جنسی تعلقات سے متعلق برطانوی خواتین کے الزامات لغو ہیں،لارڈ نذیراحمد

Spread the love

لندن(جے ٹی این آن لائن) برطانیہ کے دارالامرا یا ہاس آف لارڈز کے رکن لارڈ نذیر احمد نے دو برطانوی خواتین کی طرف سے جنسی تعلقات قائم کرنے کے الزامات مسترد کردیے ہیں۔

لارڈ نذیر نے کہا ہے ‘میں ان تمام الزامات سے مکمل طور پر انکار کرتا ہوں کہ میں نے اپنی طاقت کو عام عوام کے ساتھ نامناسب تعلقات قائم کرنے کے لیے استعمال کیا یا میں نے خواتین کی موجودگی میں اپنی ذاتی یا پیشہ ورانہ حیثیت میں نامناسب طرزِ عمل اختیار کیا۔

برطانیہ میں میر آف رچڈل Rochdale محمد زمان کی بیٹی 43 سالہ طاہرہ زمان نے الزام لگایا ہے لارڈ نذیر احمد نے اس سے جنسی تعلقات قائم کیے تھے جب وہ ان کے پاس مدد کے لیے آئی تھی ۔ ایک دوسری خاتون نے بھی ایسا ہی الزام لگایا ہے

۔نیوز نائٹ کو ایک جواب میں لارڈ نذیر کا کہنا تھا ‘میں ان تمام الزامات سے مکمل طور پر انکار کرتا ہوں کہ میں نے اپنی طاقت کو عام عوام کے ساتھ نامناسب تعلقات قائم کرنے کے لیے استعمال کیا یا میں نے خواتین کی موجودگی میں اپنی ذاتی یا پیشہ ورانہ حیثیت میں نامناسب طرزِ عمل اختیار کیا۔

لارڈ نذیر کا مزید کہنا تھا ‘برطانوی دارالامرا کی سٹینڈرڈز کمشنر لوسی سکاٹ مونکریف نے شکایت کا جائزہ لیا اور فیصلہ کیا کہ یہ شکایت میری پارلیمانی حیثیت کے حوالے سے (کسی) نامناسب رویے میں نہیں آتی۔ انہوں نے اس پر مزید کارروائی نہ کرنے کا فیصلہ کیا۔

ایک پارلیمنٹیرین کے طور پر میں اپنی ذمہ داریوں کو بہت سنجیدگی سے لیتا ہوں اور میں ایسا کوئی کام نہیں کرتا جس سے میری ذاتی اور پیشہ ورانہ ساکھ متاثر ہوتی ہو۔

Leave a Reply