توہینِ مذہب سیالکوٹ قتل
Spread the love

توہینِ مذہب سیالکوٹ قتل

سیالکوٹ (جے ٹی این آن لائن نیوز) پاکستان کے صوبہ پنجاب کے شہر سیالکوٹ

میں ایک مشتعل ہجوم نے توہین مذہب کے الزامات لگاتے ہوئے ایک غیر ملکی کو

تشدد کر کے ہلاک کرنے کے بعد اس کی لاش کو آگ لگا دی ہے۔سیالکوٹ پولیس

کے ایک اہلکار نےمیڈیا کو بتایا ہلاک ہونے والے کی شناخت پریا نتھا کمارا

کے نام سے ہوئی ہے۔ یہ سیالکوٹ کے وزیر آباد روڈ پر واقع ایک نجی فیکڑی

میں بحثیت ایکسپورٹ مینجر کے خدمات انجام دے رہے تھے۔سیالکوٹ میں ہسپتال

ذرائع کا کہنا ہے کہ ان کے پاس ایک انتہائی بری طرح جلی ہوئی لاش لائی گئی

ہے۔ ‘لاش تقریباً راکھ ہی بن چکی ہے۔سوشل میڈیا پر اس وقت کئی وڈیوز شیئر کی

گئی ہیں جن کے بارے میں دعویٰ ہے کہ وہ سیالکوٹ وزیر آباد روڈ کی ہیں۔ ان

ویڈیوز میں ایک شخص کی جلی ہوئی لاش کو دیکھا جاسکتا ہے اور کچھ ویڈیوز

میں دیکھا جاسکتا ہے کہ ایک شخص کو جلایا جارہا ہے۔پولیس کے مطابق واقعہ

کی تحقیقات کی جارہی ہیں۔واقعہ کے عینی شایدکے مطابق صبح ہی سے فیکڑی

کے اندر یہ افواہیں گرم تھیں کہ پریا نتھا کمارا نے توہین مذہب کی ہے۔ ‘یہ افواہ

بہت تیزی سے پوری فیکڑی کے اندر پھیل گئی تھی۔ جس کے بعد فیکڑی ملازمین

کی بڑی تعداد نے پہلے باہر نکل کر احتجاج کیا۔ان کا کہنا ہے کہ احتجاج کے

دوران ہی لوگ بڑی تعداد میں دوبارہ فیکڑی کے اندر داخل ہوئے اور پریا نتھا

کمارا پر نہ صرف تشدد کیا گیا بلکہ ان کو آگ بھی لگائی گئی تھی۔

توہینِ مذہب سیالکوٹ قتل

ستاروں کا مکمل احوال جاننے کیلئے وزٹ کریں ….. ( جتن آن لائن کُنڈلی )
قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply

%d bloggers like this: