Kud Kalami by Journalist Imran Rasheed Khan

خونی دشمنیوں کے نہ تھمنے والے سلسلے کی اہم وجوہات

Spread the love

دشمنیوں کی اہم وجوہات

خیبر پختونخوا میں آئے روز دیرینہ دشمنیوں کی بناء پر قتل و غارت گری کا

بازار گرم رہتا ہے، انا پرستی کے اس وحشی جنون نے ہزاروں زندگیوں کا

چراغ گل کر دیا، لیکن ہر نئی صبح کا آغاز خونریزی سے ہوتا ہے، جبکہ راتیں

اپنے پیاروں کی یاد میں آہیں اور سسکیوں میں کٹ جاتیں ہیں- پشاور کی سینٹرل

جیل میں پشتو زبان میں تحریر ایک جملے کو اکثر لوگ دہراتے سنائی دیتے ہیں-

=-= وہ جملہ =-=

=-،-= ( دہ یو منٹ غیرتی آو دہ ٹول عمر بے غیرتا- پخیر راغلے )
= ترجمہ = ایک منٹ کے غیرتی اور ساری عمر کے بے غیرت، خوش آمدید

واضح رہے یہ جملہ صرف قتل کے جرم میں سزا یافتہ افراد کیلئے لکھا گیا ہے-

جائیداد، رقم کے لین دین، خواتین یا دیگر نوعیت کے عام و خاص تنازعات پر

بننے والی دشمنیوں کی بڑی وجہ ہمارا انتہائی سست نظام انصاف اور روایتی

جرگہ سسٹم پر عوام کا عدم اعتماد ہے، کیونکہ ماضی میں جرگہ کے نظام اور

اسکے اراکان کا جو احترام تھا وہ اب نہیں رہا، اکثر جرگے امن و امان اور بھائی

چارہ قائم کرنے کی غرض سے نہیں بلکہ پیسہ و جائیداد ہتھیانے کی خاطر کئے

جاتے ہیں، ایسی صورتحال میں مستحق کو انصاف فراہم کرنا ممکن نہیں، کیونکہ

فیصلہ جرگہ اراکین کو پیسے دینے والے فریق کے حق میں ہی قرار پاتا ہے جس

کی وجہ سے اکثر جرگوں میں قسم کلام اور گلے ملنے کے باوجود دشمنیاں ختم

نہیں ہو پاتیں بلکہ اس میں مزید افراد اپنی زندگیوں سے ہاتھ دھو بیٹھتے ہیں-

= یہ بھی پڑھیں = دشمن داری مردانگی کی علامت کیوں—؟

جرگہ منتظمین دوبارہ دونوں فریقین میں سے پہل کرنیوالے سے جرمانے کی

وصولی کی آس لگائے ہاتھ پاؤں مارنا شروع کر دیتے ہیں یا پھر اکثر جرگہ کے

دوران فائرنگ کر کے متعدد افراد کو قتل کردینے جیسے واقعات سامنے آتے

ہیں، علاوہ ازیں خونی دشمنیاں بننے کا ایک سبب عدم برداشت اور ایک دوسرے

پر سبقت حاصل کرنے کا جنون بھی ہے، اور ان دونوں وجوہات کے باعث جہاں

زندگی کے ہر شعبے میں انسان کو ذہنی دباؤ کا شکار بنا رکھا ہے، وہیں لوگوں

میں دوسرے سے زیادہ طاقتور ہونے کے خیال نے ان پر اپنی مرضی کا فیصلہ

مسلط کرنے ضد نے بھی معاشرے میں بگاڑ پیدا کر رکھا ہے، جس کی وجہ سے

آئے روز لڑائی جھگڑے جنم لے رہے ہیں اورمعاملات تھانے کچہریوں میں

چلے جاتے ہیں، جہاں گناہگار کو سزا مل جانا یا پھر مستحق کو اس کا حق نہ ملنا

دونوں صورت میں مسئلہ حل ہونے کی بجائے مزید خراب ہونا شروع ہو جاتا

ہے، کیونکہ جس کیساتھ ناانصافی ہوئی ہو تو وہ خود انصاف کی ٹھان لیتا ہے-

=ضرور پڑھیں= پولیس نے نبھائی کمسن حامد رضا کے قاتلوں سے یاری

اگر صحیح گنہگار کو سزا ہو جائے تو اس کے بدلے کی آگ میں مزید شدت آ

جاتی ہے، ایسے حالات میں اگلا قدم انتہائی خطرناک ثابت ہوتا ہے جو کہ دشمنی

کی راہ ہموار کر دیتا ہے اور ایک معمولی سا تنازع دو زندگیاں نہیں بلکہ دو

خاندانوں کا لہو چاٹ لیتا ہے، ایسے حالات سے بچنے کے لیے ہمیں ہر وقت

صبر و برداشت سے کام لینا ہو گا، معمولی لڑائی جھگڑے یا لین دین کے

تنازعات کو دشمنیوں میں بدلنے سے روک تھام کے لیے خیبر پختونخوا حکومت

اور پولیس کا اقدام لائق تحسین ہے- ( =-= جاری =-= )

دشمنیوں کی اہم وجوہات ، دشمنیوں کی اہم وجوہات ، دشمنیوں کی اہم وجوہات

=-= قارئین= کاوش پسند آئے تو اپ ڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply