Education

تعلیمی سرگرمیوں کی مکمل بحالی مگر کرنے کےکچھ کام —–!

Spread the love

تعلیمی سرگرمیوں کی بحالی

قومی کمیٹی برائے تحفظ کرونا ( این سی او سی ) کی اجازت اور صوبائی وزراء (

وزارتوں ) تعلیم کی رضا مندی کے بعد آج بروز پیر یکم فروری 2021ء سے ملک

بھر میں پرائمری سے یونیورسٹی سطح تک تمام تعلیمی سرگرمیاں شروع ہو گئی

ہیں۔ اس مرتبہ بھی حکومت کی طرف سے حفاظتی تدابیر( ایس او پیز ) پر مکمل

عملدرآمد کی ہدایت کی گئی ہے، تاہم پچاس فیصد اور دن، رات کی تقسیم والی

شرط عائد نہیں کی گئی۔ یوں اب یہ سب نچلی سطح سے یونیورسٹی تک سرکاری

اور نجی اداروں کی انتظامیہ اور حکام کی اپنی ذمہ داری ہو گی کہ وہ کرونا سے

تحفظ کیلئے نہ صرف حفاظتی تدابیر پر عمل کرائیں، بلکہ اِس امر کی یقین دہانی

بھی کرائیں کہ ان پر بھرپور انداز سے عمل ہو رہا اور کرایا جا رہا ہے کہ طلباء

اور طالبات کو وباء سے محفوظ رکھنا بہت بڑی ذمہ داری ہے، اس کیلئے مرد و

خواتین اساتذہ اور تعلیمی اداروں کے عملے کا بھی وباء سے تحفظ کی تدابیر پر

عمل اور اس سے محفوظ رہنے کے طریقوں کو اپنانا ضروری ہو گا۔

یہ درست کہ طویل عرصہ تک تعلیمی اداروں کی بندش سے طلبہ کا بہت حرج ہوا،

بلکہ والدین کیلئے بھی مسائل پیدا ہوئے اور انکو روزمرہ کے معمولات تبدیل کرنا

پڑے تھے، جبکہ بچوں کی ماﺅں کو زیادہ پریشانی ہوئی۔ یہ حقیقت ہے کہ بچوں

کی صحت اور جان کا تحفظ بہت بڑی بات ہے، تاہم تعلیمی سلسلہ منقطع رہنے سے

ان طلباء و طالبات کی مصروفیات پر بھی منفی اثرات مرتب ہوئے تھے۔ آج سے

جو مکمل تعلیمی سرگرمیوں کا آغاز ہوا ہے تو والدین کو پھر سے اپنے معمولات

پر بھی نظرثانی کرنا ہو گی، اب یہ نہ صرف سرکار، بلکہ اساتذہ و انتظامیہ اور

والدین کی بھی ذمہ داری ہے کہ پوری طرح حفاظتی تدابیر اختیار کی جائیں اور

بچوں کا مکمل خیال رکھا جائے۔

اللہ کرے کہ سب طالبہ اس وباء سے محفوظ رہیں اور تعلیمی سلسلہ اب نہ رُکے

اور جو وقت ضائع ہوا اس کی کمی پوری ہو، اب انتظامیہ خصوصاً پولیس، ٹریفک

وارڈنز کی ذمہ داری بھی ہے کہ وہ تعلیمی اداروں کے کھل جانے سے پیدا مسائل

کو مشکل نہ بننے دیں، بلکہ جانفشانی سے حل بھی کریں۔

=—–= قارئین =-: ہماری کاوش پسند آئی ہو گی،اپ ڈیٹ رہنے کیلئے ہمیں فالو کریں
=—–=ستاروں کا مکمل احوال جاننے کیلئے وزٹ کریں ….. ( جتن آن لائن کُنڈلی )

تعلیمی سرگرمیوں کی بحالی

Leave a Reply