بھارت میں کروڑوں طلبہ آن لائن کلاسز کیلئے ڈیجیٹل ڈیوائسز سے محروم

بھارت میں کروڑوں طلبہ آن لائن کلاسز کیلئے ڈیجیٹل ڈیوائسز سے محروم

Spread the love

نئی دلی (جے ٹی این‌ آن لائن ایجوکیشن نیوز) بھارت طلبہ ڈیجیٹل ڈیوائسز

جہاں ایک طرف کرونا وباء کے باعث تعلیمی اداروں کی مسلسل بندش کے دوران

آن لائن کلاسز پر زوردیا جارہا ہے وہیں طرف بھارتی حکومت نے اعتراف کیا ہے

کہ مقبوضہ جموں و کشمیر میں 70 فیصد طلبہ کو آن لائن کلاسزسے فائدہ اٹھانے

کیلئے ڈیجیٹل آلات تک رسائی حاصل نہیں ہے۔

=–= تعلیم سے متعلق مزید ایسی خبریں (=–= پڑھیں =–= )

کے ایم ایس کی رپورٹ کے مطابق بھارت کے وزیر تعلیم دھرمیندر پردھان نے

بھارتی پارلیمنٹ کے ایوان زیریں میں ایک سوال کا تحریری جواب دیتے ہوئے کہا

بھارت میں دو کروڑ 96 لاکھ بچوں کو ڈیجیٹل آلات دستیاب نہیں ہیں۔ انہوں نے کہا

کہ مقبوضہ جموں و کشمیر میں 70 فیصد طالب علموں کو ڈیجیٹل آلات تک رسائی

نہیں ہے، جس کا مطلب یہ ہے کہ ان بچوں کے پاس آن لائن تعلیم کی سہولیات

حاصل کرنے کے لئے سمارٹ فونز یا لیپ ٹاپ نہیں ہیں۔

=–= ٹینکالوجی سے متعلق ایسی مزید خبریں ( =–= پڑھیں =–= )

اگرچہ بھارتی حکومت نے کہا ہے کہ بھارت میں 2.96 کروڑ طالب علموں کے

پاس ڈیجیٹل آلات نہیں ہیں تاہم مقبوضہ جموں وکشمیر میں ڈیجیٹل رسائی کے بغیر

طالب علموں کی شرح 70 فیصد بتائی گئی ہے۔ لوک سبھا میں پیش کئے گئے

سرکاری اعداد و شمار کے مطابق 2.96 کروڑ طالب علموں میں ڈیجیٹل آلات سے

محروم دہلی کے 4 فیصد، جموں و کشمیر کے70 فی صد، مدھیہ پردیش کے70 فی

صد، پنجاب کے 42 فیصد اور چھٹیس گڑھ کے28.27 فیصد طلبہ شامل نہیں ہیں

کیونکہ ان کی اصل تعداد کے بارے میں نہیں بتایا گیا۔ تعداد کے لحاظ سے بہار میں

اس طرح کے طالب علموں کی تعداد سب سے زیادہ یعنی 1.43 کروڑ ہے جس کے

بعد جھارکھنڈ 35.52 لاکھ، کرناٹک 31.31 لاکھ، آسام 31.06 لاکھ اوراتراکھنڈ میں

21 لاکھ ایسے بچے ہیں جن کو ڈیجیٹل آلات تک رسائی نہیں ہے۔

بھارت طلبہ ڈیجیٹل ڈیوائسز ، بھارت طلبہ ڈیجیٹل ڈیوائسز ، بھارت طلبہ ڈیجیٹل ڈیوائسز

=-= قارئین= کاوش پسند آئے تو اپ ڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply