بابر بن عطااستعفیٰ،عہدے کے غلط استعمال ،بے ضابطگیوں ، ذاتی تشہیر ، اقرباپروری کی انتہا کردی تھی

Spread peace & love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر) وزیراعظم کے سابق فوکل پرسن برائے انسداد پولیو

بابربن عطاکاعہدے کے غلط استعمال اوربے ضابطگیوں میں ملوث ہونے

کاانکشاف ہوا ہے جس کے بعد وزیراعظم آفس نے ان سے استعفیٰ طلب کیا تھا۔

ذرائع کے مطابق، بابربن عطاکیخلاف رپورٹس وزیراعظم عمران خان کودی گئیں،

چیف سیکرٹری خیبرپختونخوانے بابربن عطاسے متعلق شکایات کیں جس کے بعد

انہیں وزیراعظم آفس بلاکرسرزنش کی گئی، بابربن عطاکو 12 گھنٹے میں عہدہ

چھوڑنے کاحکم دیاگیا اور عہدہ نہ چھوڑنے پربرطرف کرنے سے متعلق آگاہ کیا

گیا۔ذرائع نے یہ بھی انکشاف کیا کہ پولیوکیسزسے متعلق غلط اوربے بنیادرپورٹس

جاری کی گئیں، پولیورفیوزل ریٹ 2لاکھ سے 25 لاکھ تک پہنچ گیا، بابربن

عطانے سندھ ،بلوچستان اورپنجاب کومکمل نظراندازکیا،اس کیساتھ ساتھ

انسدادپولیوپروگرام کوسیاسی رنگ دیکرفائدہ حاصل کیاگیا، خیبرپختونخوامیں

پسندکی ڈی ایچ اوزکی تعیناتی کیلئے انتظامیہ پردباؤڈالا گیا، میڈیااورسوشل

میڈیاپرذاتی تشہیرکی گئی، بابربن عطانے میرٹ کی خلاف ورزی کرتے ہو ئے

سوشل میڈیاٹیم ہائرکی، سوشل میڈیاٹیم میں دوست اوررشتہ داروں کوبھرتی کروایا،

مشہورسوشل میڈیاایکٹویسٹ کے بھائی کوٹیم کاحصہ بنایاگیا اور ٹیم کوبھاری

تنخواہوں پرادائیگیاں کی گئیں۔دوسری جانب، انسدادپولیوپروگرام میں ڈائر

یکٹرکمیونیکیشن کی غیرقانونی تعیناتی کی گئی جبکہ عالمی ڈونرزکے اداروں میں

ذاتی فائدے کیلئے لابنگ کی، عالمی ڈونرزپرپرنٹنگ آوٹ لیٹس کیلئے دباؤڈالااور

پروگرام کی ناکامی کی رپورٹس میں عالمی ڈونرزکوقصوروارٹھہرایاگیا۔

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Leave a Reply