تنخواہ دار طبقہ کیلئے نیا ٹیکس ریٹ متعین، سالانہ 6 لاکھ سیلری والے مستثنیٰ

تنخواہ دار طبقہ کیلئے نیا ٹیکس ریٹ متعین، سالانہ 6 لاکھ سیلری والے مستثنیٰ

Spread the love

اسلام آباد (جے ٹی این آن لائن بزنس نیوز) تنخواہ دار طبقہ ٹیکس

تنخواہ دار طبقے کے لیے نیا سیلری ٹیکس ریٹ متعین کر دیا گیا ہے۔ دستاویزات

کے مطابق سالانہ چھ لاکھ تنخواہ ہونے پر کوئی ٹیکس عائد نہیں ہو گا۔ چھ لاکھ

سے بارہ لاکھ تک سالانہ تنخواہ پر پانچ فیصد ٹیکس عائد کیا جائے گا۔ اس کے

علاوہ بارہ لاکھ سے اٹھارہ لاکھ روپے سالانہ تنخواہ پر دس فیصد ٹیکس دینا ہو گا

اور اس سلیب کے تنخواہ داروں کو تیس ہزار روپے سالانہ رقم جمع کروانا ہو گی۔

اٹھارہ سے پچیس لاکھ روپے سالانہ تنخواہ پر 15 فیصد ٹیکس دینا ہو گا، اس سلیب

کے تنخواداروں کو 90 ہزار روپے سالانہ رقم جمع کروانا ہو گی۔ پچیس لاکھ سے

پینتیس لاکھ روپے تک کے تنخواہ داروں پر 17 فیصد ٹیکس لاگو ہو گا، اس سلیب

کے تنخواہ داروں کو ایک لاکھ 95 ہزار روپے کی رقم جمع کروانا ہو گی۔ 35 لاکھ

روپے سے 50 لاکھ روپے تک کی سالانہ تنخواہ پر 17.5 فیصد ٹیکس لاگو ہو گا

اور اس سلیب کے تنخواہ داروں کو سالانہ تین لاکھ 95 ہزار روپے سالانہ دینا ہوں

گے۔

=–= معیشت و کاروبار سے متعلق مزید خبریں (=–= پڑھیں =–=)

دستاویزات کے مطابق اسی لاکھ روپے سے ایک کروڑ بیس لاکھ روپے کی سالانہ

تنخواہ پر 25 فیصد ٹیکس ہو گا اور ان تنخواہ داروں کو سالانہ 13 لاکھ 45 ہزار

روپے دینا ہوں گے۔ ایک کروڑ بیس لاکھ سے زائد تنخواہ پر 27.5 فیصد ٹیکس ہو

گا اور ان تنخواہ داروں کو 23 لاکھ 45 ہزار روپے سالانہ جمع کروانا ہوں گے۔

تین تا پانچ کروڑ سالانہ تنخواہ پر 30 فیصد ٹیکس دینا ہو گا جبکہ سالانہ 72 لاکھ

95 ہزار روپے سالانہ جمع کروانا ہوں گے۔ دستاویزات میں مزید کہا گیا کہ پانچ

کروڑ سے ساڑھے سات کروڑ روپے سالانہ سے زیادہ تنخواہ پر 32.5 فیصد

ٹیکس ادا کرنا ہو گا جبکہ ایک کروڑ 32 لاکھ 95 ہزار روپے بھی سالانہ جمع

کروانا ہوں گے۔ دستاویزات کے مطابق یہ سیلری ٹیکس ریٹ مالی سال 22-2021ء

تک لاگو رہے گا۔
تنخواہ دار طبقہ ٹیکس

=-= قارئین کاوش پسند آئے تو اپ ڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply