112

ایران کی طالبا ن ،افغان حکومت براہ راست مذاکرات کی حمایت

Spread the love

واشنگٹن/تہران(مانیٹرنگ ڈیسک)امریکا کی مسلح افواج کے چیئرمین جوائنٹ

چیفس آف اسٹاف جنرل مائیک ملے نے کہاہے کہ افغانستان میں امن عمل کی

کامیابی کے امکانات پہلے سے بھی زیادہ ہیں۔میڈیارپورٹس کے مطابق افغانستان

میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے جنرل مائیک ملے کا کہنا تھا کہ میں سمجھتا ہوں

کہ مذاکرات کے ذریعے افغانستان کی 18 سالہ جنگ کو ختم کرنے کے امکانات

پہلے سے زیادہ ہیں۔امریکی جنرل کا مزید کہنا تھا کہ افغان امن عمل کے حوالے

سے مذاکرات جلد کامیاب ہوں گے، بس مثبت نتائج کے لئے کام باقی رہ گیا ہے۔

دوسری جانب دوحا میں طالبان وفد نے بھی امریکی حکام سے ملاقات کی ہے۔غیر

ملکی خبر ایجنسی کے مطابق طالبان رہنماؤں کا کہنا تھا کہ ہمارے لیڈرز نے

امریکی حکام سے غیر سرکاری ملاقاتیں شروع کی ہیں، امریکی حکام کے ساتھ

امن عمل دوبارہ شروع ہونے کے منصوبے پر کام کر رہے ہیں دوسری جانب

ایران نے طالبان اور افغان حکومت کے درمیان براہ راست مذاکرات کی حمایت

کردی ۔ایرانی وزیر خارجہ جواد ظریف نے تہران میں طالبان رہنماؤں کے ایک

وفد سے ملاقات کی ہے۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق اس وفد کی

سربراہی ملا عبدالغنی برادر کر رہے تھے۔ جواد ظریف نے طالبان اور افغان

حکومت کے درمیان براہ راست مذاکرات کی حمایت کی ہے۔ طالبان امریکا کے

ساتھ ممکنہ امن معاہدے کے سلسلے میں پڑوسی ملکوں کے ساتھ رابطے میں ہیں۔

Leave a Reply