Srinager,Kashmiri Protesting against India 0

بھارت کشمریوں سے خائف، مقبوضہ وادی میں مزید فوج تعینات کرنے کا فیصلہ

Spread the love

سرینگر(مانیٹرنگ ڈیسک) مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج نے بڑی کارروائی کرتے ہوئے حریت رہنما یاسین ملک اور امیر جماعت اسلامی عبدالحامد فیاض سمیت جما عت کے 150 سے زائد رہنماؤں اور کارکنوں کو گرفتار کرنے کے بعد بھارت نے کشمیریوں کے ردعمل سے خائف ہو کر اپنی فورسز کی مزید 100 اضافی کمپنیوں کی تعیناتی کی منظوری دیدی۔

کشمیر میڈیا سروس کے مطابق بھارتی پو لیس نے سرینگر کے علاقے میسومہ میں جموں کشمیر لبریشن فرنٹ کے رہنما یاسین ملک کے گھر پر چھاپا مار کر انہیں حراست میں لے لیا اور کوٹھی باغ کے تھانے میں بند کردیا ۔

بھارتی پولیس نے وادی بھر میں مختلف علاقوں میں رات گئے چھاپہ مار کارروائیاں کرتے ہوئے جماعت اسلامی کے 150 سے زائد مرکزی اور ضلعی سطح کے رہنماؤں کو حراست میں لے لیا۔

حراست میں لئے جانےوالوں میں جماعت اسلامی کے مرکزی ترجمان ایڈووکیٹ زاہد علی، سابق سیکرٹری جنرل غلام قادر لون، امیر ضلع اسلام آباد (اننت ناگ) عبدالرؤف، امیر تحصیل پہلگام مدثر احمد، عبدالسلام، بختاور احمد، محمد حیات، بلال احمد اور غلام محمد ڈار شامل ہیں۔

جماعت اسلامی نے اپنے رہنماؤں اور کارکنوں کی گرفتاری کی سخت مذ مت کرتے ہوئے اسے کشمیر کی کشیدہ صورتحال مزید خراب کرنے کی سوچی سمجھی سازش قراردیا .

دوسری جانب پلوامہ حملے کے بعد بھارت نے وادی میں ہنگامی بنیادوں پر مزید فوج تعینات کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور مزید 100 اضافی کمپنیوں کو فضائی راستے سے سری نگر بھیجا جارہا ہے۔

Leave a Reply