کرونا لاک ڈاؤن، بھارتی مزدوروں کی مشکلات پر بنی فلم 1232 کلومیٹر ریلیز

کرونا لاک ڈاؤن، بھارتی مزدوروں کی مشکلات پر بنی فلم 1232 کلومیٹر ریلیز

Spread the love

ممبئی (جے ٹی این آن لائن شوبز نیوز) بھارتی فلم 1232 کلومیٹر

بھارتی ہدایتکار ونود کپری نے گزشتہ برس 2020ء میں بھارت میں نافذ ہونیوالے

سخت لاک ڈاؤن کے دوران پیش آنیوالی مشکلات پر دستاویزی فلم بنائی ہے جو آج

24 مارچ کو ریلیز ہو گی۔ گزشتہ سال اپریل میں فلم ‘1232 کلومیٹرز’ کی شوٹنگ

کی تھی۔ یہ فلم، شہروں میں نوکری سے فارغ ہونے کے بعد گاؤں میں اپنے گھر

جانیوالے 7 افراد پر مشتمل ہے، جو ان کی مشکلات، امتیازی سلوک اور ایک ہفتہ

طویل سفر کے دوران پیش آنیوالے حالات پر مبنی ہے۔

=–= شوبز سے متعلق مزید خبریں ( =–= پڑھیں =–= )

گزشتہ برس مارچ سے جون کے دوران بھارت میں نافذ ہونیوالے سخت لاک ڈاؤن

سے 10 کروڑ مزدور متاثر ہوئے تھے جو بیروزگاری کے باعث شہروں سے

گاؤں واپسی پر مجبور ہوئے تھے۔ کئی مزدوروں نے شہروں سے گھر تک سفر کا

پیدل طے کیا تھا، ان کی مشکلات کو ٹی وی پر براہ راست دکھایا گیا تھا جس سے

ان کی مدد کی کوششیں تیز ہوگئی تھیں۔ فلم میں شامل اشیش کمار نے کہا کہ نئی

دہلی کے قریب غازی آباد سے مشرقی ریاست بہار میں واقع 1232 کلومیٹر ( 765

میل ) تک کا سفر ناممکن لگ رہا تھا۔ 45 سالہ شخص نے بذریعہ تھامسن رائٹرز

فاؤنڈیشن کو بتایا کہ میں نے جب فلم دیکھی تو ہنسا اور رویا بھی، ہ فلم دیکھ کر

میری لاک ڈاؤن کے ان دنوں کی وہ تمام یادیں تازہ ہو گئیں جب کھانا ملنا، مدد اور

گھر واپسی تک کا سفر مشکل ہو گیا تھا۔

=–= گاؤں جاتے محنت کشوں کا گروپ ملا تو ریکارڈنگ کی ٹھان لی، ہدایتکار
——————————————————————————————————-

فلم کے ہدایتکار وینود کپری نے بتایا کہ مہاجر مزدوروں کی امداد کے دوران وہ

سات لوگوں کے ایک گروپ سے ملے، تو انکا سفر ریکارڈ کرنے کا سوچا۔ لیکن

مجھے ایک ہیرو کی طرح بھی محسوس ہوا جس نے کچھ حاصل کر لیا تھا اور اس

نے مجھے مسکرانے پر مجبور کر دیا۔ وہ مہاجر مزدوروں کی مدد کے دوران ان

7 افراد سے ملے اور ان کے سفر کی ریکارڈنگ کا فیصلہ کیا۔ جب وہ 7 افراد گھر

واپسی کا سفر کررہے تھے تو انہوں نے گاڑی کے ذریعے ان کا پیچھا کیا اور

ریکارڈنگ کی۔ فلم میں مزدوروں کو گنگا سے گزرتے ہوئے اور ان میں سے ایک

کو رات کو سائیکل چلاتے ہوئے تھکن سے بیہوش ہوتے دکھایا گیا ہے۔ اسی فلم

کے ایک اور منظر میں رشتے داروں کو واپسی کی یقین دہانی کرتے ہوئے فون

کالز کرتے بھی دکھایا گیا ہے۔ ونود کپری نے کہا میں جانتا تھا تاریخ رقم ہو رہی

ہے اور فلمبندی کے دوان کچھ لمحات انتہائی دلخراش تھے۔ ان مہاجرین کو اکثر

وائرس کیریئرز کے طور پر دیکھا جاتا اور ان کی مدد سے انکار کیا جاتا۔ سفر

کے دوران انہیں کچھ مہربان لوگ بھی ملے، جیسے ایک ٹرک ڈرائیور بھی ملے

جو انہیں لفٹ دینے کو تیار ہو گئے تھے۔ راستے میں ایسے ڈھابے بھی آئے جو ان

مزدوروں کو مفت میں کھانا دے دیتے۔

=قارئین=ہماری کاوش اچھی لگے تو شیئر، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

مزدور اشیش کمار اس دستاویزی فلم میں کہتے ہیں اگر ہمیں مرنا ہی ہے، تو سڑک

پر مریں گے۔ ان کا خاندان گاؤں واپس جانے کے فیصلے کیخلاف تھا، لیکن وہ ان

حالات میں شہر کے بجائے اپنے گاؤں میں خود کو زیادہ محفوظ سمجھتے تھے۔

اشیش کمار نے کہا لاک ڈاؤن کی پابندیوں میں نرمی کے بعد اکتوبر میں کام کیلئے

واپس آئے تھے۔ فلم “1232 کلومیٹر” اسٹرینمگ سروس ڈزنی + ہاٹ اسٹار پر آج

24 مارچ کو ریلیز ہوگی-

بھارتی فلم 1232 کلومیٹر

Leave a Reply