بھارتی فوجیوں نے دہشتگردی کی انتہا کر دی،ایک دن میں 14کشمیری شہید

Spread peace & love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

مقبوضہ کشمیر میں ضلع پلوامہ میں جاری بھارتی فوج کے ظالمانہ آپریشن میں 14 کشمیری شہید اور 235 زخمی ہو گئے ہیں۔قابض فوج نے ہفتہ کی صبح فائرنگ کرکے تین کشمیری نوجوانوں کو شہید کردیا تھا جس کے ردعمل میں ہزاروں مظا ہر ین سڑکوں پر نکل آئے، قابض فوج اور مظاہرین کے درمیان جھڑپوں کے نتیجے میں ہونیوالی شہادتوں کی تعداد 14 ہو گئی ہے۔احتجاجی مظا ہر ے کے دوران 235 افراد کے زخمی ہونے کی اطلاع ہے۔پلوامہ میں کشمیریوں کی شہادت کے بعد وادی میں ہزاروں مظاہرین سڑ کو ں پر نکل آئے، جنہیں روکنے کیلئے قابض فوج کی جانب سے آنسو گیس اور پیلٹس کا استعمال کیا جارہا ہے۔ ضلع پلوامہ کے گائوں سرِنو میں بھار تی فوج کا نام نہاد سرچ آپریشن صبح چار بجے سے جاری ہے اور علاقے میں فائرنگ کی آوازیں سنی جارہی ہیں اور قابض انتظامیہ نے علا قے کو مکمل گھیرے میں لیا ہوا ہے۔قابض بھارتی فوج نے علاقے میں انٹرنیٹ اور ریلوے سروس بھی معطل کر دی ہے۔حریت رہنما میر وا عظ عمر فاروق نے اپنی ٹویٹ میں بتایا عامر احمد اور عابد حسین کو پلوامہ میں فائرنگ کرکے شہید کردیا گیا۔ بھارتی فوج نے مزید 3 کشمیری شہید اور متعدد زخمی کردیے ہیں۔انہوں نے نوجوانوں کی شہادت پر وادی میں تین روزہ سوگ کا اعلان کرتے ہوئے کہا بھارتی حکومت مقبوضہ کشمیر میں انسانیت سوز مظالم بند کرے، قتل کرنا ریاستی پالیسی بن گئی ہے۔ ایسی حرکتوں سے بغاوت اور نفرت کے سوا کچھ حاصل نہیں ہوگا۔ حریت قائدین سید علی گیلانی، میر واعظ عمر فاروق اور محمد یاسین ملک نے پلوامہ میں فوج کی فائرنگ سے شہید ہونیوالے11 شہریوں کے واقعہ کی مذمت کرتے ہوئے تین روزہ ہڑتال کی اپیل جاری کی ہے جبکہ پیر کو سرینگر کے چھاونی کے علاقے بادامی باغ کی طرف مارچ کرنے کا اعلان بھی کیا ہے۔

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Leave a Reply