ukrine plane crash in iran

ایران میں مسافر طیارہ میزائل لگنےسے تباہ ہوا،کینیڈا،امریکہ ،برطانیہ کا الزام

Spread peace & love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

واشنگٹن(مانیٹرنگ ڈیسک) امریکی نیشنل ٹرانسپورٹیشن سیفٹی بورڈ(این ٹی ایس

بی)نے کہا ہے کہ امریکہ تہران میں تباہ ہونے والے یوکرینی مسافر بردار طیارے

کی تحقیقات میں شامل ہوگا۔این ٹی ایس بی نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ اس

کے متعلقہ آپریشنز سنٹر کو تہران کے قریب تباہ ہونے والے یوکرینی مسافر بردار

پی ایس ۔752 طیارے بارے ایرانی ایئرکرافٹ ایکسیڈنٹ انوسٹی گیشن بورڈ(اے اے

آئی بی)کی طرف سے رسمی نوٹیفکیشن موصول ہو گیا ہے جس میں سوار عملے

کے 9 ارکان اور 167 مسافر ہلاک ہوگئے تھے۔بیان میں کہا گیا ہے کہ این ٹی ایس

بی نے تباہ ہونے والے بوئنگ800- 737طیارے کی تحقیقات کے لئے ایک تسلیم

شدہ نمائندہ مقرر کردیا ہے۔ ایجنسی نے مزید کہا ہے کہ وہ طیارہ حادثہ کی

وجوہات کے بارے میں کوئی قیاس آرائی نہیں کرے گی کیونکہ اے اے آئی بی

نمایاں تحقیقاتی ادارہ ہے۔دوسری طرفکینیڈا، امریکا اور برطانیہ کے حکام نے

ایران پر یوکرین کا طیارہ تباہ کرنے کا الزام عائد کیا ہے جس کے نتیجے میں

طیارے میں سوار 176 افراد ہلاک ہوگئے تھے۔امریکی خبررساں ادارے کی

رپورٹ کے مطابق عالمی رہنماؤں کا کہنا تھا کہ ایسا ہوسکتا ہے کہ خطے میں

کشیدگی میں اضافے اور ایران کے عراق امریکی فوجی اڈوں پر راکٹ حملوں کے

باعث ایران نے غلطی سے میزائل سے یوکرینی طیارہ مار گرایا ہو۔امریکا کے 4

عہدیداروں نے شناخت ظاہر نہ کرنے کی شرط پر کہا کہ مسافر طیارے کو غلطی

سے خطرہ نہ سمجھ لیا ہو۔حادثے میں کینیڈا کے 63 شہری ہلاک ہوئے تھے جس

پر کینیڈین وزیراعظم جسٹن ٹروڈو نے اوٹاوا میں کہا کہ ہمارے پاس اتحادیوں

سمیت ذاتی انٹیلی جنس ذرائع ہیں، شواہد سے معلوم ہوا ہے کہ ایران نے زمین سے

فضا میں مار کرنے والے میزائل سے طیارے کو مار گرایا تھا۔دوسری جانب

برطانیہ کے وزیراعظم بورس جانسن اور آسٹریلیا کے وزیراعظم اسکاٹ موریسن

نے بھی ایسے ہی بیانات دیے۔اسکاٹ موریسن نے یہ بھی کہا کہ یہ بظاہر غلطی

معلوم ہوتی ہے، ہمیں پیش کی گئی انٹیلی جنس معلومات سے نہیں لگتا کہ ایسا

دانستہ طور پر کیا گیا۔

طیارہ الزام

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Leave a Reply