داسو ڈیم بس حادثے

چینی کمپنی کاداسو ڈیم پر کام بند، پاکستانی ملازمین فارغ

Spread the love

داسو ڈیم کام بند

کوہستان،اسلام آباد (جے ٹی این آن لائن نیوز) داسو بس واقعہ کے تناظرمیں چینی کمپنی نے داسو ڈیم

پر کام روک دیا۔ سی جی جی سی کمپنی نے کام روکنے سے متعلق اعلامیہ جاری کرتے ہوئے بتایا کہ

کمپنی نے تمام مقامی ملازمین کے ساتھ معاہدہ بھی ختم کردیا۔ کمپنی 14 جولائی تک ملازمین کی

تنخواہ ادا کریگی۔ علاوہ ازیں داسو واقعے کی تحقیقات کیلئے چینی تحقیقاتی ٹیم داسو پہنچ گئی۔

تحقیقاتی ٹیم آٹھ افراد پر مشتمل ہے جسے چار ہیلی کاپٹرز کے ذریعے داسو پہنچایا گیا جہاں سے وہ

براستہ شاہرہ قراقرم جائے وقوعہ پہنچی۔ تحقیقاتی ٹیم کے ساتھ چینی سفیر نونگ رونگ اور متاثرہ

کمپنی کے سی ای او بھی موجود ہیں۔ چینی تحقیقاتی ٹیم جائے وقوعہ سے شواہد اکٹھے کرنے میں

مصروف ہے جس کے بعد بریفنگ بھی دی جائے گی۔ تحقیقاتی ٹیم کی حفاظت کیلئے سکیورٹی کے

سخت انتظامات کیے گئے ہیں۔دوسری جانب وزیر داخلہ شیخ رشیدکی چین کے وزیر پبلک سکیورٹی

زاؤ کیذہی سے ٹیلیفون پر بات چیت ہوئی جس میں پاکستان اور چین نے حادثے کے تحقیقات جلد از

جلد مکمل کرنے پر اتفاق کرتے ہوئے عزم کیا کہ کوئی بھی شرپسند طاقت پاکستان اور چین کے

تعلقات کو خراب نہیں کر سکتی۔دونوں وزراء کے درمیان ٹیلی فون پر بات چیت آدھے گھنٹے سے

زائد جاری رہی ،وزراء کے درمیان داسو ہائیڈرو پاور بس حادثے سے متعلق بات چیت ہوئی ،وزیر

داخلہ کا بدقسمت بس حادثے میں قیمتی جانوں کے ضیاع پر اظہار افسوس کیا ،بس حادثے میں اب تک

ہونے والی تحقیق سے متعلق پیش رفت پر تبادلہ خیال کیا گیا ۔ اس موقع پر شیخ رشید نے کہاکہ

پاکستان اور چین آزمودہ دوست اور آہنی بھائی ہیں،وزیر اعظم عمران خان کی ہدایت پر بس حادثے

کی تحقیقات اعلی ترین سطح پر جاری ہیں۔ وزیر داخلہ نے کہا تحقیقات بہت جلد مکمل کرلیں گے۔

چینی تحقیقاتی ٹیم کو مکمل تعاون فراہم کر رہے ہیں۔ بعدازاں اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے

ہوئے شیخ رشید نے کہا کہ ہم پاک چین دوستی کے دشمنوں کو کسی صورت معاف نہیں کریں گے،

پاکستان اور چین کی دوستی لازوال ہے اور اس پر کسی قسم کا فرق نہیں پڑسکتا، چین کے وزیر

داخلہ نے چینی صدر کی ہدایت پر مجھ سے رابطہ کیا،میں نے وزیر اعظم کی ہدایت اور پاکستانی

حکومت اور قوم کے جذبات کو ان تک پہنچایا ہے، وزیر اعظم کے ساتھ افغان صدر اشرف غنی کی

ملاقات کے حوالے سے وزارت خارجہ بہتر بریفنگ دے گا، پاکستان کا امن افغانستان کے امن سے

وابستہ ہے، ہماری پوری کوشش ہے کہ افغانستان میں امن ہو،جعلی پاس پورٹ جاری کرنے میں ملوث

8 افراد کو گرفتار کیا جاچکا ہے، جعلی شناختی کارڈ رکھنے والوں کو نکالنے کے لیے خصوصی

وقت دیا جائے گا ۔ چینی شہریوں کا تحفظ ہماری ذمہ داری ہے۔ انہوں نے کہا کہ بھارت پاکستان میں

مداخلت کا کوئی موقع ہاتھ سے جانے نہیں دیتا ، بھارت بھول گیا ہے کہ یہ 1979کا پاکستان نہیں۔

انہوں نے کہا کہ افغانستان کی زمین کو کسی ملک کے خلاف استعمال نہیں ہونے دیں گے، کوئی بھی

سپر پاور پاکستان کو بائی پاس نہیں کر سکتی، پر امن افغانستان کیلئے اپنی کوششیں جاری رکھیں

گے۔

داسو ڈیم کام بند

ستاروں کا مکمل احوال جاننے کیلئے وزٹ کریں ….. ( جتن آن لائن کُنڈلی )
قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply