جماعت اسلامی کا حلقہ پی کے 22 خدوخیل بونیر میں زبردست کم بیک

جماعت اسلامی کا حلقہ پی کے 22 خدوخیل بونیر میں زبردست کم بیک

Spread the love

پشاور(بیورو چیف ، عمران رشید خان) جماعت اسلامی کا حلقہ

Journalist Imran Rasheed

جماعت اسلامی نے بونیر میں حلقہ پی کے 22 خدوخیل بونیر میں اپنی پوزیشن

ایک مرتبہ پھر مستحکم کر لی، جماعت اسلامی کے ایک شمولیتی جلسہ میں چار

سیاسی جماعتوں کی 46 اہم شخصیات نے جماعت میں شمولیت کا اعلان کرکے

سب کو ورطہ حیرت میں ڈال دیا، جماعت اسلامی میں شمولیت اختیار کرنیوالوں

میں پاکستان تحریک انصاف ویلیج کونسل سواائی کا بانی خاندان حاجی حبیب اللہ،

حبیب الرحمن، بشیر رحمن، عزیز خان، منور رحمان، کفایت اللہ، شاہید زمان،

زاہد خان، جبکہ پاکستان مسلم لیگ (ن) سے حاجی شمس الرحمن، عطاء الرحمن،

مجیب خان، گل رحمن، خاطر رحمن، صابر رحمن، توحید الرحمن، جمیعت علماء

اسلام سے فقیر رحمان، عامر رحمان، بشیر احمد، جبکہ عوامی نیشنل پارٹی سے

یار محمد بابا، سردار علی، کشور، شانارس خان بابا، زمان خان، دراز خان، گل

ریز خان، گل فراز، مطلب خان، عادل خان، سلمان خان، یوسف خان اور صمد

خان شامل ہیں۔

=-،-= خیبر پختونخوا سے متعلق مزید خبریں (=-= پڑھیں =-=)

شمولیتی جلسے سے خطاب میں جماعت اسلامی کے قائدین ضلعی امیر محمد

حلیم باچا، سابق ضلعی امیر غلام مصطفیٰ، نائب امیر محمد خنیف ایڈووکیٹ،

سابق صوبائی امیدوار راج ولی خان، اجبر خان، سابق وی سی کونسلر روزی شاہ

نے کہا گز شتہ 74 سالوں سے ملک پر مسلط ایک ہی ٹولہ مختلف شکلوں میں

عوام پر ظلم کرتا چلا آ رہا ہے، اور ملکی خزانہ کو لوٹ کر بیرون ملک آف

شور کمپنیوں کے مالک بن گئے ہیں، انہوں نے موجودہ حکومت کو بھی تنقید کا

نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ ایک کروڑ نوکریوں اور 50 لاکھ گھروں کا وعدہ کر

کے عوام کیساتھ تاریخی فراڈ کیا ہے، اب وقت آ گیا ہے کہ عوام ان نوسر بازوں،

کو گریبان سے پکڑ کر اقتدار کے ایوانوں سے باہر کر کے جیل کے سلاخوں

کے پیچھے پہنچائیں- انہوں نے کہا کہ عوام مزید ان چور جماعتوں کے دھوکہ

میں نہ آئیں، اور حقیقی اسلامی انقلاب کیلئے جماعت اسلامی کے پشتی بان بن

جائیں۔

=-،-= موجودہ حکومت سے خیر کی توقع نہیں، مقررین

مقررین نے کہا کہ وزیراعلیٰ کے پی کے محمود خان دوسری بار بھی بونیر کا

دورہ کر کے عوام سے جھوٹے اعلانات کر کے چلے گئے، پورے ملک کی

طرح بونیر کو بھی یر غمال بنایا گیا ہے۔ کرونا وباء کے بعد بونیر ڈینگی وائرس

کی لپیٹ میں ہے، لیکن سرکاری ہسپتالوں میں جعلی ٹیسٹ تھما کر سب اچھا کی

رپورٹس دی جا رہی ہیں۔ موجودہ حکومت سے کوئی بھی خیر کی توقع نہیں، یہ

حکومت چلا سکتے ہیں، اور نہ ہی ترقیاتی کام کر سکتے ہیں۔ قائدین نے آخر میں

نئے شامل ہونے والوں کو ٹوپیاں پہنا کر انہیں خوش آمدید کہا اور ان کی شمولیت

کو اسلامی اور خوشحال پاکستان کیلئے سنگ میل قرار دیا۔

جماعت اسلامی کا حلقہ ، جماعت اسلامی کا حلقہ ، جماعت اسلامی کا حلقہ

=-= قارئین= کاوش پسند آئے تو اپ ڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply