ڈیلٹا الفا بیٹا اقسام 0

کوروناسے مزید 16اموات، ایپسیلون وائرس کی موجودگی کا انکشاف

Spread the love

ایپسیلون وائرس کی موجودگی

اسلام آباد (جے ٹی این آن لائن نیوز) کورونا وائرس سے 16 افراد جاں بحق ہوگئے، جس کے بعد

اموات کی تعداد 28 ہزار 328 ہوگئی، گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 622 نئے کیسز رپور ٹ

ہوئے،جس کے بعد پاکستان میں کورونا کے تصدیق شدہ کیسز کی تعداد 12 لاکھ 66 ہزار 826 ہوگئی۔

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کے تازہ ترین اعدادوشمار کے مطابق ملک بھر میں اب تک 2 کروڑ 3

لاکھ 66 ہزار 157 افراد کے ٹیسٹ کئے گئے، گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 44 ہزار 334 نئے ٹیسٹ

کئے گئے، اب تک 12 لاکھ 13 ہزار 799 مریض صحتیاب ہوچکے ہیں جبکہ ایک ہزار 690

مریضوں کی حالت تشویشناک ہے۔دوسری جانب پاکستان میں کورونا وائرس کی ایک اور قسم کی

موجودگی کا انکشاف ہوا ہے ۔جاپانی حکو مت نے اقوام متحدہ کے بچوں کے فنڈ (یونیسیف)کے

ذریعے کووڈ 19 ویکسین کو ذخیرہ کرنے کی قومی صلاحیت بڑھانے کیلئے65 لاکھ 90 ہزار ڈالر

مالیت کا سامان اسلام آباد کو فراہم کیا، جبکہ جاپانی سفیر نے امید ظاہر کی کہ مستقبل میں پاکستان

کے ساتھ صحت کے شعبے میں شراکت داری کا ایک نیا راستہ کھل جائے گا اور ذیابیطس سے نمٹنا

بھی ایسا ہی ایک شعبہ ہو سکتا ہے۔ایک انٹرویومیں کووڈ 19 پر سائنسی ٹاسک فورس کے رکن ڈاکٹر

جاوید اکرم نے کہا ایپسیلون نامی کووڈ 19 کی ایک خطرناک قسم کا پتا لگایا گیا ہے، یہ قسم کیلیفورنیا

میں نمود ا ر ہوئی تھی، اسی وجہ سے اسے کیلیفورنیا قسم یا B.1.429 کہا جارہا ہے جس کے بعد یہ

برطانیہ اور دیگر یورپی ممالک پہنچی۔ اب پاکستان میں بھی اس کے کیسز سامنے آرہے ہیں او ر اب

تک ایپسیلون کی پانچ مختلف اقسام اور سات میٹیشنز ملی ہیں جس نے اسے زیادہ متعدی بنا دیا ہے۔

ہمیں یہ سمجھنے کی ضرورت ہے وائرس پر قابو پالیا گیا ہے لیکن ختم نہیں ہوا اس لیے اس کے

دوبارہ پھیلا کے امکانات ہیں۔ یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز کے وائس چانسلر ڈاکٹر جاوید اکرم نے کہا

جین سیکوینسنگ کی مدد سے پاکستان میں 40 افراد کے اس قسم سے متاثر ہونے کی تصدیق ہوئی ہے

لیکن یہ حقیقی اعداد و شمار نہیں ہیں کیونکہ ہر مریض کی جین سیکوینسنگ نہیں کی جاتی۔ مثبت پہلو

یہ ہے کہ تمام ویکسینز ایپسیلون کیخلاف موثر ہیں، اس لیے لوگوں کو حفاظتی ٹیکے لگانے چاہئیں

اورایس او پیزپر عمل کرنا چاہیے۔دوسری جانب وزارت قومی صحت (این ایچ ایس)اور نیشنل کمانڈ

اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی)نے ایک ویڈیو پیش کی جس میں اس بات کی وضاحت کی گئی کہ

کووڈ 19 ویکسین کیسے کام کرتی ہے، بیماری کی وجہ نہیں بنتی بلکہ یہ جسم میں مدافعتی قوتوں کو

کووڈ 19 کو پہچاننے اور وائرس کے جسم میں داخل ہونے پر جواب دینے کی تربیت دیتی ہے۔

ایپسیلون وائرس کی موجودگی

ستاروں کا مکمل احوال جاننے کیلئے وزٹ کریں ….. ( جتن آن لائن کُنڈلی )
قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply