کراچی میں قیامتِ صغراء، مسافر طیارہ آبادی پر گر کر تباہ، 76 افراد جاں بحق

پائلٹوں کے جعلی لائسنس منسوخ کرنے کی منظوری

Spread peace & love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

اسلام آباد(جے ٹی این آن لائن نیوز ) جعلی لائسنس منسوخ

وفاقی کابینہ کا اجلاس وزیر اعظم عمران خان کی زیر صدارت کو وزیر اعظم

آفس میں ہوا جس میں 14 نکاتی ایجنڈے سمیت اہم امور پر غور کیا گیا ۔ کابینہ

نے پی آئی اے پائلٹس کے جعلی لائسنسز کو منسوخ کرنے کی منظوری دے دی

جبکہ وزارت داخلہ کی جانب سے ممنوعہ اسلحہ لائسنس کے اجراء کا معاملہ

موخر کردیا گیا ۔کابینہ نے عثمان ناصر کو ایم ڈی پاکستان سافٹ ویئر ایکسپورٹ

بورڈ تعینات کرنے کی منظوری دی ۔ ایس ای سی پی کے آڈٹ کے لیے ہارورتھو

حسین چوہدری کمپنی کی خدمات حاصل کرنے کی منظوری دی گئی ہے ۔ کابینہ

نے مرغذار چڑیا گھر اسلام آباد کا انتظامی کنٹرول وزارت ماحولیاتی تبدیلی کو

دینے کی منظوری دیدی ۔ارکان پارلیمنٹ کی ترقیاتی سکیموں سے متعلق قواعد میں

تبدیلی کی منظوری دی ۔ کابینہ اجلاس میں سٹاک ایکسچینج کراچی پر ناکام حملے

کا معاملہ بھی زیر بحث آیا ۔وزیر اعظم اور کابینہ اراکین نے حملے کو ناکام بنانے

پر سکیورٹی فورسز اور گارڈز کو خراج تحسین پیش کیا جبکہ شہید ہونے والے

سکیورٹی گارڈ اور اہلکاروں کو خراج عقیدت پیش کیا گیا اور درجات کی بلندی

کیلئے دعا کی گئی ۔کابینہ اراکین کا کہنا تھا کہ سکیورٹی اہلکاروں نے اپنی جان کا

نذرانہ دیکر ملک کو بڑی دہشت گردی سے بچا لیا اور پوری قوم سکیورٹی فورسز

کو سلام پیش کرتی ہے ۔ وفاقی کابینہ نے ایمپلائز اولڈ ایج بینفٹ انسٹی ٹیوشنز کی

پنشز میں 2000 اضافے کی منظوری بھی دیدی اور اب ای او بی آئی کے پنشنرز

کو 6500 کے بجائے 8500 پنشن ادا ہوگی ۔ وزیر اعظم کے معاون خصوصی

زلفی بخاری اور متعلقہ حکام نے پنشن کے اضافے کے معاملے پر بریفنگ دی ۔

2000 اضافے کی سفارش وزارت اوورسیز نے کی تھی جس کو کابینہ نے منظور

کرلیا بدھ کو کابینہ اجلاس کے بعد میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے وزیراطلاعات

ونشریات سینیٹر شبلی فراز نے کہا ہے کہ مائنس ون اپوزیشن کی ذہنی اختراع ہے

،اپوزیشن اپنی کرپشن چھپانے کیلئے اس قسم کے ہتھکنڈے استعمال کر رہی

ہے،اپوزیشن کو اپنے گناہوں کی معافی مانگے ، لوٹی ہوئی رقم واپس لائے، وزیر

امریکی فوجیوں کیخلاف طالبان کو روسی ادائیگی کا معاملہ بدستور غیر واضع ہے، مائک پومپیو

اعظم عمران خان کا اپنا کوئی کاروبار نہیں ، تمام اتحادی حکومت کے ساتھ کھڑے

ہیں ،موٹرسائیکلوں پر آنے والوں نے محل بنا لیے ، ان کے کیسز کا کیا بنا؟،بلاول

بھٹو سیاست کے نشیب و فراز سے آشنا نہیں،عمران خان اپنی سیاست کیلئے گلی

گلی پھرے،پیپلز پارٹی اداروں میں میرٹ اور شفافیت پر یقین نہیں رکھتی ، ماضی

میں پنجاب میں سینٹرل لاہور پر زیادہ ترقیاتی کام ہوئے ، باقی پنجاب کو نظر انداز

کیا گیا،تمام ائیر لائنو ں کے سٹاف کی ڈگریوں کی تصدیق کو یقینی بنایا جائے

گا،مشکوک لائسنس والے پائلٹس بر طرف کر دیئے گئے ہیں ،ہمارے پائلٹس جو

جہاز اڑا رہے ہیں ان کی ڈگریاں سو فیصد کلیئر ہیں،جعلی ڈگریوں کے حامل

پائلٹس کے خلاف بلاتفریق کارروائی ہو گی جبکہ وفاقی کابینہ نے ہائیڈروپاور

پراجیکٹ کے 3منصوبو ں ، عثمان ناصر کی ایم ڈی سافٹ ویئر ایکسپورٹ بورڈ

اورسکیورٹی اینڈ ایکس چینج کمیشن کیلئے آڈیٹر جنرل کی تعیناتی کی منظوری

دیتے ہوئے کہا ہے کہ سستی بجلی کے منصوبوں سے مہنگے پلانٹس بندہو جائیں

گے سینیٹر شبلی فراز نے کہاکہ کابینہ اجلاس میں آڈیٹر جنرل کی رپورٹ پر بحث

ہوئی ہے ۔ انہوںنے کہاکہ کابینہ نے ہائیڈروپاور پراجیکٹ کے 3منصوبو ں کی

منظوری دی گئی ،متبادل توانائی کے منصوبوں کے فروغ پر بھی بات ہوئی ہے ۔

وفاقی وزیر نے کہاکہ متبادل توانائی کے فروغ میں حائل رکاوٹوں کو دور کرنے

پر بات ہوئی ہے ۔ انہوںنے کہاکہ سستی بجلی کے منصوبوں سے مہنگے پلانٹس

بندہو جائیں گے۔

جعلی لائسنس منسوخ

Leave a Reply