0

ایف بی آر ٹیکس پئیرز کی عزت کرے اور اختیارات سے تجاوز نہ کرے،عدالت

Spread the love

ایف بی آر کی جانب سے نجی بلڈرز کمپنی ریڈ سنز ایسوسی ایٹ کو ہراساں کرنے

کا معاملہ، درخواست گزار ریڈ سنز ایسوسی ایٹ سے 7 مارچ کو ویلتھ سٹیٹمنٹ

ریکارڈ طلب کرلیا، ایف بی آر ٹیکس پئیرز کی عزت کرے اور اختیارات سے

تجاوز نہ کرے چیف جسٹس ہائیکورٹ کے ریمارکس ،نجی رئیل اسٹیٹ کمپنی پر

چھاپہ مارنے کیخلاف آرٹیکل 175 کے تحت چیلنج کرنے کی درخواست پر

سماعت چیف جسٹس اسلام آباد ہائی کورٹ جسٹس اطہر من اللہ نے کی، درخواست

گزار کے وکیل عدالت میں پیش، ایف بی آر نے غیر قانونی چھاپہ مارا ، آرٹیکل

175 کے تحت ہم نے اس اقدام کو چیلنج کیا ہے، وکیل ایف بی آر نے کہا کہ

چھاپے کے دوران ان کے سسٹم میں تیرہ ارب کا ریوینیو سسٹم تھا ، وکیل

درخواست گزار نے کہا کہ جو سامان فروخت ہی نہ ہوا ہو اس کا ریوینیو کیسے ہو

گا چھ ارب پچاسی کروڑ موجود تھا، ایف بی آر کے وکیل نے استدعا کی کہ ہمیں

نجی کمپنی کا جواب دیا جائے جسے پڑھ کر ہم اپنا جواب جمع کرائیں گے اسلام

آباد ہائی کورٹ نے آئندہ سماعت پر درخواست گزار سے7 مارچ کو ویلتھ سٹیٹمنٹ

ریکارڈ طلب کر لیا جبکہ ایف بی آر سے چھاپہ رنے کی وجوہات پر مبنی مکمل

تفصیلی جواب بھی طلب کر لیا۔ درخواست گزار شاہد چنزیب نے ٹیکس کے

معاملے پر ہراساں کرنے کے خلاف درخواست دائر کی تھیکیس کی سماعت سات

مارچ تک ملتوی۔

Leave a Reply