snow fall 92

بیلجیئم میں سردی اور توانائی بنی باعثِ غربت، حکومت ہوئی پریشان

Spread the love

برسلز(جتن آن لائن مانیٹرنگ ڈیسک) بیلجیئم کی وفاقی توانائی کے لیے ریگولیٹری باڈی سی آر ای جی کی جانب سے جاری کردہ تازہ ترین رپورٹ میں انکشاف کیا گیا ہے کہ بیلجیئم میں چار لاکھ گھرانے صرف سردی کے باعث غربت کا شکار ہو سکتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں :

امریکہ، ریکارڈ توڑ سردی،مشی گن جھیل جم گئی

میڈیارپورٹس کے مطابق اس غربت میں اضافے کا سبب سردی سے بچاو کے لیے بجلی کا زیادہ استعمال ہے، فیڈرل باڈی کے مطابق گزشتہ ایک دہائی میں بجلی کی قیمتوں میں 62 گنا سے زائد اضافہ ہوا ہے۔ اس وقت لوگ اپنی آمدن کا 15 سے 20 فیصد صرف توانائی کے حصول پر خرچ کر رہے ہیں جبکہ سردیوں میں اس میں مزید اضافے کا خدشہ ہے۔

توانائی بنی باعث غربت

رپورٹ میں مزید بتایا گیا ہے کہ خصوصی طور پر ان لوگوں کے متاثر ہونے کا خدشہ ہے جو اپنے گھروں کو گرم کرنے کے لیے بجلی کی مشینیں استعمال کرتے ہیں۔ فیڈرل باڈی اس صورتحال کو توانائی کے باعث غربت کا بحران قرار دے رہی ہے۔ رپورٹ کے مطابق اس وقت چار لاکھ چالیس ہزار گھرانے حکومت کی جانب سے بجلی کے بل کی مد میں اعانت کا فائدہ حاصل کر رہے ہیں جبکہ گیس کی مد میں اعانت حاصل کرنے والے گھرانوں کی تعداد 270000 ہے۔ یہ اعانت حاصل کرنے والوں میں معذور، کم آمدنی والے لوگ، پنشنرز اور مختلف وجوہات کی بنا پر سوشل ہاﺅسنگ حاصل کرنے والے نوجوان شامل ہیں۔

یورپی ممالک میں ایک عشرے سے ہر سال سردی کی شدت میں اضافہ

یاد رہے گزشتہ ایک عشرے سے یورپی ممالک میں موسم سرما انتہائی شدید ہوتا ہے، کئی کئی فٹ برفباری کی وجہ سے نظام حیات مفلوج ہو کر رہ جاتا ہے- اس مربتہ بھی محکمہ موسمیات نے کچھ ایسی ہے پیش گوئی کر رکھی ہے- جس کی وجہ سے توانائی کا استعمال زیادہ ہونے کا امکان ہے اور حکومت اپنے ملک کے عوام کی معاشی حالت کی وجہ سے پریشان ہے-

بیلجیئم توانائی غربت

Leave a Reply