمل،اگلے 15دنوں کا دورانیہ خطرناک

Spread peace & love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

کراچی(جے ٹی این نیوز )سابق وائس چانسلر ڈاؤ یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز پروفیسر ڈاکٹر مسعود حمید خان نے ملک میں کرونا وباء کے حوالے سے 26 اپریل تا 10 مئی کے پندرہ دنوں کو خطرناک قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان میں کرونا وباء کو 50 دن مکمل ہوچکے ہیں،

امریکہ سمیت یورپ میں اس وائرس کی تباہ کاریاں 50 سے 60 دن کے دوران سامنے آئی تھیںلہٰذا پاکستان میں بھی 26 اپریل سے 10 مئی تک کورونا وائرس کی وبا زیادہ خطرناک ثابت ہوسکتی ہے۔

اپنے ایک وڈیو بیان میں ان کا کہنا تھا کہ کرونا وائرس دنیا میں 50 سے 60 دن تک ہلکے پھلکے انداز میں پھیلا لیکن پھر اس نے اچانک ہی تباہی مچا کررکھ دی۔ اس وباء کا چکر 90 دن تک بنتا ہے۔پاکستان میں کرونا وائرس کا پہلا کیس 26 فروری کو ہوا تھا، جسے اب تک 50 دن ہوچکے ہیں۔

پی آئی سی کے مزید 3 مسیحائوں، 7 نرسوں میں کرونا کی تصدیق

پنجاب انسٹیٹیوٹ آف کارڈیالوجی کے سینئر کنسلٹنٹ ڈاکٹر سمیت 3مزید ڈاکٹروں اور 7 نرسز میں کرونا وائرس کی تصدیق ،جبکہ سروسز ہسپتال کے ای سی جی ٹیکنیشن محسن میں بھی کرونا کی علامات سامنے آنے پر اسے آئیسولیٹ کر دیا گیا ،

گزشتہ روز دوران ڈیوٹی اچانک ان کی سانس بند ہونے لگی اور تیز بخار ہو گیا جس پر انہیں فوری طور پر ہسپتال میں آئیسولیشن میں منتقل کر دیا گیا، تفصیلا ت کے مطابق پنجاب انسٹیٹیوٹ آف کارڈیالوجی کے مزید3 ڈاکٹرز اور 7نرسز میں کرونا کی تشخیص ہو گئی،

اس سے قبل پنجاب انسٹیٹیوٹ آف کارڈیالوجی کے 2 ڈاکٹرز کرونا میں مبتلاپائے گئے تھے۔ اس طرح وائرس سے متاثرہ ڈاکٹرز کی کل تعداد 5 ہو گئی ہے جبکہ پی آئی سی میں زیرعلاج ایک مریض میں بھی کرونا کی تصدیق ہوئی ہے۔

اس سے قبل بھی پی آئی سی کے ایک نوجوان ڈاکٹر میں کرونا وائرس کی تشخیص ہوئی تھی جس پر انہیںسروسز ہسپتال میں زیرعلاج رکھا گیا اورچند روز قبل صحت یاب ہونے پر ہسپتال سے ڈسچارج کردیا گیا تھا۔

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Leave a Reply