88

دنیا بھر میں کرونا وائرس کی تباہ کاریاں جاری

Spread the love

واشنگٹن (مانیٹرنگ ڈیسک)امریکا میں کورونا وائرس تیزی سے پھیل رہا ہے جس نے تمام ریاستوں

نے اپنی لپیٹ میں لے لیا ہے اور کیسز کی مجموعی تعداد ساڑھے 6 ہزار سے تجاوز کرگئی جبکہ

امریکہ میں کرونا سے مرنے والوں کی تعداد100سے تجاوز کر گئی ہے ۔کورونا وائرس دنیا کے

167 ممالک کو اپنی لپیٹ میں لے چکا ہے جس کے بعد متاثرین کی مجموعی تعداد ایک لاکھ 98 ہزار

543 ہوگئی ہے جس میں سے 82 ہزار سے زائد صحتیاب ہوئے ہیں جب کہ ہلاکتوں کی تعداد 7988

ہے۔امریکی میڈیا کے مطابق کورونا وائرس تمام ریاستوں میں پھیل چکا ہے اور ملک میں 104 نئے

کیسز سامنے آنے کے بعد تعداد 6 ہزار 515 تک جاپہنچ ہے۔امریکی محکمہ صحت حکام کے مطابق

عالمی وبا کے باعث 18 ریاستوں میں 100 ہلاکتیں بھی رپورٹ ہوچکی ہیں۔وائرس کے باعث امریکی

حکام نے عوام کو ہدایت کی کہ وہ اپنے آپ کو جتنا ہوسکے محدود رکھیں کیونکہ وائرس جلد ختم

ہونے والا نہیں۔اٹلی میں گزشتہ روز کرونا وائرس سے مزید375افراد ہلاک ہو دئے جبکہ برطانیہ میں

گزشتہ روز مزید34افراد ہلاک ہو گئیآسٹریلیا میں بھی کورونا وائرس کے کیس تیزی سے بڑھ رہے

ہیں جہاں متاثرین کی تعداد 539 ہوگئی ہے جس میں سے 8 ہلاکتیں بھی رپورٹ کی گئی ہیں۔اس

صورتحال کے پیش نظر آسٹریلوی وزیراعظم اسکاٹ موریسن نے تمام اجتماعات پر پابندی عائد کرنے

کا اعلان کیا ہے جب کہ تعلیمی ادارے، مارکیٹس، تفریحی مقامات اور دیگر سرگرمیوں پر بھی پابندی

عائد کردی گئی ہے۔ادھر عالمی وبا سے برطانیہ کے اسپتالوں کوشدید مشکلات کا سامنا ہے۔برطانوی

نیشنل ہیلتھ سروس کے مطابق وائرس کے باعث اسپتالوں میں معمول کے آپریشن 3 ماہ کے لیے

منسوخ کردیے گئے ہیں جس کی وجہ کورونا کے مریضوں کے لیے بستروں کی فراہمی ہے۔برطانوی

نیشنل ہیلتھ سروس کی رپورٹ کے مطابق ہر ایک ہزار میں سے ایک برطانوی ممکنہ طورپرانفیکشن

میں مبتلا ہے۔اس حوالے سے مشیر برائے برطانوی وزیراعظم نے کہا کہ 86 فیصد کورونا مریضوں

کا پتا ہی نہیں چلتا،اس لیے ہر مشتبہ مریض کا کورونا ٹیسٹ لازمی ہونا چاہیے۔چین کے بعد وائرس

سے سب سے زیادہ متاثر ہونے والا ملک اٹلی ہے جہاں کیسز کی تعداد 31 ہزار 506 ہوگئی ہے جب

کہ ہلاکتوں کی تعداد 2 ہزار 503 تک پہنچ گئی ہے۔اٹلی کے بعد ایران وائرس کی زد میں ہے جہاں

متاثرین کی تعداد 16 ہزار 169 ہے جس میں سے 5 ہزار 389 صحتیاب ہوگئے ہیں لیکن 988 افراد

انتقال کر چکے ہیںبھارت میں ریاستی حکومت نے کرونا وائرس کی وبا میں مبتلا افراد کے ہاتھوں پر

اسٹمپ لگانے کا اعلان کیا ہے جس کا مقصد وائرس میں مبتلا افراد کی شناخت کرنا ہے۔غیر ملکی

خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق بھارتی ریاست مہاراشٹرا کی حکومت نے یہ انوکھا اقدام

عالمی وبا کو مزید پھیلنے سے روکنے کیلیے اٹھایا ہے، اسٹمپ وائرس میں مبتلا ان افراد کے ہاتھوں

پر لگائی جائے گی جنہیں گھروں میں قرنطینہ کیا جائے گا۔حکومت کی جانب سے جاری اعلامیے میں

بتایا گیا ہے کہ جن افراد کو گھروں میں قرنطینہ کیا گیا ہے کہ اگر وہ اپنے گھر سے باہر نکلے تو یہ

سنگین جرم تصور کیا جائے گا اور سزا کے طور پر انہیں سرکاری قرنطینہ میں منتقل کردیا جائے گا۔

بھارتی فوجی میں بھی کرونا وائرس کی تصدیق ہوگئی، متاثرہ فوجی کے والد نے حال ہی میں ایران کا

سفر کیا تھا۔بھارتی میڈیا کے مطابق لداخ سکاوٹ کے جوان میں کورونا وائرس کی علامت دیکھے

جانے کے بعد اس کی جانچ کرائی گئی جو مثبت آئی۔ بھارتی فوجی کو جہاں ہسپتال بھیج دیا گیا ہے

وہیں اس کی بہن اور اہلیہ کو بھی آئیسولیٹ کر دیا گیا ہے۔سعودی عرب کی وزارتِ صحت نے بتایا

ہے کہ مملکت میں کرونا (کوویڈ 19) کے 38 نئے کیسز سامنے آئے ہیں جس کے بعد ملک میں کرونا

وائرس کے متاثرہ مریضوں کی کل تعداد 171 ہوگئی ہے۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق ایک

بیان میں سعودی وزارت صحت نے کہا کہ پہلے تین کیسز میں ایسے شہری شامل ہیں جو جرمنی ،

برطانیہ اور اردن سے آئے۔ انہیں جدہ کے ایک اسپتال میں قرنطینہ منتقل کیا گیا ہے۔مصر سے آنے

والی ایک خاتون اور ایک مرد بھی کرونا کے مریض نکلے جب کہ ایک خاتون ترکی سے واپس آئی

اور اس کا کرونا ٹیسٹ پازیٹو نکلا ہے۔ عراق سے سعودی عرب آنے والے 10 افراد میں کرونا

وائرس پایا گیا۔ ایک شہری اٹلی سے چند روز قبل واپس لوٹا تھا جس میں کرونا کی تصدیق کی گئی

ہے۔وزارت صحت نے بتایا کہ کرونا کے تین کیسز میں اسپین سے آنے والے تین شہری شامل ہیں۔اس

کے علاوہ اردن ، عمان ، بھارت، برطانیہ ، ترکی ، سوئٹزرلینڈ اور آسٹریا سے متعدد سے آنے والے

13 افراد کرونا کے مریض نکلے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں