khabar i Hai jtnonline

مسجد الحرام کی تاریخ میں پہلی بار ایک اذان دو موذن

Spread peace & love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

مکہ مکرمہ(جتن آن لائن خصوصی رپورٹ) ایک اذان دو موذن

مکہ مکرمہ میں مسجد الحرام کی تاریخ میں پہلی مرتبہ عشاء کی اذان ایک موذن کے بجائے دوموذنوں نے مکمل کی۔ مسجد الحرام کے سینیئر موذن علی الملا عشاء کی اذان دے رہے تھے کہ اچانک ان کی طبیعت ناساز ہوگئی، فورا ہی معاون موذن نے مائیک سنبھالا اور ان کی جگہ اذان مکمل کی۔ مزید پڑھیں

مسجد الحرام میں اذان کا مخصوص نظام، ہمہ وقت 24 افراد متعین

تفصیلات کے مطابق مسجد الحرام میں اذان کے مقررہ نظام کے مطابق ہر فرض نماز کیلئے دو موذن ڈیوٹی پر ہوتے ہیں۔ یہ انتظام اس وجہ سے کیا جاتا ہے تاکہ خدانخواستہ کوئی ایک موذن کسی وجہ سے بروقت نہ پہنچ سکے یا اذان دیتے وقت کوئی مشکل پیش آجائے تو ایسی صورت میں متبادل موذن اس کی جگہ سنبھال سکے۔ مسجد الحرام میں اذان کا مخصوص نظام ہے۔ اسکے لیے انجینیئرز اور دفتری کارکن تعینات ہیں۔ حرم مکی میں اذان کیلئے 24 افراد تعینات ہیں۔

بزرگ موذن کی اذان دیتے وقت اچانک حالت بگڑ گئی

گزشتہ رات مسجد الحرام کے پُرانے اور بزرگ موذن کی اذان دیتے وقت اچانک حالت بگڑ گئی۔ جس کے وجہ سے اُنہیں زندگی میں پہلی بار اذان ادھوری چھوڑنا پڑی اور ان کی جگہ قریب موجود ایک اور موذن ھاشم السقاف آگے بڑھے اور انہوں نے اذان مکمل کی-

الشیخ علی ملا کی حالت اب بہتر، علاج جاری

تاہم اب الشیخ علی ملا کی حالت اب بہتر ہے اور ان کا علاج جاری ہے۔ انہوں نے اس واقعے کے تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ گزشتہ رات نماز عشاء کی اذان کے دوران اچانک ان کی آواز میں خرابی پیدا ہوگئی جس کے بعد انہیں اذان ادھوری چھوڑنا پڑی۔ انہوں نے بتایا کہ جب انہوں نے اذان کی ادائیگی شروع کی تو اس دوران ان کی آواز بھاری ہوتی گئی اور وہ اذان مکمل نہ کرسکے۔ خیال رہے الشیخ علی احمد ملا مسجد حرام کے دیرینہ اور مشہور موذنین میں سے ایک ہیں۔ وہ گذشتہ 45 سال سے حرم ملکی میں اذان کی سعادت حاصل کر رہے ہیں۔ انہوں نے 1975ء میں مسجد حرام میں موذن کی ذمہ داریاں سنبھالیں اور آج تک یہ فرض ادا کر رہے ہیں۔

سعودی عوام کی سوشل میڈیا پر فکرمندی و تشویش

سعودی عوام کو جب دیرینہ موذن الشیخ علی مُلا کی خرابی صحت کی اطلاعات ملیں تو ان کی جانب سے فکر مندی اور تشویش کا اظہار کیا گیا۔ سوشل میڈیا پر بھی لوگوں نے اپنے پیغامات میں دُعا کی کہ اللہ پاک انہیں جلد از جلد مکمل طور پر صحت یابی عطا کرے تاکہ وہ دوبارہ سے مسجد الحرام میں اذان دے کر اپنے لیے مزید برکات اور رحمتیں سمیٹ سکیں۔

یہ بھی پڑھیں: صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم

ایک اذان دو موذن

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Leave a Reply