خواتین کے مسائل کا سب کو علم، خود خواتین ہراسمنٹ، سائبر کرائم سے لاعلم

خواتین کے مسائل کا سب کو علم، خود خواتین ہراسمنٹ، سائبر کرائم سے لاعلم

Spread the love

کوئٹہ (جے ٹی این آن لائن بلوچستان نیوز) خواتین کے مسائل کا

پارلیمانی سیکرٹری برائے وومن ڈویلپمنٹ مہ جبین شیران نے کہا ہے کہ خواتین

کے مسائل کا سب کو پتہ ہے لیکن خود خواتین کو ہراسمنٹ، سائبر کرائم کا پتہ ہی

نہیں، اس کے لئے انہیں آگاہی دینے کی ضرورت ہے، حکومت چاہتی ہے کہ ہر

شعبے میں خواتین کی برابری ہو اس وقت بہت سے محکموں میں خواتین نہ ہو نے

کے برابر ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے وومن ڈویلپمنٹ، یو رپی یو نین اور

پی ایف ایم کے اشتراک سے مقا می ہو ٹل میں منعقدہ ورکشاپ سے خطاب کرتے

ہوئے کیا۔

=-،-= بلوچستان سے متعلق مزید خبریں ( =،= پڑھیں =،= )

ورکشاپ سے سیکرٹری وومن ڈویلپمنٹ ظفر بلیدی، سعدیہ میر، فوزیہ وقار اور

دیگر نے بھی خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں بچیوں کی تعلیم پر خصوصی توجہ

دینی چاہیئے، ہماری پالیسی ایسی ہو کہ ہمیں معلوم ہو سکے کہ کتنی بچیاں سکول

سے باہر ہیں، ہم میرٹ کو نہیں دیکھتے ڈاکٹرز اور نرسز کو دوسرے اضلاع میں

تعینات کر دیا جا تا ہے، جس سے وہ صحیح ڈیوٹی انجام نہیں دے پاتے، خواتین

ملک کی نصف آبادی ہے، انہیں تمام سہولیات مہیا کی جائیں تا کہ وہ کمیونٹی کے

لئے بہتر انداز میں کا م کر سکیں۔

=–= خواتین سے متعلق مزید خبریں ( =–= پڑھیں =–= )

ورکشاپ سے خطاب کرتے ہوئے پارلیمانی سیکرٹری برائے وومن ڈویلپمنٹ مہ

جبین شیران کا کہنا تھا کہ بلوچستان میں خواتین کی ترقی کے لئے مختص فنڈز

سب سے زیادہ ہیں جو پانچ سو ملین روپے ہیں، اس کا کریڈٹ وزیراعلیٰ بلوچستان

کو جاتا ہے، یہ وزیراعلیٰ کے ویژن کا حصہ ہے، انہوں نے کہا کہ ملک و صوبہ

میں خواتین کی حالت تسلی بخش نہیں، حکومت ان کے مسائل حل کر نے کے لئے

صحت اور تعلیم پر خصوصی توجہ دے رہی ہے، ورکنگ وومن ہاسٹل، کرا ئسز

سنٹر میں خواتین کو تربیت کی فراہمی حکومت کے اقدامات ہیں، قبائلی نظام میں

خواتین کو باہر نکلنے کی اجازت نہیں، ایسے میں اداروں کا ان تک پہنچنا مشکل

ہے، ہمیں یہ مائنڈ سیٹ تبدیل کرنا ہو گا۔

خواتین کے مسائل کا

=-= قارئین= کاوش پسند آئے تو اپ ڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply