جاتی امرااراضی کیس، لاہور ہائی کورٹ نے نیب کو مریم نواز کی گرفتاری سے روک دیا

Spread the love

جاتی امرااراضی کیس

لاہور(جے ٹی این آن لائن نیوز) لاہور ہائی کورٹ کے مسٹر جسٹس سردار سرفراز ڈوگر اورمسٹر

جسٹس اسجد جاوید گھرال پر مشتمل ڈویژن بنچ نے جاتی امرااراضی کیس میں مریم نواز شریف کی

عبوری ضمانت منظور کرتے ہوئے انہیں10،10لاکھ روپے مالیت کے دو ضمانتی مچلکے داخل

کرنے کی ہدایت کی ،فاضل بنچ نے مریم نواز شریف کی درخواست پر چیئرمین نیب اور ڈی جی نیب

لاہورسے 12 اپریل تک جواب بھی طلب کرلیا،عدالت نے ہدایت کی ہے کہ تاحکم ثانی مریم نواز

شریف کو گرفتار نہ کیا جائے، مریم نواز شریف کی طرف سے عدالت میں موقف اختیارکیا گیاکہ نیب

نے انہیں دو انکوائریز میں 26 مارچ کو طلب کیا ہے،انکوائری میں شامل تفتیش ہونا چاہتی ہوں مگر

گرفتاری کا خدشہ ہے، نیب کو سیاسی انجینئرنگ کے لئے استعمال کیا جارہا ہے، درخواست گزار کے

خلاف مقدمات کی فہرست ثابت کرتی ہے کہ تمام مقدمات سیاسی ہیں، مریم نواز نے اپنے تمام اثاثے

انکم ٹیکس ریٹرن میں ڈکلئیر کررکھے ہیں، اثاثوں سے متعلق تمام ریکارڈ نیب کے پاس پہلے سے ہی

موجود ہے، 1480 کنال اراضی کی تحقیقات کے لئے نوٹس پہلے میڈیا کو دیا گیا پھر درخواست گزار

کو ارسال کیا گیا، نیب کی طرف سے بھجوایا گیا نوٹس عمومی نوعیت کا ہے، نوٹس میں مانگا گیا تمام

ریکارڈ سرکاری اداروں کے پاس موجودہے، زرعی اراضی سے متعلق وضاحت کا معاملہ سپریم

کورٹ میں بھی زیر بحث آیا تھا جس پر کوئی ریفرنس دائر کرنے کی ہدایات جاری نہیں کی گئی

تھیں،نیب حکومت کے دباؤ پر گرفتارکرنا چاہتا ہے ،درخواست گزار کے وکلاء نے موقف اختیارکیا

کہ مریم نواز خاتون ہیں اور درخواست ضمانت کی منظوری کی حقدار ہیں، فاضل بنچ نے اس

درخواست پر نیب کو 12اپریل کے نوٹس جاری کرتے ہوئے مریم نواز شریف کی عبوری ضمانت

منظور کرلی،مریم نواز شریف اپنے وکیل اعظم نذیر تارڑ کے ساتھ عدالت میں پیش ہوئیں،کیس کی

سماعت کے موقع پر رانا ثناء اﷲ اور مسلم لیگ (ن) کے دیگر رہنما بھی موجود تھے۔دوسری

طرفمریم نواز کو پیشی کی موقع پر کارکنوں کوساتھ لانے پر پابندی کے لیے درخواست سماعت کے

لیے مقرر کر لی گئی ۔ جسٹس سرفراز ڈوگر اور جسٹس اسجد جاوید گھرال پر مشتمل دو رکنی بنچ آج

بروز ( جمعرات ) کو دوپہر 12 بجے سماعت کرے گا۔چیئرمین نیب نے مریم نواز کو پیشی کے موقع

پر کارکنوں کو ساتھ لانے کے اقدام کو لاہور ہائیکورٹ میں چیلنج کیا تھا۔ نیب کی جانب سے دائر

درخواست میں موقف اختیار کیا گیا تھا کہ مریم نواز کو نیب نے 26 مارچ کو دو کیسز میں طلب کر

رکھا ہے لیکن انہوں نے پی ڈی ایم کے کارکنوں کے ساتھ نیب میں پیش ہونے کا اعلان کیا ہے۔نیب

کی جانب سے دائر درخواست میں کہا گیا ہے کہ مریم نواز نے دھمکی دی ہے کہ وہ اکیلی نیب میں

پیش نہیں ہوں گی۔ نیب کی درخواست مریم نواز کے بیان سے صاف ظاہر ہے کہ وہ انکوائری میں

پیش ہونے کے بجائے نیب تحقیقات میں رکاوٹ ڈالنا چاہتی ہیں۔درخواست میں کہا گیا ہے کہ نیب قانون

کے مطابق تحقیقات کر رہا ہے۔ نیب کا موقف نیب نے چودھری شوگر مل میں مریم نواز کی ضمانت

منسوخی کی درخواست دائر کر رکھی ہے۔ لاہور ہائیکورٹ مریم نواز کو اکیلے نیب میں پیش ہونے کا

حکم دے۔ درین اثنامسلم لیگ (ن) کی رہنمامریم نواز شریف نے کہاہے کہ پہلے ہی کہہ چکی ہوں جتنا

انتقام ہونا تھا ہوچکا،جتنا برداشت کرنا تھا کرلیا،میں نے اس بار ان کے لئے آسان شکار نہیں بننا،وہ

گزشتہ روز لاہورہائی کورٹ میں اپنی عبوری ضمانت کی منظوری کے بعد میڈیا سے گفتگو کررہی

تھیں،انہوں نے مزید کہا کہ انتقام سہہ کے، برداشت کرکے ان کوایکسپوز کیا ہے،میں نے یہ فیصلہ کیا

تھا کہ ان کے انتقام کو روکنا ہے اور اس کامقابلہ بھی کرنا ہے،میرے خلاف سیاسی مقدمہ ہے،اب اگر

عمران خان کی حکومت مشکل میں آئی ہے اس کی کشتی ڈوب رہی ہے،نیب کو موقع نہیں دیا جائے گا

کہ عمران خان کی ڈوبتی کشتی کو بچائے اور اس کے لئے سیاسی انجینئرنگ کرے،نیب کو نیب کے

علاوہ سب چلا رہے ہیں،اگر عمران خان گھر نہ جارہا ہوتا تو مریم نواز کو نیب میں بلانے کی

ضرورت نہ پڑتی،انہوں نے پی ڈی ایم میں پیپلز پارٹی کے کردار کے حوالے سے صحافیوں کے

سوالات کے جواب میں کہاکہ پی ڈی ایم میں کوئی اختلا ف نہیں،ہم کچھ مشترکہ مقاصد کے لئے پی

ڈی ایم میں اکٹھے ہیں ،سیاست میں اتار چڑھاؤ آتے رہتے ہیں،مولانا فضل الرحمن صاحب کاشکریہ

ادا کرتی ہوں ، پیپلز پارٹی کی اپنی حکمت عملی ہے، ہماری اپنی ہے،بلاول سے میرا ایک اچھا تعلق

ہے،میں نواز شریف کی بیٹی ہوں، رواداری کی سیاست اور وضع داری نبھانا جانتی ہوں،پی ڈی ایم

اپنا لائحہ عمل خود طے کرے گی، اس میں کسی کا عمل دخل نہیں،عوام کی توقعات کے مطابق

فیصلے کریں گے،انہوں نے مزید کہا کہ نیب کی بھیانک تاریخ میں پہلی مرتبہ اسے ریڈ زون بنایا

گیا،اسی سے پتہ چلتا ہے کہ نہتی عورت کا کتنا خوف ہے ،نواز شریف اور عوام کا کتنا خوف ہے

،حکمران اسی لئے تھر تھر کانپ رہے ہیں،پچھلی مرتبہ مجھے نیب کے آفس بلایا اور مجھ پر قاتلانہ

حملہ کیاگیا،میری گاڑی پر لیزر گن سے فائر کیا، پوری دنیا نے وہ ویڈیو دیکھی یہیں سے پتہ چلتا ہے

کہ کون خوف میں ہے اور کون گھر جا رہا ہے۔

جاتی امرااراضی کیس

ستاروں کا مکمل احوال جاننے کیلئے وزٹ کریں ….. ( جتن آن لائن کُنڈلی )
قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply