jtn jaiza2

جنگ کا سائرن بج گیا ہے

Spread the love

(تحریر:- سینئر صحافی و تجزیہ کار اظہر علیشاہ المعروف بابا گل) جنگ کا سائرن

Journalist and annalist Sayed Azher Ali Shah

سانحہ کوہستان بھارت اور امریکہ کے سلیپر سیلز کا پاکستان اور چین پر ایک بہت

بڑا حملہ ہے، آزاد ذرائع کا کہنا ہے کہ بس پر بم حملے کے نتیجے میں کم سے کم

9 چائنیز انجینیئرز سمیت 14 افراد اپنی زندگی کھو بیٹھے ہیں، ایف سی کے تین

جوان بھی شہادت کے عظیم رتبے پر فائز ہوئے جو چائنیز کارکنوں کی سیکورٹی

پر مامور تھے، جبکہ اتنی ہی تعداد میں دیگر لوگ شدید زخمی ہیں جس کے پیش

نظر اموات کی شرح میں اضافے کا خدشہ ظاہر کیا جا رہا ہے-

=–= ایسی ہی مزید تجزیاتی رپورٹس، کالمز اور بلاگ ( =–= پڑھیں =–= )

افغانستان کی پیچیدہ صورتحال کے پیش نظر دہشت گردی کی یہ افسوسناک واردات

غیر متوقع نہیں تھی، بلکہ یہ کہنا غلط نہ ہو گا کہ یہ ملک دشمنوں کی طرف سے

پاکستان ہر مسلط کی جانے والی جنگ کے باقاعدہ آغاز کا اعلان ہے، کوہستان

میں جہاں یہ واقعہ پیش آیا اسی مقام کے آس پاس کچھ دن قبل کلعدم ٹی ٹی پی کے

کمانڈروں نے ایک ویڈیو پیغام جاری کیا تھا، یہ وہی کمانڈر تھے جو سانحہ نانگا

پربت میں غیر ملکی سیاحوں کے قتل کے جرم میں جیل میں تھے اور گلگت جیل

توڑ کر فرار ہوئے تھے- ان کے ویڈیو پیغام کے محض دو ہفتوں کے اندر اسی

مقام پر سانحہ کا پیش آنا یقیناََ ” لمحہ فکریہ ” ہے-

=-= ضرور پڑھیئے=-= بس تھوڑا انتظار، 2021ء کے طالبان سے متعلق متضاد رائے و حقائق

چین کے بارے میں یہ بات مشہور ہے کہ وہ اپنے شہریوں کے خون کا بدلہ ہرحال

میں لیتا ہے، کجا جائے کہ ڈیم کی تعمیر میں کلیدی کردار ادا کرنے والے متعدد

انجئنیر مارے جائیں اور چین یہ دکھ خاموشی سے سہہ لے، یہ ایک ناممکن بات

ہے، چین امریکہ اور بھارت سے اپنے انجینئروں کے خون کا بدلہ ضرور لے گا،

مگر کب اور کیسے ،؟ یہ آنے والا وقت ہی بتائے گا، پاکستان کے شہریوں کے

لئے یہ بات سمجھنے کی ضرورت ہے کوہستان اور ضلع کرم میں ہونے والی

دہشت گردی کے واقعات کی لہر کسی بھی لمحے ملک کے کسی بھی شہر تک

پہنچ سکتی ہے، بدھ کے روز پیش آنے والے اس المناک واقعے کے بعد اھم

شخصیات کے علاوہ سیاسی و مذہبی اجتماعات ان د ہشت گردوں کا نشانہ بن

سکتے ہیں جیسا کہ ماضی قریب میں ہوتے رہے ہیں-

=- یہ بھی پڑھیں -= پاکستان کیخلاف بھارتی ڈوول ڈاکٹرائن پر عملدرآمد میں مزید تیزی

ہمیں اب یہ بات تسلیم کرنا ہو گی کہ پاکستان اور پاکستان کے عوام ایک مرتبہ پھر

حالت جنگ میں آچکے ہیں، جنگی حالات کا مقابلہ کرنے اور دہشت گردی کو

شکست دینا صرف سکیورٹی اداروں کی ذمہ داری نہیں بنتی بلکہ اب ہر محب وطن

شہری کو اپنے ملک کا سپاہی بننا ہو گا اور اپنے اداروں کے شانہ بشانہ کھڑے ہو

کر امریکہ اور بھارت کے مسلط کردہ دہشت گردوں کو شکست فاش سے دو چار

کرنا ہو گا-

=-= قارئین= کاوش پسند آئے تو اپ ڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

ہم سانحہ کرم اور سانحہ کوہستان کے شہداء اور مرحومین کے لواحقین کو تعزیت

پیش کرتے ہیں اور یقین رکھتے ہیں کہ ان کا خون رائیگاں نہیں جائے گا-

جنگ کا سائرن ، جنگ کا سائرن ، جنگ کا سائرن ، جنگ کا سائرن ، جنگ کا سائرن

Leave a Reply