بغاوت کے مقدمات پر مسلم لیگ ن کا سخت تشویش کا اظہار

Spread peace & love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

بغاوت کے مقدمات

اسلام آباد (جے ٹی این آن لائن نیوز) پاکستان مسلم لیگ (ن) نے وزیر اعظم آزاد کشمیر لیگی قائدین

اور رہنمائوں پربغاوت کے مقدمات کی سخت تشویش کا اظہار کرتے ہوئے واضح کیا ہے کہ اگر

جمہوریت آئین کی بالادستی کا نام لینا بغاوت ہے تو ہرروز بغاوت ہوگی، آپ سیاست میں غداری لائے

ہیں ،ایسے ہتھکنڈے نہیں چلیں گے ،غداری وہ کررہا ہے جو سی پیک بند اور کشمیر کا سودا کرتا ہے

،پی ڈی ایم موجودہ حکومت سے عوام کو نجات دلائیگا ۔ ان خیالات کا اظہار مسلم لیگ (ن )کے

رہنماؤں شاہد خاقان عباسی، احسن اقبال اور مریم اورنگزیب نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے

ہوئے کیا۔ شاہد خاقان عباسی نے کہاکہ صبح دو بجکر چھبیس منٹ پر بدر رشید نامی ایک شخص کی

مدعیت میں شاہدرہ تھانہ میں ایک مقدمہ درج ہوا، مدعی کا کوئی پیشہ نہیں، مدعی نے جائے وقوعہ

دیا کہ دو سابق وزراء اعظم، آزاد کشمیر کے موجودہ وزیراعظم، سینٹ کے اپوزیشن لیڈر، سابق

سپیکر قومی اسمبلی، دو سابقہ وزرا دفاع، سابقہ وزیرخارجہ، سابقہ وزیرخزانہ، کے پی کے سابق

وزیراعلیٰ اور گورنر، سولہ سے زائد سابقہ وفاقی وزرا اور تین سابقہ لیفٹیننٹ جنرل بغاوت کے

مرتکب ہوئے ہیں۔ انہوںنے کہاکہ اس پرچے کے مطابق یہ بغاوت پنڈی سازش کیس سے بھی بڑی

ہے، اس پرچے کے مطابق جو پاکستان چلایا کرتے تھے وہ سب بغاوت کے مرتکب ہوئے ہیں۔

انہوںنے کہاکہ چار دن سے وفاقی وزرا یہی راگ الاپ رہے تھے۔ شاہد خاقان عباسی نے کہاکہ اگر

وفاقی وزرا ء میں جان ہے تو پھر بدر رشید کا نام نہ لیں خود پرچہ درج کروائیں،اگر جمہوریت آئین

کی بالادستی کا نام لینا بغاوت ہے تو ہرروز بغاوت ہوگی۔ سابق وزیر اعظم نے کہاکہ اگر کشمیر کے

سودے کی بات کرنا بغاوت ہے تو ہر روز ہوگی، اگر ملک کے خلاف سازش بے نقاب کرنا بغاوت ہے

تو ہرروز ہوگی۔ انہوںنے کہاکہ جب الزام لگانے کے لئے کچھ نہ رہ جائے تو بغاوت کے الزامات

لگائے جاتے ہیں،عثمان بزدار اس معاملہ میں نہ پڑے۔ انہوںنے کہاکہ وفاقی وزرا میں ہمت ہوتی تو

خود لکھتے، عمران اور بزدار اپنا نام لکھتے،یہ ہتھکنڈے نہیں چلیں گے۔ سابق وزیر اعظم نے کہاکہ

غداری وہ کررہا جو سی پیک بند جو کشمیر کا سودا کرتا ہے۔انہوںنے کہاکہ آپ آج سیاست میں غداری

لے آئے ہیں، پی ڈی ایم اس حکومت سے عوام کو نجات دلائے گا۔ احسن اقبال نے کہاکہ معاملہ اب

حماقتوں سے آگے نکل چکا ہے، یہ نالائق ہیں بہتر ہیں خود سبکدوش ہوجائیں، ان کی ناکامیاں

اپوزیشن کو غداری کے الزامات دے کر نہیں چھپیں گی۔ انہوںنے کہاکہ ہر پانچ میں سے چار پاکستانی

ان سے مایوس ہوچکے ہیں، کابینہ کے ایجنڈا پر بجلی بم اور گیس بم پھٹنے جارہا ہے۔ احسن اقبال نے

کہاکہ پاکستان کے عوام جانتے ہیں پاکستان بنانے اور اجاڑنے والا کون ہے۔انہوںنے کہاکہ ہر پاکستانی

جانتا ہے کہ پاکستان بنانے والے کون ہیں۔ احسن اقبال نے کہاکہ پاکستان کو ترقی کی شاھراہ پر

ڈالنے، معیشت کو ترقی دینے والے آج غدار ہیں۔ انہوںنے کہاکہ ملکی ترقی کو منفی میں لے جانے

والے سی پیک رول بیک کرنے والے محب وطن ہیں، یہ غداری اور حب الوطنی کا کھیل اب نہیں

چلے گا۔ انہوںنے کہاکہ بلوچستان میں، خیبرپختونخواہ اور سندھ میں پہلے غداری کے مقدمہ قائم کئے

گئے آج پنجاب کو غداری کے زمرے میں لائے ہیں، ایف آئی آر میں لکھا ہے کہ مسلم لیگ ن کے

رہنماء بھارت کے کشمیر میں اقدامات سے توجہ ہٹانے کے لئے اداروں کو کمزور کر رہے ہیں۔

انہوںنے کہاکہ کشمیر کی متنازعہ حیثیت تو نئے پاکستان میں تبدیل ہوئی، پاکستان اس حد تک کیوں

کمزور ہوگیا کہ ہندوستان نے کشمیر کو ہڑپ کرلیا، انہوں نے سیکیورٹی کونسل میں منتخب ہونے کے

لئے بھارت کو ووٹ دیا۔ انہوںنے کہاکہ قوم جاننا چاھتی ہے سقوط کشمیر کس قیمت پر کیا؟ احسن اقبال

نے کہاکہ عوام کی مہنگائی کی بات کرنا غداری ہے؟ ان سے آٹا چینی اور دوسری اشیاء ضرورت کی

مہنگائی پر سوال کرنا غداری ہے، اگر عوام کی بات کرنا غداری تو یہ ہمیں فخر ہے کیونکہ ھم وطن

کی بات کرتے ہیں۔ انہوںنے کہا کہ پی ٹی آئی نہایت ہوشیاری کے ساتھ قومی اداروں کو سیاست میں

گھسیٹ رہی ہے، قومی اداروں کو عوام کے مدمقابل کھڑا کیا جارہا ہے۔ انہوںنے کہاکہ وزیرداخلہ

غداری کا مقدمہ اپنے نام سے درج کروائے، ہماری لڑائی ان سے ہے جو پاکستان کے آئین سے

روگردانی کرتے ہیں چاہے وہ فوجی، جج، بیوروکریٹ، سیاستدان یا صحافی ہو۔ انہوںنے کہاکہ

حکومت سے درخواست ہے کہ بدر رشید کا چہرہ تو کروائیں۔

بغاوت کے مقدمات

ستاروں کا مکمل احوال جاننے کیلئے وزٹ کریں ….. ( جتن آن لائن کُنڈلی )

قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Leave a Reply