Imran Khan Prim minister Pakistan

کرپشن کا خاتمہ ،تعلیمی نظام کی بہتری بڑے چیلنج ہیں،وزیراعظم

Spread peace & love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

تعلیمی نظام کی بہتری

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ ملک کی

ترقی کی راہ میں حائل مافیا سے میرا مقابلہ ہے، کرپشن کے خاتمے کیلئے سیا

ست شروع کی موجو دہ حکومت کی کا وشوں سے معاشی اقتصادی اعشاریو ں

میں واضح بہتری آئی ہے اللہ تعالیٰ نے پا کستان کو بے پناہ وسائل سے نو از ا

ہے،بدقسمتی سے معاشرے میں کرپشن کے ناسورسے ملکی ترقی کا عمل متا ثر

ہوا، ماضی کی حکومتوں نے انسانی وسائل کے فروغ کونظر انداز کیا ۔ پیر کے

روز وزیراعظم عمران خان سے ورجینیا یونیورسٹی کے طلباء وفد نے ملاقات کی

جس میں حکومت کے اصلاحاتی ایجنڈے اور معیشت کو درپیش مسائل پربات چیت

ہوئی۔ دورے کا مقصد بزنس کے مواقع اور سیا حت کے متعلق پو ٹیشنل کے بارے

یہ بھی پڑھیں:فلم تو دور کی بات کبھی سکول کے ڈراموں میں اداکاری نہیں کی، عمران خان

میں آگاہی حا صل کر نا تھا۔ملا قات میں پا کستان کو درپیش چیلنجز موجودہ حکو

مت کے اصلا حا تی ایجنڈے اور پا کستانی معاشرے کے مثبت پہلو ؤں اور مختلف

شعبوں میں مو جو د ملک کے پو ٹینشل پر بھی بات چیت ہو ئی ۔وزیراعظم نے

طلبہ سے گفتگو میں کہا کہ اللہ تعالیٰ نے پا کستان کو بے پنا ہ وسائل سے نو ازا

ہے انسانی وسائل کے فروغ کو نظر انداز کیے جا نے سے ملکی ترقی کا عمل

جمو د کا شکا ر ہو ا 1960ء کی دہائی میں پاکستان جنوبی ایشیا میں سب سے

تیزترقی کرنیوالا ملک تھا 70,80کی دہا ئیو ں کے سیا سی فلسفوں کے باعث

صنعتی عمل جمو د کا شکا ر ہو ا بدقسمتی سے معاشرے میں کرپشن کے

ناسورسے ملکی ترقی کا عمل بھی متا ثر ہوا، ماضی کی حکومتوں نے انسانی

وسائل کے فروغ کونظر انداز کیا۔اس موقع پر وزیراعظم نے کہا کہ عام آدمی کی

حالت زار اورایوانوں میں کرپشن کے پیش نظرسیاست میں قدم رکھا، میرامقابلہ

مافیا سے ہے جو ملک کی ترقی کی راہ میں حائل رہا ہے، بڑا چیلنج ملک سے

کرپشن کا خاتمہ اور تعلیمی نظام کو بہتر کرنا ہے، موجودہ حکومت یکساں تعلیمی

نصاب کے لئے کوشاں ہے، حکومت کی کاوشوں کی بدولت معیشت میں استحکام

آیا ہے ، ہم اقتدار میں آئے تو ملک سنگین معاشی حا لات کا شکا ر تھا اب معاشی

اقتصادی اعشاریو ں میں واضح بہتری آئی ہے ۔وزیراعظم نے مزید کہا کہ پاکستان

اقلیتوں کے حقوق کے مکمل تحفظ پر یقین رکھتا ہے بھارتی حکومت کی فسطائی

پالیسیوں سے خطے کے امن کو شدید خطرات لاحق ہیں اور بھارتی عوام کی

شناخت خطرے میں پڑ گئی ہے، مودی سرکارنے پانچ سو ملین اقلیتوں کے تشخص

اور وجود کو خطرے میں ڈال دیا ہے۔دوسری طرف وزیراعظم عمران خان نے

’’زندگی ایپ ‘‘ کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ کہاہے کہ ہمارے

