جعلی بینک اکاونٹس کیس، نیب کی تحقیقاتی ٹیم میں 40 آفیسر شامل

Spread the love

قومی احتساب بیورو (نیب)نے جعلی اکاونٹس کیس میں تحقیقات کےلئے 40افسران پر مشتمل ٹیم تشکیل دی ہے۔ ٹیم میں نیب کراچی اور نیب بلوچستان کے نمائندے بھی شامل ہیں۔نوٹیفکیشن کے مطابق نیب کراچی کے ڈپٹی ڈائریکٹرز محمد یونس اور محمد گل آفریدی کا تبادلہ نیب راولپنڈی کیا گیا ہے جبکہ نیب بلوچستان سے ڈپٹی ڈائریکٹر عمیر راتھر کو بھی راولپنڈی بیورو بلا لیا گیا ہے۔میڈیا رپوٹس کے مطابق تینوں افسران کو ڈی جی نیب راولپنڈی عرفان منگی کی تجویز پر بلایا گیا ہے اور تینوں افسران تحقیقاتی ٹیم کا حصہ ہوں گے۔ نیب راولپنڈی طلب کیے گئے ڈپٹی ڈائریکٹرز جعلی بینک اکاونٹس کی تحقیقات مکمل ہونے تک راولپنڈی بیورو میں خدمات سر انجام دیں گے۔یاد رہے سپریم کورٹ نے سات جنوری 2018کو جعلی بینک اکاونٹس کیس کا معاملہ قومی احتساب بیورو کو بھجوایا تھا اور چیئرمین نیب جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال نے ڈی جی نیب راولپنڈ ی عرفان منگی کو ٹیم کا سربراہ مقرر کیا تھا اور اب نیب 29مشکوک بینک اکاﺅنٹس سے 35ارب روپے منتقل ہونے پر تحقیقات کر رہا ہے۔قبل ازیں سپریم کورٹ کی جانب سے تشکیل دی گئی مشترکہ تحقیقاتی ٹیم نے عدالت کو بتایا تھا104 جعلی بینک اکاﺅنٹس کے ذریعے تقریبا 210 ارب روپے کی ٹرانزیکشنز ہوئیں۔

Leave a Reply