کراچی میں بینک عملے کا بڑا فراڈ 55 کروڑ مالیت کے زیورات پیتل میں تبدیل

کراچی میں بینک عملے کا بڑا فراڈ 55 کروڑ مالیت کے زیورات پیتل میں تبدیل

Spread the love

کراچی (جے ٹی این آن لائن نیوز) بینک عملے کا فراڈ

شہر قائد میں ایک نجی بینک کے دو برانچوں کا عملہ کیسے اپنے ہی بینک کو

منظم طریقے سے لوٹتا رہا، سنسنی خیز انکشافات نے لوگوں کو حیران کر دیا۔

کراچی کی تاریخ میں بینک فراڈ کا انوکھا معاملہ سامنے آیا ہے، اس سلسلے میں

نجی بینک کی گلستان جوہر برانچ کے بعد گلشن برانچ کا بھی آڈٹ کیا گیا ہے جس

میں بہت بڑا فراڈ منکشف ہوا ہے۔ بینک فراڈ سکینڈل میں پولیس نے کارروائی

کرتے ہوئے گلشن اور گلستان جوہر کے بینک برانچ منیجرز سمیت 7 افراد کو

گرفتار کر لیا ہے۔

=–= معیشت و کاروبار سے متعلق مزید خبریں (=–= پڑھیں =–=)

معلوم ہوا ہے کہ بینک عملے نے جعلی کسٹمر بنا کر 2 کروڑ 40 لاکھ روپے

قرضہ لیا اور قرضے کے ساتھ ساتھ بینک عملہ اصلی سونے کو نقلی سونے سے

بھی بدلتا رہا، تحقیقات کی گئیں تو گلستان جوہر میں بینک کی نجی برانچ کے

لاکرز میں 55 کروڑ کا سونا نقلی نکلا۔ حکام کا کہنا ہے کہ گلستان جوہر برانچ میں

شہریوں نے سونا رکھوا کر قرضہ حاصل کیا تھا لیکن بینک عملے نے 150 سے

زائد بیگز سے سونے کو تبدیل کر لیا، نجی بینک کی گلشن برانچ کے عملے نے

بھی جعلسازی کی اور بینک کا سونا تو بدلا ہی جعلی صارف بنا کر کروڑوں کے

قرضے بھی دئیے۔ یہ انکشافات نجی بینک کے آڈٹ کے دوران سامنے آئے جس پر

شاہ فیصل تھانے اور عزیز بھٹی تھانے میں مقدمات درج کر دئیے گئے ہیں جن

میں بینک عملے کو نامزد کیا گیا ہے۔

=-.-= صوبہ سندھ کی مزید خبریں ( == پڑھیں == )

پولیس نے گلشن اور گلستان جوہر کے بینک برانچ منیجرز سمیت 7 افراد کو

گرفتار کر لیا ہے، پولیس نے گھروں پر چھاپا مار کر 3 کروڑ سے زائد مالیت کا

سونا بھی برآمد کر لیا ہے۔ عملے کے جن افراد کے خلاف مقدمات درج ہوئے ہیں

ان میں 5 منیجر آپریشنل، ریلیشن شپ منیجر، کاﺅنٹر سروس منیجر، گولڈ فنانس

ایگزیکٹو اور جعلی کسٹمرز شامل ہیں۔

بینک عملے کا فراڈ ، بینک عملے کا فراڈ ، بینک عملے کا فراڈ ، بینک عملے کا فراڈ

=-= قارئین کاوش پسند آئے تو اپ ڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply