بھارتی فوجی جارحیت، پلوامہ میں3کشمیری، چکوٹھی ایل اوسی پر2 پاکستانی شہید

Spread the love

سرینگر،چکوٹھی(مانیٹرنگ ڈیسک،نیوزایجنسیاں) مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج

نے نام نہاد سرچ آپریشن کے دوران فائرنگ کرکے 3 کشمیری نوجوانوں کو شہید

کردیا۔کشمیر میڈیا سروس کے مطابق مقبوضہ کشمیر کے ضلع پلوامہ میں بھارتی

فوج نے سرچ آپریشن کے دوران 3 کشمیری نوجوانوں کو شہید کردیا۔ شہید

ہونیوالے نوجوان یونیورسٹی کے طالب علم تھے اور تعطیلات منانے اپنے گھر

آئے تھے۔نوجوانوں کی شہادت پر ضلع بھر کے عوام میں غم و غصے کی لہر

دوڑ گئی اور شہری احتجاج کرتے ہوئے اپنے گھروں سے نکل آئے، مظاہرین کو

منتشر کرنے کے لیے بھارتی فوج نے پرانے ہتھکنڈے اپناتے ہوئے بے دریغ

ہوائی فائرنگ آنسو گیس کی شیلنگ کی۔ دوسری جانب نیشنل انویسٹی گیشن

ایجنسی کی جانب سے حریت فورم کے چیئرمین میر واعظ عمرفاروقاور حریت

رہنما سید علی گیلانی کے بیٹے نسیم گیلانی کو جھوٹے کیس میں آج پیر کو نئی

دہلی طلب کرلیا ہے۔انہیں طلب کرنے کیخلاف اتوار کے روز سرینگر کے مختلف

علاقوں میں مکمل ہڑتال ہوئی ۔احتجاجی مظاہرین کا کہنا ہے کہ موبائل فون اور

شناختی کارڈ چھین لینے کے بعد لوگوں کو مست پورہ فوجی کیمپ پر حاضر

ہونے کیلئے کہا جاتا ہے جہاں ان کو تشدد کا نشانہ بنایا جاتا ہے۔ دوسری

جانب بھارت کا جنگی جنون کم نہ ہوا ، چکوٹھی میں لائن آف کنٹرول پر بھارت

کی بلااشتعال فائرنگ سے دو شہری شہید اور چار زخمی ہوگئے۔بھارتی فوج نے

آزاد کشمیر کے علاقہ چکوٹھی میں شہری آبادی کو نشانہ بنایا۔ضلعی انتظامیہ کے

مطابق فائرنگ اور گولہ باری سے غلام حسین اور نوشاد بی بی شہید ہوگئے۔زاہدہ

بی بی، راجہ محمود، محمد ذاکر اور غلام محمد زخمی ہوئے۔ پاک فوج نے

بھارتی جارحیت کا بھرپور جواب دیا۔

Leave a Reply