حکومت نے تمام ریکارڈ توڑ دئیے ،اپوزیشن حیران رہ گئی

Spread peace & love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

اسلام آباد(جے ٹی این آن لائن نیوز) تمام ریکارڈ توڑ دئیے

تحریک انصاف کے دور حکومت میں قرضے ملکی تاریخ کی بلند ترین سطح

پرپہنچ گئے۔سرکاری دستاویز کے مطابق پونے 2 سال میں قرضوں میں 12 ہزار

941 ارب روپے کا اضافہ ہوا جس سے ملکی و غیر ملکی قرضہ 42 ہزار 820

گاڑی سے 2بچوں کی لاشیں برآمد

ارب تک پہنچ گیا۔ن لیگی دور حکومت میں قرضوں کے بوجھ میں 15 ہزار 561

ارب روپے کا اضافہ ہوا جبکہ پیپلزپارٹی کے پانچ سالہ دورمیں قرضوں میں 8

ہزار 200 ارب روپے کا اضافہ ہوا تھا۔دوسری جانب اسٹیٹ بینک کے اعدادوشمار

کے مطابق جون 2019 کے اختتام تک مجموعی قرضوں کی مالیت 31ہزار

786ارب روپے تھی ۔رواں مالی سال مقامی قرضوں کی مالیت میں ایک ہزار

746ارب روپے کا اضافہ ہوا ہے ۔اس دوران غیرملکی قرضوں میں 603ارب

روپے کا اضافہ ہوا۔جنوری تا مارچ حکومت کے مجموعی قرضوں میں 1466ارب

کا اضافہ ہوا۔ حکومت نے 3ماہ میں 1466ارب کے قرضے لیے ۔حکومت کے

مقامی قرضے 3ماہ میں 800ارب روپے بڑھ گئے ۔مقامی قرضوں کی مالیت مارچ

2020کے اختتام تک 22ہزار 477ارب روپے تک پہنچ گئی ۔تین ماہ میں غیرملکی

قرضوں کی مالیت میں 725ارب روپے کا اضافہ ہوا،غیرملکی قرضوں کی مالیت

11ہزار 658ارب روپے تک پہنچ گئی ہے ۔حکومت نے جنوری تا مارچ مارکیٹ

ٹریژری بلز کے ذریعے 672ارب روپے کے قرضے حاصل کیے ۔

تمام ریکارڈ توڑ دئیے

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Leave a Reply