Kud Kalami by Journalist Imran Rasheed Khan 0

خیبرپختونخوا پولیس وطن دشمنوں کیلئے آسان ہدف کیوں—؟

Spread the love

خیبرپختونخوا پولیس آسان ہدف

دہشت گردی کے خلاف کامیاب جنگ کے بعد گذشتہ چند ماہ سے ایک بار پھر

وقفے وقفے کیساتھ صوبہ خیبر پختونخوا کے مختلف اضلاع میں پولیس افسروں

اور اہلکاروں کو ٹارگٹ کلنگ اور دہشت گردی کا نشانہ بنائے جانے کے واقعات

پیش آ رہے ہیں، جن میں اب تک متعدد افسر اور اہلکار شہید ہو چکے ہیں- سوال

یہ ہے کہ آخر خیبر پختونخوا پولیس، ملک دشمن عناصر کے لئے اپنے مزموم

مقاصد کی انجام دہی کے لئے، اتنا آسان ہدف کیوں ہے، جب کہ دہشت گردی اور

ٹارگٹ کلنگ کی وارداتوں میں ملوث عناصر کو قانون کی گرفت میں لانے کا

عمل انتہائی سست روی کا شکار ہونا بھی خیبر پختونخوا پولیس جو اپنے قول و

عمل میں ایک ہونے کی بدولت عوام میں دوست پولیس کے نام سے معروف ہے

بڑا لمحہ فکریہ ہے- گو کہ آئی جی پی معظم جاہ انصاری نے اس ضمن میں میڈیا

سے بات چیت کرتے ہوئے دہشت گردوں کے قریب پہنچنے اور جلد منطقی انجام

تک پہنچانے کی امید دلائی ہے لیکن سوال یہ بھی پیدا ہوتا ہے کہ آخر یہ وطن

دشمن کیوں اور کیسے سر اٹھا لیتے ہیں؟-

=-،-= امجد خان کو ڈیوٹی پر جاتے ہوئے ٹارگٹ کلنگ کا نشانہ بنایا گیا

خیبرپختونخوا پولیس آسان ہدف

اے ایس آئی امجد خان کو پیر کے روز پشاور کے نواحی علاقہ خزانہ میں تودہ

سٹاپ کے قریب نامعلوم افراد نے اس وقت فائرنگ کی جب وہ گھر سے ڈیوٹی پر

جا رہے تھے، نامعلوم ملزم ارتکاب جرم کے بعد باآسانی فرار ہو گئے، پولیس

کے مطابق دہشت گردوں کی فائرنگ سے اے ایس آئی امجد خان شدید زخمی ہو

گئے، جنہیں طبی امداد کے لیے ہسپتال منتقل کیا جا رہا تھا کہ وہ راستے میں ہی

زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے جام شہادت نوش کر گئے، دہشت گردی کی ایف

آئی آر درج کر لی گئی ہے، جائے وقوعہ سے شواہد بھی اکٹھے کر لئے گئے

ہیں، پولیس نے واقعہ تفتیش میں مصروف ہے۔ شہید اے ایس آئی امجد خان تھانہ

بڈھ بیر میں تعنیات تھے۔

=-،-= میرانشاہ میں کانسٹیبل گل امین دہشتگردی میں شہید ہوئے

خیبرپختونخوا پولیس آسان ہدف

اتوار کے روز بھی شمالی وزیر کے صدر مقام میران شاہ میں میر علی روڈ پر

نامعلوم مسلح افراد نے پولیس کانسٹیبل گل امین کو فائرنگ کر کے شہید کر دیا

تھا۔ مقامی پولیس حکام کے مطابق کانسٹیبل گل امین میران شاہ سے میر علی جا

رہے تھے، کہ نورک کے مقام پر نامعلوم مسلح افراد نے ان پر فائرنگ کر دی،

جس سے وہ موقع پر ہی جاں بحق ہو گئے۔ جب کے نامعلوم دہشت گرد ارتکاب

جرم کے بعد فرار ہونے میں کامیاب ہو گئے، ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر عتیق حسین

کے مطابق پولیس واقعہ کی تحقیقات کر رہی ہے، جلد ہی ملوث عناصر کو

حراست میں لے کر قانونی کارروائی کا آغاز کر دیں گے- شہید کانسٹیبل گل امین

کو نماز جنازہ کی ادائیگی کے بعد پورے سرکاری اعزاز کے ساتھ سپرد خاک

کر دیا گیا، اس موقع پر پولیس کے چاق و چوبند دستے نے سلامی پیش کی اور

قبر پر پھولوں کی چادر بھی چڑھائی-

=-،-= شہید امجد خان کی نماز جنازہ ادا، سرکاری اعزاز کیساتھ سپرد خاک

پشاور کے تھانہ خزانہ کی حدود میں شہید ہونے والے پولیس اہلکار امجد خان کی

نماز جنازہ ملک سعد شہید پولیس لائن میں سرکاری اعزاز کیساتھ ادا کر دی گئی۔

اس موقع پر پولیس کے چاق و چوبند دستے نے شہید کو سلامی پیش کی۔ نماز

جنازہ میں صوبائی وزیر محنت و ثقافت شوکت یوسفزئی، آئی جی پی کے پی کے

معظم جاہ انصاری، کمشنر پشاور ڈویژن ریاض محسود، سی سی پی او عباس

احسن، ایس ایس پی آپریشنز ہارون رشید اور ایس ایس پی انوسٹی گیشن شہزادہ

کوکب فاروق سمیت چاروں ڈویژنل ایس پیز اور دیگر اعلی افسران نے شرکت

کی۔ شرکاء نے شہید کے جسد خاکی پر پھول چڑھائے اور ان کے درجات کی

بلندی کیلئے دعا کی- بعدازاں شہید کو آبائی قبرستان میں سپرد خاک کر دیا گیا-

=-،-= شہداء کا خون رائیگاں نہیں جائیگا، آئی جی پی کے پی کے

خیبرپختونخوا پولیس آسان ہدف

اس موقع پر آئی جی پی خیبر پختونخوا معظم جاہ انصاری نے شہید کے ورثاء

سے بات چیت کی، اور شہید کی محکمہ پولیس کے لئے خدمات کو خراج عقیدت

پیش کرتے ہوئے کہا کہ شہید کا خون رائیگاں نہیں جائے گا، واقعہ میں ملوث

عناصر کو جلد از جلد بے نقاب کر کے قانون کے کٹہرے میں لایا جائیگا۔ انہوں

نے اس موقع پر موجود اعلیٰ پولیس حکام کو ہدایت بھی کی کہ وہ اس واقعے میں

ملوث عناصر کے خلاف گھیرا تنگ کرکے ان کی جلد گرفتاری عمل میں لائیں۔

=-،-= دہشگردوں کو جلد انجام تک پہنچائیں گے، معظم جاہ انصاری

میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے آئی جی پی معظم جاہ انصاری نے کہا کہ پچھلے

دو تین مہینوں سے رونما ہونے والے دہشت گردی کے چند واقعات کی تفتیش اور

تحقیق کر کے پولیس کامیابی کے قریب پہنچ چکی ہے اور ملوث گروپس کی

شناخت ہو چکی ہے۔ گرفتاری کے لیے چھاپے مارے جا رہے ہیں۔ آئی جی پی

نے اپنے اس عزم کا اعادہ کیا کہ ان واقعات میں ملوث ملک دشمن عناصر کو جلد

گرفتار کر کے قانون کے مطابق کیفر کردار تک پہنچائیں گے۔

=-،-=خیبر پختونخوا پولیس کی قربانیاں لازوال ہیں، وزیراعلیٰ محمودخان

CM KPK Mehmood Khan

وزیراعلی خیبر پختونخوا محمود خان نے بھی اپنے ایک بیان میں پشاور کے

علاقہ خزانہ اور میرانشاہ میں پولیس اہلکاروں پر نامعلوم فراد کی فائرنگ کے

الگ الگ واقعات کی مذمت، ان واقعات میں دو پولیس اہلکاروں کی شہادت پر

تعزیت، شہداء کے اہل خانہ سے دلی ہمدردی کا اظہار کرتے ہوئے شہداء کے

درجات کی بلندی اور پسماندگان کے لئے صبر جمیل کی دعا کی ہے۔ وزیراعلی

خیبر پختونخوا محمود خان نے کہا کہ صوبائی حکومت ان شہداء کے لواحقین کو

تنہا نہیں چھوڑے گی اور ان کی ہر ممکن مدد کی جائے گی۔ وزیر اعلی نے

پولیس کو ملوث عناصر کو گرفتار کرنے کیلئے ضروری اقدامات کی ہدایت کی۔

=-،-= خیبر پختونخوا سے متعلق مزید خبریں (=-= پڑھیں =-=)

محمود خان نے اپنے بیان میں عوام کے جان و مال کے تحفظ اور صوبہ میں

امن و امان کے لئے، پولیس کی قربانیوں کو سراہتے ہوئے کہا کہ خیبر پختونخوا

پولیس نے فرائض کی ادائیگی میں قربانیوں کی جو لازوال تاریخ رقم کی ہے،

صوبائی حکومت اور عوام پولیس فورس کی ان قربانیوں کو قدر کی نگاہ سے

دیکھتے ہیں۔

خیبرپختونخوا پولیس آسان ہدف ، خیبرپختونخوا پولیس آسان ہدف

خیبرپختونخوا پولیس آسان ہدف ، خیبرپختونخوا پولیس آسان ہدف

=-= قارئین= کاوش پسند آئے تو اپ ڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply