corona Special jtnonline2

ایسٹرا زینیکا ویکسین سے بلڈ کلاٹنگ شکایات، کئی یورپی ممالک میں استعمال بند

Spread the love

لندن، بینکاک (جے ٹی این آن لائن کرونا سپیشل) ایسٹرا زینیکا ویکسین بلڈ کلاٹنگ

برطانوی کرونا ویکسین کے استعمال سے خون میں پھٹکیاں بننے کے واقعات کے

بعد متعدد یورپی ممالک نے کرونا ویکسین کا استعمال روک دیا، برطانوی ویکسین

روکنے والے ممالک میں ڈنمارک، ناروے، آئس لینڈ اور اٹلی شامل ہیں- یورپی

یونین نے معاملے پر تحقیقات کا آغاز بھی کر دیا ہے جبکہ برطانوی حکومت نے

آکسفورڈ کی تیار کردہ ایسٹرازینیکا ویکسین کو محفوظ قرار دیا ہے-

=-= یہ بھی پڑھیں: بھارت پاکستان کو کووڈ ویکسین فراہم کرے گا

برطانوی وزیراعظم بورس جانسن کے ترجمان نے کہا ہے ڈنمارک نے آکسفورڈ

کی تیار کردہ ویکسین اور خون جمنے کے درمیان کسی تعلق کی تصدیق نہیں کی،

دوسری جانب اٹلی کی حکومت نے 2 پولیس اہلکاروں کی خون جمنے سے ہلاکت

کے بعد ایسٹرازینیکا پر پابندی عائد کر دی ہے، آسٹریا اور ڈنمارک میں برطانوی

ویکسین لگائے جانے کے بعد خون جمنے سے 2 مریضوں کی ہلاکت ہوئی ہے۔

=-= تھائی لینڈ میں خون جمنے کی اطلاعات، آسٹرا زینیکا ویکسی نیشن معطل

یورپی اقوام کی طرح تھائی لینڈ نے بھی کرونا وائرس کیخلاف ایسٹرا زینیکا

ویکسین کا استعمال ترک کر دینے کا اعلان کیا ہے۔ تھائی وزارت صحت نے یہ

اعلان اس ویکسین کے استعمال سے بلڈ کلوٹنگ کے خدشات کے تناظر میں کیا

ہے، دوسری طرف بین الاقوامی ماہرین اس ویکسین کو محفوظ قرار دے رہے ہیں،

وزارت عوامی صحت کے مستقل سیکرٹری کیٹیفم وانگراجیت نے نیوز کانفرنس

کو بتایا یہ یقینی نہیں کہ آیا خون جمنے کی علامت کا براہ راست تعلق آسٹرا زینیکا

ویکسین سے ہے، یہ ویکسین اچھی ہے، لیکن تھائی عوام کی حفاظت کے لئے ہم

مزید تشخیص تک ویکسین کے استعمال کو معطل کرنے کا فیصلہ کرتے ہیں۔ تھائی

لینڈ نے وزیراعظم پریوت چن-او چا اور انکی کابینہ کے اراکین کیلئے آسٹر زینیکا

کے ویکسین شاٹس وصول کرنے کے بارے میں مقرر کردہ منصوبے کو بھی

منسوخ کردیا۔

=–= ایسٹرا زینیکا سے بلڈ کلاٹنگ کی تصدیق یا تردید کا انتظار ہے، تھائی حکام

بینکاک کی چھولالونگ کورن یونیورسٹی کے سینئر وائرالوجسٹ یونگ پووراوان

نے نیوز کانفرنس کو بتایا کہ اس التواء کیساتھ ہم یہ نہیں کہہ رہے کہ یہ ویکسین

پریشان کن ہے۔ یہ التوا تصدیق کیلئے انتظار کرنے کا ہے کہ ویکسین یا ویکسین

کی اس کھیپ کیساتھ کوئی تعلق ہے یا نہیں۔ یونگ نے کہا تھائی لینڈ کو فراہم کی

گئی ویکسینز کی ویسی کھیپ نہیں تھیں جیسی یورپ میں ہے، یہ ایشیاء میں بنائی

گئی تھی۔ تھائی لینڈ نے چین کی سائنو ویک کے ذریعہ تیار کردہ ویکسینز کا

استعمال کرتے ہوئے 28 فروری کو اپنا قومی ویکسین لگانے کا پروگرام شروع کیا

تھا۔ اس نے 24 فروری کو پہنچنے والی پہلی خوراک کیساتھ سائنو ویک ٹیکوں کا

آرڈر دیا تھا۔ اسی دن ملک کو آسٹرا زینیکا ویکسین بھی موصول ہوئی۔

=قارئین=: خبر اچھی لگے تو شیئر، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

ایسٹرا زینیکا ویکسین بلڈ کلاٹنگ

Leave a Reply