حکومت اور تحریک لبیک میں معاملہ حل، معاہدہ طے، اسلام آباد مارچ ختم
Spread the love

اسلام آباد (جے ٹی این آن لائن پاکستان نیوز) حکومت اور تحریک لبیک

حکومت اور تحریک لبیک کے مابین درپیش معاملے کو کامیاب مذاکرات کے

ذریعے حل کر لیا گیا، مذاکرات کی کامیابی کے بعد حکومت اور تحریک لبیک

کے احتجاجی مظاہرین میں معاہدہ طے پا گیا۔ معاہدے کے نتیجے میں اسٹیرنگ

کمیٹی بنا دی گئی ہے جو معاہدے پر عملدرآمد کی نگرانی کرے گی، کمیٹی کی

سربراہی علی محمد خان کریں گے اور یہ کمیٹی آج سے کام شروع کریگی-

=-= پاکستان سے متعلق مزید تازہ ترین خبریں ( =–= پڑھیں =–= )

اسلام آباد میں مذاکراتی اراکین کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے وفاقی وزیر

خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ انتشار میں پاکستان کا فائدہ نہیں، اللہ نے

ہمیں سرخرو کیا، اکابرین کا شکریہ جنہوں نے فہم و فراصت سے ملک کو

بحران سے بچا لیا، قومی سلامتی کمیٹی کے اجلاس میں مذکرات کو ترجیح دینے

کا فیصلہ ہوا، کیونکہ قوم میں ایک اضطراب کی کیفیت تھی، لوگوں کو زخمی

ہوتے اور املاک کو نقصان پہنچتے دیکھا، اس لیے تمام مسائل کو سامنے رکھتے

ہوئے امن کا راستہ تلاش کیا گیا-پریس کانفرنس میں وزیر خارجہ شاہ محمود

قریشی نے مفتی منیب الرحمن، مولانا بشیر، صاحبزادہ حامد رضا اور ثروت

اعجاز قادری سمیت تمام علماء اور مشائخ کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ ان

علما نے وزیراعظم عمران خان سے ملاقات کی، علما اور مشائخ نے اپنے اثر و

رسوخ اور رہنمائی سے بھی ہمیں مستفید کیا۔

=-،-= یہ کسی فریق نہیں پاکستان کی فتح ہے، مفتی منیب

اس موقع پر مذاکرات میں شریک مفتی منیب الرحمان نے کہا کہ فریقین کے

درمیان تفصیلی مذاکرات کے بعد اتفاق رائے سے معاہدہ طے پا چکا ہے، جس

کے لیے فریقین نے حکمت اور تدبر کا مظاہرہ کیا، اسی لیے معاہدہ کسی جبر

اور تناؤ کے ماحول میں نہیں ہوا بلکہ آزادانہ اور ذمہ دارانہ ماحول میں ہوئے،

معاہدہ ایسا نہیں کہ دوپہر میں دستخط ہوں اور شام کو کہا جائے اس کی کوئی

حیثیت نہیں، مذاکرات کے لیے وزیراعظم نے 3 افراد پر مشتمل کمیٹی تشکیل

دی، حکومتی کمیٹی میں اسد قیصر، شاہ محمود قریشی اور علی محمد خان شامل

ہیں، کمیٹی کو اختیارات دینے پر وزیراعظم کے مشکور ہیں۔ انہوں نے کہا کہ

12 سے 13 گھنٹے تک بغیر کسی وقفے کے محنت کی گئی اور کوئی ناخوش

گوار صورتحال بننے سے پہلے ہی معاملہ حل ہو گیا، معاہدے کی تفصیلات

مناسب وقت پر سامنے آ جائیں گی، معاہدے کے نتیجے میں ایم این اے علی محمد

خان کی سربراہی میں اسٹیرنگ کمیٹی بنا دی گئی ہے جو اس کی نگرانی کرے

گی، کمیٹی آج سے اپنا کام شروع کرے گی، یقین دلاتا ہوں فریقین کے معاہدے

سے خیر برآمد ہو گی، ہم نے ملکی سلامتی اور امن کے لیے مصالحت کار کا

کردار ادا کیا، طے پائے گئے معاہدے کے لیے سعد رضوی کی حمایت اور تائید

حاصل ہے، یہ کسی فریق کی ہار یا جیت نہیں، بلکہ پاکستان کی فتح ہے، میڈیا

کے دوستوں سے گزارش ہے کہ معاملے کو مثبت رنگ دیں۔

حکومت اور تحریک لبیک ، حکومت اور تحریک لبیک ، حکومت اور تحریک لبیک

=-= قارئین کاوش پسند آئے تو اپ ڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply

%d bloggers like this: