MASJID IMAM ZAMANA A.S JHAMKARAN 121

ایران کا اعلان جنگ، مسجد امام زمانہ میں سرخ پرچم لہرا دیا گیا

Spread the love

بغداد (مانیٹرنگ ڈیسک ) ایران کا اعلان جنگ

بغداد میں ایرانی القدس فورس کے سربراہ جنرل قاسم

سلیمانی اور ان کے ساتھیوں کی نماز جنازہ ادا کر دی گئی۔ عراقی وزیراعظم

سمیت لاکھوں افراد نما زجنا ز ہ میں شریک ہوئے۔عراقی شرکاء نے امریکا

مخالف نعرے لگائے۔ایرانی میڈیا کے مطابق قاسم سلیمانی کی میت ایران روانہ

کردی گئی، جہاں کل مشہد میں بھی ان کی نماز جنازہ ادا کی جائیگی، جس میں آیت

اللہ خامنہ ای بھی شریک ہونگے، قاسم سلیمانی کی تدفین آبائی شہر کرمان میں

یہ بھی پڑھیں:ہوگی۔دوسری طرف ایران کی جانب سے قدیم روایتی طرز میں جنگ کا اعلا ن کر

دیا گیا ہے۔ مقدس شہر جمکران کی مسجد امام زمانہ میں سرخ پرچم لہرا دیا گیا

ہے۔سرخ پرچم کا لہرانا باقاعدہ جنگ کا اعلان ہوتا ہے۔اس سے قبل مسجدجمکران

پر ہمیشہ سبز پرچم لہراتا رہتا ہے۔قدیم فارس اور عرب روایات میں سرخ پرچم

جنگ شروع ہونے کی علامات کہلاتا ہے۔جمکران شہر کی یہ مسجد انتہائی اہمیت

کی حامل ہے۔ یہ مسجد امام مہدی سے منسوب سمجھی جاتی ہے۔اس مسجد پر اس

سے قبل کبھی سرخ پرچم نہیں تھا تاہم قاسم سلیمانی کے قتل کے بعد اس مسجد پر

سرخ پرچم لہرایا گیا ہے۔جب کہ دوسری جانب ایرانی فوجی ترجمان بریگیڈیئر

جنرل رمضان نے کہا ہے کہ ایرانی جنرل قاسم سلیمانی کے قتل پر امریکا کی

خوشی جلد سوگ میں تبدیل کر دیں گے۔ایرانی جنرل قاسم سلیمانی کے قتل کے بعد

عراق سے ملحق سرحد پر ایرانی لڑاکا طیاروں کی پروازیں جاری ہیں۔ ایرانی

وزیر خارجہ نے سرکاری ٹی وی کو انٹرویو میں کہا ہے کہ امریکہ نے بہت بڑی

غلطی کی ہے۔عراقی خودمختاری اور عالمی قوانین کی خلاف ورزی کی گئی۔جواد

ظریف نے کہا کہ ایران کسی بھی وقت اور انداز میں جواب دینے کا حق رکھتا ہے۔

مزید پڑھیں:
ایران کے سپریم لیڈر آیت اللہ علی خامنہ ای نے گذشتہ روز عراق میں امریکی

حملے میں مارے جانے والے القدس فورس کے کمانڈر قاسم سلیمانی کی رہائش گاہ

پر آکر مقتول کے خاندان سے تعزیت کی ہے ۔ اس موقع پر ایرانی حکومت کے

دیگر اعلیٰ عہدیدار بھی موجود تھے۔ ایرانی میڈیا کے مطابق خامنہ ای اورسینئر

ایرانی عہدیداروں قاسم سلیمانی خاندان سے تعزیت کرتے ہوئے دکھایا گیا ہے۔اس

موقع پر خامنہ ای نے مزید کہا کہ سلیمانی کی عدم موجودگی ہمیں تلخ بناتی ہے

لیکن ہماری جدوجہد اس وقت تک جاری رہے گی جب تک فتح حاصل نہیں ہو

جاتی اور مجرموں کی زندگیاں مزید تلخ ہو جاتیں۔آیت اللہ علی خامنہ ای نے کہا کہ

سلیمانی کو قتل کرنے والے اب اپنے المناک انجام کے لیے تیار ہیں۔ انہوں نے یہ

بات زور دے کر کہی کہ قاسم سلیمانی کا قتل امریکا اور اسرائیل کے خلاف

مزاحمت کو مزید بڑھا دے گا۔ایرانی قومی سلامتی کونسل نے کہاہے کہ ہم مناسب

جگہ اور وقت پر امریکا کے اس اقدام کا جواب دیں گے، ہمارا رد عمل اور جواب

بہت سخت ہو گا، اب امریکا ہمارے جواب کا انتظار کرے جنرل قاسم سلیمانی کی

عراق میں ایک فضائی آپریشن میں ہلاکت کے بعد پیدا ہونے والی صورتحال کے

تناظر میں مزید 3ہزار فوجی مشرق وسطیٰ بھیجنے کا اعلان کر دیا ہے۔

میڈیارپورٹس کے مطابق امریکی عہدیداروں کا کہنا تھا کہ خطے میں امریکی

افواج کو بڑھتے ہوئے خطرات کے تناظرمیں لیے جانے والے احتیاطی اقدام کے

طور پر فورسز کے 82 ویں ایئر بورن ڈویڑن سے مزید 3ہزار فوجیوں کو مشرق

وسطیٰ کیلئے بھیجا جائیگا۔امریکی حکام نے خبر رساں ادارے کو بتایا کہ فوج کو

رواں ہفتے کویت بھیجے گئے ساڑھے 700فوجی بھی شامل ہوں گے۔ عراقی

وزارت تیل نے کہا ہے کہ بصرہ میں غیر ملکی تیل کمپنیوں کے لیے کام کرنے

والے امریکی شہریوں نے عراق سے واپس جانا شروع کردیا۔عراقی حکام کا کہنا

تھا کارکنان کے انخلا سے ملک میں تیل کی پیداوار اور برآمدات متاثر نہیں ہوں

گی جو تیل برآمد کرنے والے ملک میں دوسرا بڑا ملک ہے اور 46 لاکھ 20 ہزار

بیرل روزانہ تیل برآمد کرتا ہے۔

ایران کا اعلان جنگ

Leave a Reply