نوجوانوں میں منشیات کا استعمال اور بچوں سے بداخلاقی کے واقعات تشوشناک

ہیں، بدقسمتی سے موبائل واقعات کے پھیلاؤ کا سبب بن رہے ہیں، کوئی ایک ادارہ

منشیات اور بداخلاقی کے واقعات پر قابو نہیں پاسکتا، والدین، ٹیچرز اور علما ء

کرام سمیت پوری قوم اس کے خلاف جہاد کرنا ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ منشیات

ہماری نواجواں نسل کو تباہ کر رہی ہے پہلے یونیورسٹیوں میں بچوں کو ڈرگز دی

جاتی تھی اب سکولوں تک یہ پھیل گئی ہے اور بچوں کو منشیات کے ذریعے تباہ

کیا جارہا ہے لیکن جب سے ہماری حکومت آئی ہے ہم نے اس کے خلاف جہاد

شروع کر رکھا ہے اور ہم پورے زور کیساتھ ایمرجنسی بنیادوں پر اس کا مقابلہ کر

رہے ہیں، انہوں نے کہا کہ میں پوری قوم کو بتانا چاہتا ہوں کہ کوئی ایک ادارہ

منشیات فروشوں کو شکست نہیں دے سکتا اس جہاد میں ساری قوم کو شامل ہونا

ہوگا جب قوم فیصلہ کر لیتی ہے تو تب وہ معاشرہ جیت سکتا ہے، یہ جو زندگی

ایپ ہے اس کے ذریعے ہم ماں، باپ کو آگاہی کریں گے اور سکولوں کے ٹیچرز

اور علماء کرام منشیات کے خلاف ہمارا ساتھ دیں، انہوں نے کہا کہ جتنا اچھا

سکول ہوگا وہاں آئس زیادہ پھیلتی جارہی ہے اور جب بچے ایک دفعہ ڈرگز

استعمال کر لیں تو پھر وہ تباہ ہو جاتا ہیں، ماں، باپ شرم سے خاموش ہو جاتے ہیں

کہ کہیں ان کے بچے معاشرے میں بدنام نہ ہو جائیں، انہوں نے وفاقی وزیر تعلیم

کو ہدایت کی کہ وہ سکولوں میں اساتذہ کو یہ کتاب دیں تاکہ وہ اس کو پڑھیں اور

وہ بچوں کو بار بار ڈرگ کے نقصانات سے آگاہ کریں، انہوں نے کہا کہ ہماری

پولیس، اے این ایف اور ٹیچرز کو ملکر منشیات کے خلاف مہم چلانا ہوگی، انہوں

نے کہا کہ ڈرگ میں بہت بڑا مافیا ملوث ہے جو اس پر پیسہ لگا رہا ہے، انہوں نے

کہا کہ ایک مرتبہ مجھے پتہ چلا کہ کے پی کے میں ایک جگہ پر منشیات کا دھندہ

ہو رہا ہے جب میں نے آئی جی کو حکم دیا تو کارروائی کرو تو ان کے ریڈ سے

پہلے پولیس کے اندر سے وہاں اطلاع پہنچ گئی کہ ریڈ ہونے والا ہے، انہوں نے

کہا کہ بچوں سے زیادتی کے واقعات تیزی سے بڑھ رہے ہیں، ان کے خلاف بھی

پوری قوم کو حکومت کے ساتھ ملکر کاروائی کرنا ہوگی اور ان واقعات کی روک

تھام کیلئے والدین، اساتذہ اور علما کرام کو بچوں کو شعور اور آگاہی فراہم کرنا ہو

گی تاکہ معاشرے سے منشیات اور بچوں سے زیادتی کے کیسز کا خاتمہ کیا جا

سکے، انہوں نے کہا کہ ہمارے پر شرمناک بات تھی کہ چائلڈ پورنوگرافی میں

پاکستان کا نمبر بہت اوپر تھا جس پر مجبور انتہائی شرمندگی ہوگی اور میں نے

تمام صوبوں کو اس کے خلاف سخت سے سخت کاروائی کا حکم دیا اور اب اس

کے خلاف سرٹوڑ کوششیں جاری ہے، ہم معاشرے سے منشیات اور چائلڈ پورنو

گرافی کے خاتمہ کرکے دم لیں گے۔

تعلیمی نظام کی بہتری

تعلیمی نظام کی بہتری

Leave a Reply