ایران میں آج صدارتی انتخابات، 5 امیدواروں کے مابین سخت مقابلہ متوقع

ایران میں آج صدارتی انتخابات، 5 امیدواروں کے مابین سخت مقابلہ متوقع

Spread the love

تہران (جے ٹی این آن لائن انٹرنیشنل نیوز) ایران آج صدارتی انتخابات

ایران میں آج صدارتی انتخابات ہو رہے ہیں، جہاں 5 امیدواروں کے مابین سخت

مقابلہ متوقع ہے، انتخابی مہم کے آخری روز دو امیدوار صدارتی انتخابات سے

دستبردار ہو گئے جس کے بعد باقی پانچ امیدواروں میں سخت مقابلے کی توقع

ظاہر کی جا رہی ہے۔ ایران کے سرکاری میڈیا کے مطابق دستبردار ہونے والے

امیدواروں میں محسن مہر علی زادہ کو اصلاح پسند تصور کیا جاتا ہے جبکہ علی

رضا زاکانی قدامت پسند نظریات کے حامل ہیں۔ ایران میں نئے صدر کے انتخاب

کیلئے آج 18 جون کو پولنگ ہو رہی ہے۔ 64 سالہ مہر علی زادہ کی دستبرداری کا

فائدہ ایران کے مرکزی بینک کے سابق سربراہ اور معتدل نظریات کے حامل

سمجھے جانے والے امیدوار عبدالناصر ہمتی کو ہو گا۔

=-= دنیا بھر سے ایسی ہی مزید خبریں ( =–= پڑھیں =–= )

رائے عامہ کے جائزوں کے مطابق عبدالناصر ہمتی اپنے حریف اور ایرانی عدلیہ

کے قدامت پسند سربراہ ابراہیم رئیسی سے پیچھے ہیں۔ رئیسی کے بارے میں خیال

ہے کہ انہیں صدر بنانے کے لیے سپریم لیڈر علی خامنہ ای نے بہت پہلے سے

تیاری شروع کر دی تھی۔ دست بردار ہونے والے دوسرے امیدوار زاکانی بھی ایک

قدامت پسند امیدوار ہیں۔ ماضی میں دو مرتبہ صدارتی انتخابات کے لیے ان کی

نامزدگی شوری نگہبان نے مسترد کردی تھی۔ زاکانی نے اپنی انتخابی مہم ختم کر

کے ابراہیم رئیسی کی حمایت کا اعلان کیا ہے۔ ایران کے صدارتی انتخابات میں

امیدواروں کا یکساں انتخابی منشور رکھنے والے امیدواروں کے حق میں دستبردار

ہونا معمول کی بات ہے۔

=-.-= بہترٹرن آﺅٹ بیرونی دباﺅ میں کمی کیلئے مددگار ہوگا، ایرانی سپریم لیڈر

ایران کے سپریم لیڈر آیت اللہ علی خامنہ ای نے اپنے ہم وطنوں پر زوردیا ہے کہ

وہ آج جمعہ کو ہونیوالے صدارتی انتخابات میں بھرپورحصہ لیں۔ صدارتی انتخابات

میں ووٹر ٹرن آﺅٹ اور ایران پر بیرونی دباﺅ کا آپس میں گہرا تعلق ہے۔ میڈیا

رپورٹس کے مطابق خامنہ ای نے صدارتی انتخابات سے دوروز قبل ایک نشری

تقریرمیں کہا اگر لوگ پولنگ کے عمل میں بھرپور طریقے سے شریک نہیں ہوتے

ہیں تو دشمن کی جانب سے دباﺅ میں اضافہ ہو گا۔ اگر ہم وبا اور پابندیوں میں کمی

چاہتے ہیں تو لوگوں کی شرکت میں اضافہ ہونا چاہیے اور نظام کو حاصل عوامی

مقبولیت دشمن پر ظاہرہونی چاہیے۔ خامنہ ای نے کہا کہ تمام ایرانیوں کو اپنی اپنی

سیاسی ترجیحات سے قطع نظر جمعہ کو اپنااپنا ووٹ ڈالنا چاہیے۔ انھوں نے

امریکی اور برطانوی میڈیا پرالزام عاید کیا کہ وہ ایرانیوں کی ووٹنگ میں حصہ

لینے کی حوصلہ شکنی کررہا ہے اور صدارتی انتخابات کو نقصان پہنچانے کی

کوشش کررہا ہے۔

ایران آج صدارتی انتخابات

=-= قارئین کاوش پسند آئے تو اپ ڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply