دنیا کی آبادی کے پانچویں حصے کو کرونا وائرس کا شدید خطرہ لاحق ہے، عالمی ماہرین

کھانسنا جرم قرار، ملے گی اب اس پر سخت سزاء

Spread peace & love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

لندن(جے ٹی این آن لائن خصوصی رپورٹ) برطانیہ کھانسنا جرم سزائیں

برطانیہ میں جان بوجھ کر کھانسنا بھی جرم قرار دے دیا گیا- خود کو کرونا کا مریض ظاہر کرکے طبی عملے پر کھانسنے والے کو دو سال قید ہوگی۔ عوام کو گھروں تک محدود رکھنے کیلئے پولیس کو نئے اختیارات مل گئے- لاک ڈاون کی خلاف ورزی پر گرفتار ہونیوالے پر 60 پاونڈ جرمانہ ہوسکے گا، جبکہ بار بار خلاف ورزی کرنے پر جرمانہ دوگنا ہوتا جائے گا۔

مزید پڑھیں : چھینک پر پٹائی، جگ ہنسائی اور منفرد اپیل بنی عدالت کا امتحان

تفصیلات کے مطابق کرونا وائرس کی وباء کے باعث جہاں دنیا بھر میں صورتحال آئے روز ابتر ہوتی جارہی ہے، وہیں ہمہ وقت غیرسنجیدہ افراد کو ایسے حالات میں بھی ہر کسی کیساتھ مذاق کی سوجھی رہتی ہے کی بھی دنیا میں کمی نہیں،ایسی ہی صورتحال سے برطانیہ کو بھی سامنا کرنا پڑا- حکومت کو جب اس ضمن میں شکایات موصول ہوئیں تو اس نے فوری نوٹس لیتے ہوئے انتہائی سخت ایکشن لے لیا-
حکومت کو شکایات یہ ملی تھیں کہ کچھ صحت مند مگر غیر سنجیدہ لوگ کرونا متاثرہ ہونے کا ڈرامہ رچا کر عوام میں خوف ہراس پھیلانے کیلئے جان بوجھ کر کھانستے ہیں- جس پر حکومت نے ایسی غیرسنجیدہ اور لوگوں میں خوف ہراس پھیلانے والوں کی عقل ٹھکانے لگانے کیلئے سخت ترین سزائیں دینے کا اعلان کردیا-

اپنا کام کرنیوالوں کیلئے گرانٹ سکیم کا بھی اعلان

برطانوی حکومت نے کرونا وباء کے باعث سد باب کیلئے لاک ڈاؤن کی وجہ سے اپنا کام کرنیوالے محنت کش افراد کیلئے گرانٹ سکیم کا اعلان بھی کیا ہے۔ چانسلر رشی سونک نے کہا اپنا کام کرنیوالے کی ماہانہ تنخواہ کا 80 فیصد حکومت ادا کرے گی۔ ایسے ورکرز پر ڈھائی ہزار پونڈ کی حد لاگو ہوگی۔ حکومت کے اقدام پر عوام نے خوشی کا اظہار کیا ہے-

برطانیہ کھانسنا جرم سزائیں

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Leave a Reply