Kashmir Curfio 119

بھارت سفارتکاروں کو مقبوضہ کشمیرکے دورہ کی اجازت دے، امریکی رکن کانگریس

واشنگٹن(مانیٹرنگ ڈیسک )امریکی رکن کانگریس بریڈ شرمین نے کہا ہے وہ کیا

وجوہات ہیں بھارتی حکومت نے امریکی سفارتکاروں کو دورہ کشمیر کی اجازت

نہیں دی،میری درخواست ہے اس معاملہ پر محکمہ خارجہ اور کشمیر سے متعلق

ڈائریکٹر آف انٹیلی جنس آفس ایک جامع بریفنگ دے۔تفصیلات کے مطابق امریکی

رکن کانگریس بریڈشرمین نے امریکہ کی قائم مقام نائب وزیر خارجہ جنوبی و

وسط ایشیائی امور ایلس ویلز کے نام مقبوضہ کشمیر کی صورتحال سے متعلق خط

لکھا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ کیا 5اگست 2019کے بعد سے امریکی سفارت

کاروں کوکشمیر جانے کا موقع ملا ہے؟ 5اگست کے بعد امریکہ نے کتنی مرتبہ

سرکاری طور پر امریکی سفارت کاروں کے کشمیر کے دورہ کی درخواست کی،

وہ کیا وجوہات ہیں کہ بھارتی حکومت نے امریکی سفارت کاروں کو دورہ کشمیر

کی اجازت نہیں دی۔بریڈشرمین کا کہنا تھا کہ اکتوبرمیں بھارتی حکومت نے یورپی

یونین کے ممبران پارلیمنٹ کو کشمیر کا دورہ کرنے کے لئے منتخب کیا، بھارتی

حکومت کو امریکی سفارتکاروں کو کشمیر جانے کی اجازت دینی چاہیے جب کہ

22 اگست 2019 کے اجلاس میں ذیلی کمیٹی کے ممبران کی جانب سے محکمہ

خارجہ اورکشمیرسے متعلق ڈائریکٹر آف انٹیلی جنس آفس سے بھی بریفنگ کی

درخواست کی گئی تھی۔بریڈشرمین نے خط میں کہا کہ میری درخواست ہے کہ اس

معاملہ پر محکمہ خارجہ اور کشمیر سے متعلق ڈائریکٹر آف انٹیلی جنس آفس ایک

جامع بریفنگ دے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں