حکومت کا آئندہ 3ماہ میں34.50 کھرب روپے قرض لینے کا شیڈول تیار

Spread the love

حکومت اگلے تین ماہ کے دوران مقامی بینکوں سے ساڑھے چونتیس سو ارب رو پے قرض لے گی جس کا شیڈول تیار کر لیا گیا ہے۔ سٹیٹ بینک کے مطابق اس عرصے میں حکومت نے 34کھرب 16ارب 57کروڑ روپے کے اندرو نی قرضے واپس کرنے ہیں۔

ہدف کے مطابق قرض ملنے کی صورت میں حکومت کو دوسرے روز مرہ اخراجات کیلئے صرف 33ارب 42کرو ڑ روپے ہی دستیاب ہونگے۔ قرض کے حصول کیلئے تین ماہ کے دوران 5مرتبہ ٹرثری بلز کی نیلامی سے مجموعی طور پر 32کھرب روپے اور پا کستان انوسٹمنٹ بانڈز کی فروخت سے 2کھرب 50ارب روپے کے حصول کا ٹارگٹ رکھا گیا ہے،

جنوری کے دوران حکومت کو کمر شل بینکوں سے نیا قرض لینے میں کا فی دشوری کا سامنا رہا، 32کھرب کے حصول کیلئے بلز اور بانڈز فروخت کیے لیکن 14کھرب روپے سے بھی کم قرض ملا تھا۔

قبل ازیں سٹیٹ بینک کی جانب سے حکومتی قرضوں کے حجم کی جاری کر دہ رپورٹ کے مطابق حکومت نے دسمبر 2018 ء میں مقامی ذرائع سے 212 ارب روپے کا قرضہ لیا۔

مرکزی بینک نے اعلامیہ کے مطابق حکومت نے دسمبر 2018ء میں 28 ارب کے بیرونی قرضوں کی واپسی کی۔ حکومتی کے قرضوں کا حجم 26 ہزار 636 ارب روپے ہوگیا ہے جس میں مقامی قرضوں کا حجم 17 ہزار 5 سو 35 ارب جبکہ بیرونی قرضوں کا حجم 9 ہزار ایک سو ایک ارب روپے ہوگیا ہے۔

یاد رہے گزشتہ دنوں اقتصادی امور ڈویژن نے اعلامیہ میں بتایا تھا حکومت نے دسمبر میں 42 کروڑ 26 لاکھ ڈالرز کا قرض لیا تھا جبکہ وفاقی حکومت نے گزشتہ 6 ماہ میں 2 ارب 31 کروڑ ڈالرز کا غیر ملکی قرض لیا۔

Leave a Reply