A-S-Dulat-EX Raw Chief giving interview to Indian media.

انضمام کشمیر پرردعمل لازمی، دہشتگردی بھی بڑھے گی، اے ایس دلت

Spread the love

نئی دہلی (جے ٹی این آن لائن مانیٹرنگ ڈیسک) اے ایس دلت

بھارتی خفیہ ایجنسی “را” کے سابق چیف اے ایس دلت نے بھارتی میڈیا کو ایک

انتہائی سنسنی خیز اور دھواں دھار انٹرویو دیتے ہوئے کہا ہے بھارت میں ایک

غیر یقینی کی صورتحال ہے، بی جے پی واجپائی والی پارٹی نہیں رہی، واجپائی

کی پارٹی ختم ہو گئی۔ انکا مزید کہنا تھا کہ مودی سرکار کے اقدام سے بھارت میں

دہشت گردی بڑھے گی، مقبوضہ کشمیر کی بھارت کے آئین سے خصوصی حیثیت

کے خامتے اور ملک میں انضمام کا رد عمل کہیں نہ کہیں تو آئے گا-

پڑھیں: بھارت نواز کشمیری رہنما عمرعبداللہ اور محبوبہ مفتی گرفتار

کشمیر میں آزادی تھی ہی نہیں تو آزادی چھیننے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا۔ اے ایس

دْلت کا کہنا تھا ڈاکٹر فاروق عبداللہ سے نائب صدارت کا وعدہ کیا گیا تھا، اس کا

میں گواہ ہوں، فاروق عبد اللہ بھارت کے حامی تھے۔ ان کا فائدہ نہیں اٹھایا گیا۔

سابق “را” چیف اے ایس دلت کا کہنا تھا سرینگر میں پہلے بھی دہلی کا بندہ ہوتا

تھا، اب بھی دہلی کی مرضی کا لیڈر ہو گا۔

مزید پڑھیں: کشمیرکی خصوصی حیثیت ختم کرنا خطرناک، منموہن سنگھ

یاد رہے بھارتی حکومت نے مقبوضہ جموں و کشمیر اور لداخ کو دو حصوں میں

تقسیم کرنے کیلئے مقبوضہ کشمیر کو آئین میں آرٹیکل 370 اور شق 70 اے کے

تحت حاصل خصوصی حیثیت ختم کرکے عالمی سطح پر متنازع خطے کو ملک کا

حصہ قرار دیدیا ہے، جس پر انصاف پسند دنیا سراپا احتجاج اور فیصلہ فوری

واپس لینا کا مطالبہ کر رہی ہے، ایسے میں بھارتی خیفہ ایجنسی “را” کے سابق

چیف کا مودی سرکار کو بظاہر یہ انتباہ لگتا ہے مگر ذو معانی ہونے کی وجہ سے

اپنے حق کیلئے لڑنے والوں کو دہشتگرد گرداننے کا اشارہ بھی ہے-

Leave a Reply