93

ایران کی طالبان اور امریکہ کے درمیان امن مذاکرات کی مخالفت

تہران (مانیٹرنگ ڈیسک)ایران نے طالبان اور امریکہ کے درمیان امن مذاکرات کی مخالفت کردی ہے

اور اس کے اعلیٰ سکیورٹی عہدہ دار کا کہنا ہے کہ اس بات چیت میں افغان عوام اور حکومت شامل

نہیں ،اسی لیے ایران اس کی مخالفت کررہاہے۔ایران کی سپریم نیشنل سکیورٹی کونسل کے سیکریٹری

رئیر ایڈمرل علی شمخانی نے ایک بیان میں کہا ہے کہ افغان عوام کی شرکت کے بغیر کوئی بھی

حکمت عملی ، کوئی بھی فیصلہ یا منصوبہ غلط ہے اور یہ ناکامی سے دوچار ہوگا۔طالبان، افغان عوام

کی حقیقت ہیں،اس کو نظر انداز نہیں کیا جاسکتا لیکن کیا تمام افغان، طالبان ہیں؟ نہیں۔ ان کا کہنا تھا۔

علی شمخانی تہران میں افغانستان ، چین ،بھارت ، تاجکستان ،ازبکستان اور روس کے قومی سلامتی

کے اعلیٰ عہدے داروں کے اجلاس کے بعد نیوز کانفرنس سے خطاب کررہے تھے۔انھوں نے امریکہ

پر الزام عاید کیا ہے کہ وہ افغانستان میں صورت حال کا فائدہ اٹھا کر چین ، روس اور ایران کے

سرحدی علاقوں میں عدم استحکام پیدا کرنے کی کوشش کررہا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ علاقائی سلامتی پر

مکالمہ امریکا کی اسلامی جمہوریہ ایران کو الگ تھلگ کرنے کی کوشش کی ناکامی کا ایک اور

ثبوت ہے۔علی شمخانی نے واضح کیا کہ ایران نے امریکا کی قیادت میں امن مذاکرات میں حصہ نہیں

لیا ہے اور اس کی وجہ یہ ہے کہ اس نے ماضی میں ایک مرتبہ افغانستان کے معاملے پر واشنگٹن

کے ساتھ تعاون کیا تھا۔اس کے بدلے میں اس کا نام’’برائی کے محور‘‘ میں شامل کر لیا گیا تھا۔

Leave a Reply