shabaz sharif

آمدنی سے زائد اثاثہ جات اور منی لانڈرنگ کیس ,شہباز شریف گرفتار

Spread peace & love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

شہباز شریف گرفتار

لاہور(جے ٹی این آن لائن نیوز)لاہورہائی کورٹ کے مسٹر جسٹس سرداراحمد نعیم اور مسٹر جسٹس

فاروق حیدر پر مشتمل ڈویژن بنچ نے آمدنی سے زائد اثاثہ جات اور منی لانڈرنگ کیس میں مسلم لیگ

(ن) کے صدر میاں شہباز شریف کی عبوری ضمانت منسوخ کردی جس کے بعد نیب نے انہیں کمرہ

عدالت میںہی گرفتارکرلیا،تفصیلی بحث کے بعد کیس کی سماعت مکمل ہوئی اور عدالت نے درخواست

ضمانت مستردہونے کا زبانی فیصلہ دیاتو میاں شہباز شریف کے وکلاء نے درخواست واپس لینے کی

استدعا کردی جسے منظور کرتے ہوئے فاضل بنچ نے درخواست واپس لئے جانے کی بنا پرخارج

کردی ۔اس کیس میں میاں شہباز شریف 3جون 2020ء سے عبوری ضمانت پر تھے ،گزشتہ روز میاں

شہباز شریف نے خود بھی عدالت میں اپنا موقف پیش کیا ،انہوںنے کہا کہ اللہ کی عدالت میں بتاؤں گا

میں نے پنجاب کے غریب عوام کو تعلیم اور صحت کی سہولیات دیں،میں اللہ سے کہوں گا اس کے

صدقے مجھے معاف فرمادے، میں حلف دینے کے لئے تیار ہوں مجھے نیب نے کہا کہ آپ سے تفتیش

مکمل ہو چکی ہے،میں خطا کار انسان ہوں ہم سب اللہ سے اپنے گناہوں کی معافی مانگتے ہیں،میاں

شہباز شریف نے عدالت میں مزید موقف اختیار کیا کہ عاجزی سے کہتا ہوں کہ نیب کو ڈھائی سو سال

لگ جائیں لیکن ایک دھیلے کی کرپشن نہیں ملے گی، میں نے قومی خزانے کا ایک ہزارارب روپے

بچایا، اپنے ضمیر کے مطابق فیصلے کئے جس سے میرے بھائیوں اور میرے بچوں کو کاروباری

نقصان ہوا، دسمبر2017 میں چینی ایکسپورٹ پر دس روپے سبسڈی وفاقی حکومت دی سندھ نے 9

روپے 30 پیسے مزید سبسڈی دی،میں نے سبسڈی نہیں دی جس سے بیٹے کی مل کو 23 کروڑ کا

نقصان ہوا،میں کوئی فرشتہ نہیں ہوں انسان سے غلطی ہوجاتی ہے ،خطا کار انسان ہوں مگر اس الزام

سے بہت تکلیف ہوئی،اللہ کے سامنے کہوں گا تین ادوار کی خدمت کے صلے بخش دے،بلدیاتی

انتخابات کے لیے مجھے گرفتار کر کے زبان بندی کرنا چاہتے ہیں، انہوںنے کہا کہ میگا پراجیکٹس

میں پیسہ بچایا ،قانونی تقاضہ نہ ہونے کے باجود میگا پراجیکٹس کے ٹھیکے بولی کے ذریعے دیئے

گئے ،میں نے ان سے بھی مزید پیسے کم کروائے، میرا ضمیر کہہ رہا تھا کہ پیسہ بچایا جائے، مجھ

پربچوں کے ذریعے کاروبار کرنے اوربے نامی کا الزام لگایاگیا،2014 ء میں اگر بچوں کا کاروبار

بڑھانا ہوتا تو گنے کی قیمت نہ بڑھاتا،اپنے ضمیر کے مطابق گنے کی قیمت مقرر کی، 90 کروڑ کا

نقصان میرے بیٹے بھائی اور بھتیجوں کی ملوں کو پہنچا،ان کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ جس

ستاروں کا مکمل احوال جاننے کیلئے وزٹ کریں ….. ( جتن آن لائن کُنڈلی )

شخص نے ایک ہزار ارب روپے بچائے ہوں وہ سات کروڑ لے کر کیا کرگے گا،عدالت نے استفسار

کیا کیا احتساب عدالت میں فرد جرم عائد ہوچکی ہے ؟ اس پرشہباز شریف کے وکیل نے کہا کہ ابھی

کارروائی جاری ہے،ریفرینس کی کاپیاں تقسیم ہو چکی ہیں اس کے بعد فرد جرم عائد ہونا ہے، میرے

موکل پر کوئی ٹیمپرنگ کا گواہان پر اثر انداز ہونے کا کوئی ثبوت موجود نہیں، بلدیاتی الیکشن آنے

والے ہیں اور حکومت کے ارکان کہتے ہیں کہ یہ سلاخوں کے پیچھے ہوں گے، شہباز شریف نے آج

تک بطور ممبر اسمبلی تنخواہ تک وصول نہیںکی، سیف سٹی پراجیکٹ میں4ارب روپے کی بچت

کی،سوزوکی موٹرسے 40کروڑ روپے کی اداکی ہوئی رقم واپس کی،اورنج لائن ٹرین میں 81ارب

روپے کی بچت کی ،اگر عدالت چاہے اور اجازت دے تو ہم یہ ساری تفصیلات بتا سکتے ہیں،ریفرینس

فائل ہو چکا ہے لیکن انا کی تسکین کے لیے گرفتاری کرنا چاہتے ہیں، اگر گرفتار ہونے کے 6ماہ بعد

میاں شہباز شریف بری ہوجاتے ہیں تو پھر ریاست کی ساکھ کیا رہ جاتی ہے،

شہباز شریف گرفتار

قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Leave a Reply