خیبر پختونخوا میں عالمی بریسٹ فیڈنگ کی اہمیت اجاگر کیلئے اہم تقریب

مرنے کی خواہاں جاپانی خواتین میں جینے کی امنگ پیدا کرنیوالا آن لائن ادارہ

Spread the love

ٹوکیو (جے ٹی این آن لائن خواتین نیوز) جاپانی خواتین

جاپان کا شمار برسوں تک دنیا کے ان ممالک میں ہوتا رہا، جہاں خود کشیوں کی

شرح بہت زیادہ تھی۔ تاہم 2010ء سے اس شرح میں کمی پیدا ہونا شروع ہوئی تھی

لیکن اب کرونا بحران نے اس صورتحال کو پھر سے تبدیل کر دیا ہے۔ مقامی میڈیا

رپورٹس کے مطابق جاپان میں خود کشیوں کی تعداد میں کمی نسبتا مستحکم

اقتصادی صورتحال اور معاشرتی امداد کی اچھی پیشکش کی وجہ سے ہوئی تھی

لیکن اب کرونا بحران نے صورتحال کو پھر سے گھمبیر بنا دیا ہے۔ خاص طور

سے بہت سی نوجوان خواتین زندگی سے بیزار ہو کر خود کشیاں کر رہی ہیں۔

=.-.=یہ بھی پڑھیں: جنسی استحصال کا شکار امریکی رکن پارلیمنٹ الیگزینڈریہ

ٹوکیو میں ایک طالب علم نے خواتین میں خودکشی کے بڑھتے ہوئے رجحان کے

خلاف کچھ کرنے کا فیصلہ کیا۔ ایک سال قبل اس نے ایک آن لائن مشاورتی مرکز

قائم کیا۔ دریں اثناء 30 ہزار سے زیادہ افراد اس مشاورتی مرکز سے فائدہ اٹھا

چکے ہیں۔ کوکی اوزورا خودکشی کا ارادہ رکھنے والی بہت سی خواتین کو اپنے

مشاورتی مرکز کے ذریعے دوبارہ زندگی کی طرف واپس لانے میں کامیاب ہو

چکے ہیں۔ بائیس سالہ طالب علم کوکی اوزورا کی اس تحریک کا نام ہے، تمہارے

لیے ایک جگہ۔ ان کی اس پروگرام میں اندرون اور بیرون ملک سے نو سو رضا

کار شریک ہو چکے ہیں۔ ان سب کا مقصد زندگی کو خیر باد کہنے کا ارادہ رکھنے

والوں کو زندگی جیسی نعمت کی اہمیت کا احساس دلانا اور انہیں زندہ رہنے کا

حوصلہ دینا ہے تاکہ وہ دوبارہ جینے کی امنگ اور ہمت کیساتھ زندگی میں واپس

لوٹیں۔

=.-.= ضرور پڑھیں: آسٹریلیوی لڑکی کیساتھ ایسا ظلم جان کر روح کانپ اٹھی

اپنے ایک تجربے کا ذکر کرتے ہوئے کوکی نے کہا کہ اس نے خود کو پھانسی پر

لٹکانے کے لیے پھندا تک خرید لیا تھا تاہم ایسا کرنے سے پہلے اس نے میرے آن

لائن مشاورتی مرکز کا رخ کیا۔ ہم نے اس کیساتھ بہت سی باتیں کیں اور آخر کار

اس کی زبان سے یہ جملہ نکلا، میں کل بھی جینا چاہتی ہوں۔

= قارئین =-: ہماری کاوش پسند آئی ہو گی،اپ ڈیٹ رہنے کیلئے ہمیں فالو کریں

جاپانی خواتین

Leave a Reply