وزیراعظم عمران خان وعدہ کب ایفا کریں گے؟ اہلیان وادی کیلاش

وزیراعظم عمران خان وعدہ کب ایفا کریں گے؟ اہلیان وادی کیلاش

Spread the love

پشاور(بیورو چیف، عمران رشید خان) اہلیان وادی کیلاش

Journalist Imran Rasheed

وادی کیلاش پوری دنیا میں اپنی مخصوص ثقافت اور قدرتی حسن کی وجہ سے

مشہور ہے اور کیلاش قبیلے کے سالانہ تہواروں کا پوری دنیا میں چرچا ہے،

مگر نہایت ہی افسوس سے کہنا پڑتا ہے کہ جب سیاح ایک بار اس تنگ اور پُر

خطرسڑک پر سفر کرتے ہیں تو آئندہ اپنی آنیوالی نسلوں کو بھی نصیحت کرتے

ہیں، دوبارہ کیلاش نہ جائیں، ان خیالات کا اظہار مسلم اینڈ کیلاش ڈیفنس کونسل

یونین کونسل آیون کے زیر اہتمام مسلمان اور کیلاش قبیلے کے سیکڑوں لوگوں

کے آیون میں منعقدہ احتجاجی جلسہ، جس کی صدارت صالح نظام ایڈووکیٹ نے

کی، سے خطاب کرتے ہوئے مسلم و کیلاش قبیلے کے عمائدین بشمول خواتین

کونسلرز نے کیا۔ مقررین کا یہ بھی کہنا تھا وادی کیلاش کی سرحد افغانستان کے

صوبہ نورستان کیساتھ لگتی ہے جو طالبان کا گڑھ ہے- ماضی میں کئی بار

افغانستان سے دہشتگرد یہاں آ کر کئی کیلاش لوگوں کو قتل اور ان کے سیکڑوں

مال مویشی بھی لے جا چکے ہیں۔

=-= پاکستان سے متعلق مزید تازہ ترین خبریں ( =–= پڑھیں =–= )

مقررین نے کہا کہ ہم حکومتی اداروں سے خاص طور پر نیشنل ہائیوے اتھارٹی

سے بہت مایوس ہیں، اسلئے چیف آف آرمی سٹاف جنرل قمر باجوہ سے پُر زور

مطالبہ کرتے ہیں کہ سیکورٹی نقطہ نظر سے اس سڑک کی اہمیت کو مد نظر

رکھتے ہوئے پاک فوج اس سڑک کو خود بنائے۔ چند سال قبل ایک یونانی انجینر

کیلاشادور سے طالبان نے اغواء کیا تھا جس کی بازیابی بروقت ہوسکتی تھی،

مگر سڑک نہ ہونے کی وجہ سے ہماری فورسز کئی گھنٹے پیدل سفر کرکے

واپس لوٹ آئیں۔

=-،-= اہلیان کیلاش وادی کا منتخب نمائندوں سے بھی بڑا شکوہ

احتجاجی جلسے سے کیلاش کی خواتین نے بھی اظہار خیال کیا اور چترال سے

منتخت ارکان اسمبلی پر کڑی تنقید کی کہ ووٹ کے وقت وہ ہمارے گھر آتے ہیں

مگر وادی کیلاش اور اس کے باسیوں کو درپیش مسائل کے حل کیلئے کچھ بھی

نہیں کرتے، اب جبکہ وادی کو ملک کے دیگر علاقوں سے ملانے والی واحد

شاہراہ آمدورفت کے قابل نہیں رہی اور اس کی فوری تعمیر و مرمت ناگزیر ہے

تو وہ اسمبلی میں یہ مسئلہ اٹھاتے ہیں نہ ہمارے پاس آ کر احتجاج میں حصہ لیتے

ہیں۔ کیلاش قبیلے کے عمائدین نے متنبہ کیا اگر شاہراہ کیلاش کی تعمیر و مرمت

فوری طور پر شروع نہ کی گئی تو وہ مجبوراً اپنے سالانہ مذہبی تہوار چھومس

اور دیگر رسومات کا بائیکاٹ کرنے کیساتھ ساتھ تہوار میں شرکت کیلئے دنیا بھر

سے آنے والے سیاحوں کو بھی روک دیں گے۔

=-،-= خیبر پختونخوا سے متعلق مزید خبریں (=-= پڑھیں =-=)

جلسہ میں ایک متفقہ قرارداد بھی منظور کی گئی جس میں مطالبہ کیا گیا کہ سابق

حکومت نے بجٹ میں شاہراہ کیلاش کی تعمیر کیلئے 4 ارب 60 کروڑ ورپے

منظور کئے تھے مگر نامعلوم وجوہات کے بناء پر ابھی تک اس سڑک پر کام

شروع نہیں ہوا، قرارداد کے ذریعے وفاقی و صوبائی حکومت پر زور دیا گیا کہ

وہ این ایچ اے (NHA) حکام کو ہدایت کرے کہ سڑک کی تعمیر فوری شروع

کرئے تاکہ مقامی لوگوں کیساتھ ساتھ سیاحوں کی مشکلات میں بھی کم ہو سکیں۔

قرارداد کے ذریعے ڈپٹی کمشنر سے بھی مطالبہ کیا گیا کہ وہ فوری طور پر

سیکشن فور لگا کر سڑک کی کشادگی کے باعث استعمال میں آنیوالی اراضی کے

مالکان کو موجودہ نرخ کے مطابق ادائیگی یقینی بنائیں۔ انہوں نے قرار داد میں

وزیر زادہ کیلاش معاون خصوصی برائے اقلیتی امور وزیر اعلی خیبر پحتونخوا

ان سڑکوں کی تعمیر پر فوری کام شروع کروائیں۔

=-.-= گلگت بلتستان سے متعلق مزید خبریں ( == پڑھیں ==)

قرارداد میں وزیراعظم عمران خان کا بھی شکریہ ادا کیا گیا کہ انہوں نے کیلاش

قبیلے سے اقلیتی نشست پر وزیر زادہ کیلاش کو صوبائی اسمبلی کا رکن چُن کر

انہیں وزیراعلی کا معاون خصوصی بنایا۔ قرارداد کے ذریعے وزیراعظم عمران

خان کو جون 2002ء میں اپنا کیا وعدہ کہ اقتدار میں آنے کے بعد وہ کیلاش کا

دورہ کریں گے، یاد دلاتے ہوئے اسے فوری طور پر ایفا کرنے کا مطالبہ بھی

کیا۔ جلسہ سے عبدالمجید قریشی، حاجی محمد یوسف، وجیہ الدین، محمد آصف،

کیلاش خاتون کونسلر انت بیگم، حبیب الرحمان، سیف اللہ کیلاش، قاری خوش ولی

خان و دیگر نے اظہار خیال کیا۔

اہلیان وادی کیلاش ، اہلیان وادی کیلاش ، اہلیان وادی کیلاش ، اہلیان وادی کیلاش

=-= قارئین= کاوش پسند آئے تو اپ ڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply