Murder 0

بھارت میں جنسی زیادتی کیس واپس نہ لینے پر متاثرہ لڑکی قتل

Spread the love

بھارت میں جنسی زیادتی کا شکار ہونےوالی 22سالہ لڑکی کیس ختم نہ کرنے پر فائرنگ کرکے قتل کردی گئی۔تفصیلات کے مطابق بھارتی ریاست ہریانہ کے شہر گر و گرم میں جنسی زیادتی کا نشانہ بننے والی لڑکی قتل سے کچھ گھنٹے قبل عدالت میں اپنا بیان ریکارڈ کرواکر آئی تھی۔مقتول لڑکی کی والدہ نے الزام عائد کیاملزم سند یپ کمار اس کی بیٹی کو گھر سے زبردستی لے گیا تھاجبکہ بھارتی پولیس کا کہنا ہے مقتولہ نائٹ کلب میں ملازمت کرتی تھی جسے چار گولیاں مار کر قتل کیا گیا، لاش گر گا ﺅ ں، فرید آباد ایکسپریس وے پر پڑی تھی جسے دیکھ کر مسافروں نے پولیس کو مطلع کیا۔مقتول لڑکی کی ماں کے مطابق ملزم سندیپ کمار 2017ءکو ا پنے خلاف دائر کیے گئے مقدمے کو واپس لینے کیلئے ان کی بیٹی پر زور ڈال رہا تھا، گزشتہ روز کیس کی سماعت تھی اور اس سے ایک روز قبل کمار ہمارے گھر آیا اور میری بیٹی سے گفتگو کرنے کی درخواست کی لیکن پھر کچھ سوچ کر چلا گیا مگر کیس کی سماعت کے روز صبح 6بجے کمار نے فون کرکے دھمکی کیس ختم کردو ورنہ تمہاری بیٹی کو قتل کردوں گا۔

Leave a Reply