Legend Drama Writer Hasina Moin Interwing, 142

ہمارے ڈرامے مصنوعی کہانیوں پر مشتمل، اغیارکے عکاس بن چکے، حسینہ معین

Spread the love

لاہور(جتن آن لائن شوبز نیوز)
معروف ڈرامہ رائٹر حسینہ معین نے کہا ہے کہ اب ہمارے زیادہ تر ڈرامے حقائق کی بجائے مصنوعی کہانیوں پر مشتمل ہوتے ہیں جبکہ عام گھرانوں کی کہانیاں بالکل نظر انداز کر دی گئی ہیں۔ مزید پڑھیں

ڈرامہ دیکھ کر لگتا ہے ہم اغیار سے متاثر ہیں: معروف ڈرامہ رائٹر

ایک انٹر ویو میں حسینہ معین نے کہا کہ میرے ذاتی خیال میں آج کل جو ڈرامہ بن رہا ہے ا س سے ایسا لگتا ہے کہ ہم کسی دوسرے ملک سے متاثر ہیں اوراس میں اس کی جھلک نظر آتی ہے۔

رومانس کو بھی بولڈ انداز میں دکھانا ڈرامے کی اصل روح کے منافی

حسینہ معین کا مزید کہنا تھا ٹی وی ڈرامے کا مقصد لوگوں کو تفریح فراہم کرنے کے ساتھ معاشرے کے حقیقی مسائل کو اجاگر کر کے اس کی اصلاح کے لئے ذمہ دارو ں کو بیدا کرنا ہے۔ پی ٹی وی یہ فریضہ سر انجام دے رہا تھا جس کے بعد مختلف نجی ٹی وی چینلز بھی اس ڈگر پر چلے لیکن یہ سلسلہ زیادہ طویل نہیں ہو سکا۔ انہوں نے کہا کہ آج کے ڈرامہ سیریل میں نیا ٹرینڈ متعارف کرایا گیا ہے جس میں بڑی بڑی گاڑیاں، محلاات نما گھر اورصرف امیر کبیر خاندانوں کو موضوع بنایا جاتا ہے، رومانس کو بھی بولڈ انداز میں دکھایا جارہا ہے جو ڈرامے کی اصل روح کے منافی ہے۔

معروف ڈرامہ رائٹر کی نصیحت پر عمل کرنا ٹی وی چینلز کیلئے ضروری

معروف ڈرامہ رائٹر نے اپنے انٹرویو میں ملک کے نجی ٹی وی چینلز پر نشر کئے جانےوالے ڈراموں کے بارے میں جو کچھ بھی کہا ہے وہ سو فیصد درست ہے، تاہم ضرورت اس امر کی ہے کہ انہوں نے جس انداز میں نجی ٹی وی چینلز کو نصیحت کی ہے اس پر من و عن عمل کیا جائے تاکہ معاشرے میں بگاڑ پیدا ہونے کے اصلاح کا عمل ترویج پا سکے- ناظرین کی بھی ایک بڑی تعداد اس ضمن میں کئی مرتبہ شکایات کا اظہار کر چکی ہے لیکن نجی ٹی وی چینلز اس پر کسی طور دھیان نہیں دے رہے-

Leave a Reply